ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر: 2020 میں اب تک تین سرغناوں سمیت 64 دہشت گرد ہلاک ، 125 گراونڈ ورکرس گرفتار

وجے کمار نے مزید کہا کہ اس دوران 125 اور گراؤنڈ ورکرس کو بھی گرفتار کر لیا گیا ، جن کی مدد سے کافی مقدار میں اسلحہ و گولی بارود برآمد کرکے ضبط کر لیا گیا ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر: 2020 میں اب تک تین سرغناوں سمیت 64 دہشت گرد ہلاک ، 125 گراونڈ ورکرس گرفتار
جمون و کشمیر: 2020 میں اب تک تین سرغناوں سمیت 64 دہشت گرد ہلاک ، 125 گراونڈ ورکرس گرفتار

سرینگر : رواں سال کے جنوری ماہ سے اب تک جموں و کشمیر پولیس نے فوج اور سی آر پی ایف کے ساتھ اشتراک کر کے 64 ملیٹینٹوں کو ہلاک کیا ہے ، جبکہ 25 سرگرم ملیٹینٹوں کو گرفتار کر لیا گیا ۔ سرینگر میں منعقدہ ایک پریس کانفرس کے دورن آئی جی پی کشمیر وجے کمار نے اس بات کا انکشاف کیا کہ جنوری 2020 سے تاحال جموں و کشمیر پولیس اور فوج و سی آر پی ایف نے مشترکہ طور پر 27 ملیٹینسی مخالف آپریشن انجام دئے ، جس دوران 3 سرکردہ کمانڈروں سمیت 64 ملیٹینٹوں کو ہلاک کیا گیا ۔ جن میں سے ایک حزب المجاہدین کا ڈویژنل کمانڈر و تنظیم کا پوسٹر بوائے ریاض نائیکو بھی شامل ہے ۔


وجے کمار نے کہا کہ ریاض نائیکو کی ہلاکت سے ملیٹینسی کو کافی دھچکہ لگا ہے اور گزشتہ 6 ماہ سے سیکورٹی فورسز نے ریاض نائیکو کی تلاش شروع کر دی تھی ، جس کے بعد بدھ کے روز مضبوط سراغ رسانی پر مبنی فورسز کے مشترکہ آپریشن کے دوران ریاض نائیکو کو مار گرایا گیا ۔ وجے کمار نے مزید کہا کہ اس دوران 125 اور گراؤنڈ ورکرس کو بھی گرفتار کر لیا گیا ، جن کی مدد سے کافی مقدار میں اسلحہ و گولی بارود برآمد کرکے ضبط کر لیا گیا ۔ آئی جی پی وجے کمار کا مزید کہنا ہے ایک مضبوط سراغ رساں گرڈ کے موجود ہونے سے سیکورٹی فورسز کے سراغ رسانی کے وسائل مزید مضبوط ہوگئے ہیں ، جس کی بنا پر جنوبی کشمیر و وادی کے دیگر مقامات پر ملیٹینٹوں کی کمین گاہیں تباہ کر دی گئی ہیں ۔


وجے کمار نے کہا کہ جموں و کشمیر سے دفعہ 370 کی منسوخی یعنی 5 اگست سے امن و قانون میں خلل کے معاملات میں بھی کافی کمی رونما ہوئی ہے اور شاید پلوامہ میں ریاض نائیکو کی ہلاکت کے بعد شرپسندی کا پہلا واقعہ ہے ، جو 5 اگست 2019 کے بعد رونما ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ امن و قانون کی سلامتی کی غرض سے وادی میں مواصلاتی نظام کو عارضی طور پر معطل کرنا پڑا اور حالات میں بتدریج بہتری آنے کے بعد ہی ان خدمات کو بحال کرنے کے حوالے سے حتمی فیصلہ لیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ اونتی پورہ میں گزشتہ روز ریاض نائیکو کی ہلاکت کے بعد امن و قانون میں خلل پیدا ہونے کی وجہ سے پرتشدد جھڑپیں رونما ہوئیں ، جن میں سیکورٹی اہلکاروں سمیت کئی افراد زخمی ہوگئے۔


دریں اثنا جموں و کشمیر کے ڈی جی پولیس دلباغ سنگھ نے ریاض نائیکو کی ہلاکت کو ایک اہم کامیابی قرار دیتے ہوئے جموں و کشمیر پولیس ، فوج اور سی آر پی ایف اہلکاروں کو مبارکباد پیش کی ہے ۔ ڈی جی پی نے کہا کہ حالیہ دنوں میں ہندواڑہ انکاؤنٹر کے دوران پولیس کے ایک سب انسپکٹر اور فوجی کرنل سمیت پانچ سیکورٹی اہلکاروں نے جانوں کا نذرانہ پیش کیا اور پلوامہ کے کامیاب آپریشن کے بعد یقینی پور پر سیکورٹی اہلکاروں کے حوصلے بلند ہوئے ہیں ۔ ادھر آئی جی پی کا کہنا ہے کہ ہندواڑہ واقعہ میں ملوث ملیٹینٹ کمانڈروں کا سراغ بھی لگایا جا چکا ہے اور فورسز نے ان کی تلاش کیلئے مہم شروع کر دی ہے ۔
First published: May 07, 2020 09:41 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading