اپنا ضلع منتخب کریں۔

    J&K News : رواں موسم سرما کے دوران ریکارڈ تعداد میں سیاح پہنچے کشمیر، گزشتہ تین ماہ میں سیاحوں کی تعداد نے 7 سال کا توڑا ریکارڈ

    Jammu and Kashmir News : محکمہ سیاحت کے اعدادوشمار کے مطابق رواں موسم سرما کے دوران ریکارڈ تعداد میں سیاحوں نے کشمیر وادی کے مختلف سیاحتی مقامات کا رخ کیا۔ دسمبر 2021 کے دوران لگ بھگ ڈھیڑ لاکھ سیاح وارد کشمیر ہوئے۔

    Jammu and Kashmir News : محکمہ سیاحت کے اعدادوشمار کے مطابق رواں موسم سرما کے دوران ریکارڈ تعداد میں سیاحوں نے کشمیر وادی کے مختلف سیاحتی مقامات کا رخ کیا۔ دسمبر 2021 کے دوران لگ بھگ ڈھیڑ لاکھ سیاح وارد کشمیر ہوئے۔

    Jammu and Kashmir News : محکمہ سیاحت کے اعدادوشمار کے مطابق رواں موسم سرما کے دوران ریکارڈ تعداد میں سیاحوں نے کشمیر وادی کے مختلف سیاحتی مقامات کا رخ کیا۔ دسمبر 2021 کے دوران لگ بھگ ڈھیڑ لاکھ سیاح وارد کشمیر ہوئے۔

    • Share this:
    Jammu and Kashmir News : ملک اور بیرون ممالک کے مختلف حصوں سے کشمیر وادی کی سیر پر آنے والے سیاحوں کا نہ تھمنے والا سلسلہ جاری ہے۔ محکمہ سیاحت کے اعدادوشمار کے مطابق رواں موسم سرما کے دوران ریکارڈ تعداد میں سیاحوں نے کشمیر وادی کے مختلف سیاحتی مقامات کا رخ کیا۔ دسمبر 2021 کے دوران لگ بھگ ڈھیڑ لاکھ سیاح وارد کشمیر ہوئے۔ حالانکہ کورونا وائرس کی تیسری لہر کے باعث جنوری ماہ میں وادی آنے والے سیاحوں کی تعداد میں کمی دیکھی گئی اور اس ماہ میں ساٹھ ہزار کے قریب سیاح وادی کشمیر کی سیر پر آئے۔

    محکمہ سیاحت کے ڈائریکٹر ڈاکٹر جی این یتو نے کہا کہ فروری ماہ میں اب تک ساٹھ ہزار سے زائد سیاح کشمیر کی سیاحت پر آئے۔ نیوز18 اردو کے ساتھ خصوصی گفتگو کے دوران جی این یتو نے کہا : "رواں موسم سرما کے دوران گزشتہ تین ماہ ریکارڈ تعداد میں سیاحوں نے وادی کشمیر کی سیر کی حالانکہ دسمبر مہینے میں سیاحوں کے مثبت رجحان کو دیکھ کر ایسی امید تھی کہ جنوری مہینے میں اس سے زیادہ تعداد میں سیاح وادی کشمیر کے صحت افزاء مقامات کا رخ کریں گے تاہم امیکرون کی وجہ سے جنوری ماہ میں سیاحوں کی تعداد میں کمی واقع ہوئی کیونکہ مہاراشٹر ،گجرات اور دہلی میں کووڈ وباء کی تیسری لہر کے دوران کافی تعداد میں لوگ متاثر ہوئے۔ تاہم فروری مہینے میں کشمیر آنے والے سیاحوں کی تعداد میں پھر اضافہ دیکھنے کو ملا۔اب جبکہ کورونا وائرس کی تیسری لہر قابو میں آچکی ہے ہمیں ایسی امید ہے کہ مستقبل قریب میں سیاحوں کی بھاری تعداد وادی کشمیر کا رخ کرے گی"۔

    ڈائریکٹر ٹورزم کشمیر نے کہا کہ اس مرتبہ ملک کی دیگر ریاستوں سے آنے والے سیاحوں نے نہ صرف گلمرگ اور پہلگام کی سیر کرکے وہاں کے قدرتی مناظر کالطف اٹھایا بلکہ سونہ مرگ اور دودھ پتھری جیسے دیگر سیاحتی مقامات پر بھی کافی تعداد میں سیاح برف سے ڈھکی چراگاہوں اور خوبصورت پہاڑی سلسلوں کی خوبصورتی سے لطف اندوز ہوتے دیکھے گئے۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ محکمہ سیاحت نے اس سال پہلی بار موسم سرما کے دوران سونہ مرگ کو سیاحوں کے لئے کھلا رکھا تھا۔

    گزشتہ تین ماہ میں ریکارڈ تعداد میں سیاحوں کی آمد سے محکمہ سیاحت کو امید ہے کہ رواں برس ریکارڈ تعداد میں سیاح کشمیر کا رخ کریں گے جس کے لئے محکمے نے ایک واضح حکمت عملی تیار کی ہے۔ ڈائریکٹر ٹورزم کے مطابق محکمہ سیاحت موسم بہار کے دوران سیاحوں کو راغب کرنے کے لئے فروری ماہ کے آخری ہفتے سے 15 اپریل تک مختلف پروگرام منعقد کررہا ہے۔ جی این یتو نے کہا : "رواں برس ہم نے کشمیر میں چھ ہفتہ طویل ایک تفصیلی پروگرام ترتیب دیا ہے جس کے دوران باغ گل لالہ اور بادام واری کے علاوہ شیر شالی پانپور ،چرار شریف اور دیگر کئی مقامات پر سیاحتی میلے منعقد کئے جائیں گے تاکہ وادی آنے والے سیاح گل لالہ کے علاوہ سیب اور بادام کے شگوفوں کے ساتھ ساتھ قدرتی طور پر اگنے والے دیگر پھولوں کی خوبصورتی کابھی لطف اٹھا سکیں۔"

    انہوں نے کہا کہ ان میلوں کے دوران کشمیر کے روایتی پکوان اور یہاں کی دیگر روایتی اشیاء کی نمائش بھی کی جائے گی۔ موسم بہار کے دوران زیادہ سے زیادہ سیاحوں کو کشمیر کی سیر پر راغب کرنے کے لیے محکمہ سیاحت ملک بھر کے بائیس بڑے شہروں میں روڑ شوز منعقد کرنے والا ہے اس کے علاوہ سیاحوں کو مائل کرنے کے لیے ذرائع ابلاغ کے مختلف پلیٹ فارم بروئے کار لائے جارہے ہیں۔

    ڈائریکٹر ٹورزم ڈاکٹر جی این یتو نے بھروسہ جتایا کہ محکمہ اور سیاحت کے شعبے سے منسلک دیگر افراد کی مشترکہ کوششوں سے سال 2022 کشمیر کے سیاحتی شعبے کے لئے بہترین سال ثابت ہوگا۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: