ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : کم سن لڑکی روبینہ نے ایمانداری کی پیش کی نئی مثال ، ہر طرف ہورہی جم کر تعریف ، جانئے کیوں

ایک پسماندہ اور معاشی طور پر کمزور گوجر گھرانے سے تعلق رکھنے والی روبینہ نے پہلگام کے بائی سرن علاقہ میں ایک سیاح کی کھوئی ہوئی انگوٹھی اسے واپس کر کے کشمیر کا نام روشن کیا ہے۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : کم سن لڑکی روبینہ نے ایمانداری کی پیش کی نئی مثال ، ہر طرف ہورہی جم کر تعریف ، جانئے کیوں
جموں و کشمیر : کم سن لڑکی روبینہ نے ایمانداری کی پیش کی نئی مثال ، ہر طرف ہورہی جم کر تعریف ، جانئے کیوں

جموں کشمیر: کہتے ہیں کہ ایمانداری ہی انسان کا بیش قیمت سرمایہ ہے اور ایمانداری کے زیور سے آراستہ انسان کی زندگی خوشیوں اور کامیابی سے بسر ہوتی ہے۔ کشمیر میں ایمانداری قائم کرنے اور انسانیت کو ترجیح دینے کی ایک اور مثال سامنے آئی ہے ۔ اس بار یہ مثال پہلگام کی رہنے والی روبینہ نامی ایک کمسن لڑکی نے قائم کی ہے ۔ ایک پسماندہ اور معاشی طور پر کمزور گوجر گھرانے سے تعلق رکھنے والی روبینہ نے پہلگام کے بائی سرن علاقہ میں ایک سیاح کی کھوئی ہوئی انگوٹھی اسے واپس کر کے کشمیر کا نام روشن کیا ہے۔


دراصل راجستھان کے ایک سیاح کی انگوٹھی جس کی قیمت 1.50 لاکھ روپے بتائی جا رہی ہے ، بائی سرن پہلگام کی خوبصورت وادیوں میں سیر کے دوران کھو گئی۔ کافی تلاش کرنے اور لوگوں کی مدد کے باوجود بھی سیاح کو اپنی قیمتی انگوٹھی نہیں مل سکی ، جس کے بعد سیاح نے ہر امید چھوڑ دی اور مایوسی کے عالم آب اپنے آبائی گھر راجستھان لوٹنے کی سوچ رہا تھا ۔ تاہم جوں کی روبینہ کو اس بات کا علم ہوا تو وہ اپنی چھوٹی بہن کے ہمراہ اس انگوٹھی کو تلاش کرنے میں لگ گئی اور آخر کار روبینہ کو انگوٹھی برآمد کرنے میں کامیابی حاصل ہوئی اور خوشی سے وہ اپنے بیمار والد عبد المجید آوان کے پاس چلی گئی اور برآمد کی گئی انگوٹھی کو اس کے مالک کو لوٹانے کی خواہش کا اظہار کیا۔


بیٹی کی ایمانداری دیکھ کر روبینہ کے والد نے فخر محسوس کیا اور اس کی خواہش کا احترام کرکے والد نے بھی یہ بیش قیمت انگوٹھی  سیاح کو لوٹانے کی حامی بھری۔ جس کے بعد روبینہ نے سیاح کو اس کی کھوئی ہوئی انگوٹھی کی برآمدگی کی اطلاع دی اور سیاح اپنی کھوئی ہوئی انگوٹھی واپس پا کر خوشی سے جھوم اٹھا اور روبینہ کو 500 روپے کا نوٹ بطور انعام تھما دیا ۔ راجستھان کے اس سیاح نے جہاں روبینہ کی ایمانداری کی تعریف کی وہیں کشمیر کی مہمان نوازی اور ہر کسی کی جانب سے انسان دوست رویہ کو لیکر بھی کافی متاثر ہوا۔


روبینہ کافی غریب ہے اور ایک خرگوش کے سہارے اپنے عیال کا پیٹ پالتی ہے ۔
روبینہ کافی غریب ہے اور ایک خرگوش کے سہارے اپنے عیال کا پیٹ پالتی ہے ۔


روبینہ اگرچہ کافی غریب ہے اور ایک خرگوش کے سہارے اپنے عیال کا پیٹ پالتی ہے ، لیکن مفسلی کے باوجود بھی اس کمسن لڑکی نے ایمانداری اور انسانیت کو ہی ترجیح دی ہے ۔ روبینہ اپنے خرگوش کے ہمراہ روزانہ گھر سے نکلتی ہے اور سیاحوں کو تصویریں کھنچوانے کیلئے اپنا خرگوش فراہم کرتی ہے، جس کے بدلے سیاح روبینہ کو پینسے دیتے ہیں اور اس طرح سے روبینہ اپنے گھروالوں کی روٹی روزی کا انتظام کرتی ہے ۔ روبینہ کے اس کارنامہ کی لوگ کافی سراہنا کر رہے ہیں۔ جبکہ پہلگام ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے روبینہ کےلئے نقد 5 ہزار روپے کے انعام کا بھی اعلان کیا ہے ۔

روبینہ کے مطابق ایمانداری ہی انسان کی اصلی دولت ہے ، جو ہمیشہ انسان کے ساتھ رہتی ہے۔ روبینہ کے بیمار والد کا بھی کہنا ہے کہ روبینہ کے اس کارنامے سے ان کا سر فخر سے اونچا ہو گیا ہے ۔ پہلگام ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے چیف ایکزیکٹیو افسر مشتاق احمد سمنانی کے مطابق روبینہ کے اس کارنامہ سے جہاں کشمیر کی مزید مثبت تشہیر ہوگی ، وہیں اس بات کا بھی خلاصہ ہوا ہے کہ کشمیر کے لوگ آج بھی ایمانداری اور انسان دوستی کے جذبے سے سرشار ہیں ۔

سمنانی نے کہا کہ روبینہ نے نہ صرف پہلگام بلکہ پورے کشمیر کا نام روشن کیا ہے۔ اگرچہ اس ایمانداری کی کوئی قیمت نہیں ہے ، لیکن لڑکی کا حوصلہ بڑھانے کیلئے پہلگام ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے اسے 5 ہزار روپے نقد انعام دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 04, 2021 01:12 PM IST