உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر ایڈمنسٹریٹو کونسل نے وزیراعظم پیکیج ملازمین کی ترقی کے لئے اسکیم کو دی منظوری

    پی ایم پیکج کے تحت تعینات کئے گئے کشمیری تارکین وطن ملازمین کے لئے متعلقہ محکموں کی جانب سے ایک الگ سنیارٹی برقرار رکھنے کا منصوبہ تیارکیا گیا ہے، جوکہ ریگولر ملازمین کی سنیارٹی کے متوازی چلے گا اور پی ایم پیکیج کے تحت اعلیٰ عہدوں پر تقرری کی تاریخ سے لاگو ہوں گے۔

    پی ایم پیکج کے تحت تعینات کئے گئے کشمیری تارکین وطن ملازمین کے لئے متعلقہ محکموں کی جانب سے ایک الگ سنیارٹی برقرار رکھنے کا منصوبہ تیارکیا گیا ہے، جوکہ ریگولر ملازمین کی سنیارٹی کے متوازی چلے گا اور پی ایم پیکیج کے تحت اعلیٰ عہدوں پر تقرری کی تاریخ سے لاگو ہوں گے۔

    پی ایم پیکج کے تحت تعینات کئے گئے کشمیری تارکین وطن ملازمین کے لئے متعلقہ محکموں کی جانب سے ایک الگ سنیارٹی برقرار رکھنے کا منصوبہ تیارکیا گیا ہے، جوکہ ریگولر ملازمین کی سنیارٹی کے متوازی چلے گا اور پی ایم پیکیج کے تحت اعلیٰ عہدوں پر تقرری کی تاریخ سے لاگو ہوں گے۔

    • Share this:
    جموں کشمیر: کشمیر میں اقلیتی طبقے سے تعلق رکھنے والے افراد کے تحفظ پر کشمیری پنڈت ملازمین کے احتجاجی مظاہروں کے بیچ جموں کشمیر سرکار نے ایک بڑا فیصلہ کیا ہے۔ اس فیصلے کے تحت وزیر اعظم کے ترقیاتی پیکیج کے تحت وادی میں تعینات ملازمین کی ترقی کو ہموار کرنے کی کوشش کے تحت انتظامی کونسل (اے سی) جس کی یہاں لیفٹیننٹ گورنر، منوج سنہا کی صدارت میں میٹنگ ہوئی، نے بدھ کو ترقیاتی اسکیم کو منظوری دی۔ اس اسکیم کے تحت پی ایم پیکج ملازمین کی ترقی میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

    لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر راجیو رائے بھٹناگر، جموں و کشمیر کے چیف سیکرٹری ڈاکٹر ارون کمار مہتا اور لیفٹیننٹ گورنر کے پرنسپل سیکرٹری نتیشوار کمار نے اس سلسلے میں منعقدہ ایڈمنسٹریٹو کونسل کی میٹنگ میں شرکت کی۔
    اس اسکیم میں پی ایم پیکج کے تحت تعینات کئے گئے کشمیری تارکین وطن ملازمین کے لئے متعلقہ محکموں کی جانب سے ایک الگ سنیارٹی برقرار رکھنے کا منصوبہ تیارکیا گیا ہے، جوکہ ریگولر ملازمین کی سنیارٹی کے متوازی چلے گا اور پی ایم پیکیج کے تحت اعلیٰ عہدوں پر تقرری کی تاریخ سے لاگو ہوں گے۔ انتظامی کونسل نے اسی تناسب سے نچلی سطحوں پر کشمیری مہاجر ملازمین کی ترقی کی راہ ہموار کرنے کے لئے متعلقہ اعلیٰ سطحوں پرقبل ازحقیقت اعلیٰ اسامیاں تخلیق کرنےکی منظوری دی۔ تاہم، یہ ترقیاں بھرتیوں کے قواعد کے مطابق سنیارٹی اور اہلیت کے تقاضوں پر مبنی ہوں گی۔

    اس کے علاوہ پی ایم پیکیج کی کو برقرار رکھنے کے لئے، پی ایم پیکیج کے تحت تمام آسامیوں کو کشمیر ڈویژن میں ڈویژنل سطح کے عہدوں کے طور پر دوبارہ نامزد کیا گیا ہے۔ نیا ڈھانچہ اہلیت اور سنیارٹی کے مطابق پی ایم پیکج کے تمام ملازمین کو ان سیٹو پروموشن کی راہیں فراہم کرے گا۔

    اسکیم کے نفاذ کی اعلیٰ سطح پر نگرانی کی جائے گی تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ ملازمین جلد از جلد اسکیم کے فوائد حاصل کر سکیں۔ غور طلب بات ہے کہ وزیراعظم پیکیج کے تحت کشمیر میں مختلف سرکاری محکموں میں تعینات کشمیری پنڈت ملازمین کا ان کی ترقیوں کو لے کر بھی ایک مطالبہ تھا اور آج کے اس فیصلے سے کافی حد تک ان ملازمین کو راحت ملی ہے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: