ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر: 'کورونا وائرس کرفیو' میں 31 مئی تک توسیع کا اعلان

جموں و کشمیر کے سبھی اضلاع کے قصبوں اور تحصیل ہیڈکوارٹروں میں دکانیں اور دیگر تجارتی مراکز بند ہیں جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ کی آمد و رفت بھی کلی طور پر معطل ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: May 22, 2021 07:38 PM IST
  • Share this:
جموں و کشمیر: 'کورونا وائرس کرفیو' میں 31 مئی تک توسیع کا اعلان
جموں و کشمیر کے سبھی اضلاع کے قصبوں اور تحصیل ہیڈکوارٹروں میں دکانیں اور دیگر تجارتی مراکز بند

سری نگر: کورونا وائرس کی دوسری اور خطرناک لہر کی روک تھام کو ممکن بنانے کے لئے جموں و کشمیر کے سبھی بیس اضلاع میں جاری 'کورونا کرفیو' میں 31 مئی تک توسیع کر دی گئی ہے۔ محکمہ اطلاعات و تعلقات عامہ کے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر ہفتے کی شام ایک ٹویٹ میں یہ اعلان کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ 'کرفیو' سخت ہوگا تاہم ضلع مجسٹریٹ معاشی سرگرمیوں کو جاری رکھنے کو یقینی بنائیں گے۔ ٹویٹ میں کہا گیا ہے: 'جموں و کشمیر کے سبھی بیس اضلاع میں 24 مئی کی صبح سات بجے تک نافذ کورونا کرفیو میں 31 مئی کی صبح سات بجے تک توسیع کی گئی ہے۔ کرفیو سخت ہوگا تاہم اہم اور لازمی خدمات مستثنیٰ ہوں گی۔ ضلع مجسٹریٹوں کو معاشی سرگرمیاں جاری رکھنے کو یقینی بنانے کے محدود اختیارات دیے گئے ہیں'۔

بتا دیں کہ کورونا کی دوسری لہر کی روک تھام کو ممکن بنانے کے لئے جموں و کشمیر کے سبھی بیس اضلاع میں 10 مئی سے مکمل لاک ڈاؤن نافذ ہے۔ قبل ازیں جموں و کشمیر میں گیارہ دنوں تک کہیں مکمل تو کہیں جزوی لاک ڈائون نافذ رہا۔ دریں اثنا جموں و کشمیر میں گذشتہ 13 دنوں سے جاری مکمل 'کورونا کرفیو' کے باعث معمولات زندگی مسلسل معطل ہیں۔

جموں و کشمیر کے سبھی اضلاع کے قصبوں اور تحصیل ہیڈکوارٹروں میں دکانیں اور دیگر تجارتی مراکز بند ہیں جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ کی آمد و رفت بھی کلی طور پر معطل ہے۔

تاہم جہاں اشیائے ضروریہ جیسے دودھ اور سبزیاں فروخت کرنے والی کچھ دکانیں کھلی نظر آ رہی ہیں وہیں اکا دکا نجی گاڑیاں بھی سڑکوں پر دوڑتی ہوئی دیکھی جا سکتی ہیں۔ یو این آئی اردو کے ایک نامہ نگار نے ہفتے کو شہر کے بعض علاقوں کا دورہ کرکے بتایا کہ سری نگر کے تمام پائین و بالائی علاقوں میں بدستور سناٹا چھایا ہوا ہے اور لوگ گھروں میں بیٹھے ہوئے ہیں۔


انہوں نے بتایا کہ سری نگر کے بازار ویرانوں کا نظارہ پیش کر رہے ہیں جبکہ سڑکیں سنساں ہیں اور ہر سو خاموشی چھائی ہوئی ہے۔ نامہ نگار نے بتایا کہ کورونا کرفیو پر عمل آوری کو یقینی بنانے کے لئے سڑکوں کو بند کر دیا گیا اور سیکورٹی فورسز کی اضافی نفری تعینات کی گئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کسی ایمرجنسی صورت میں ہی لوگوں کو چلنے کی اجازت دی جا رہی ہے اور ایمرجنسی خدمات سے وابستہ گاڑیاں سڑکوں پر نظر آ رہی ہیں۔
وادی کے دوسرے ضلعی صدر مقامات و دیگر تحصیل ہیڈکوارٹروں میں بھی مسلسل مکمل لاک ڈاؤن ہے اور لوگوں کی نقل و حمل پر پابندی کو یقینی بنانے کے لئے سڑکوں کو بند کر دیا گیا ہے۔ صوبہ جموں کے سبھی دس اضلاع میں بھی مکمل لاک ڈاؤن کے نفاذ کی اطلاعات ہیں جس سے معمولات زندگی معطل ہیں۔ ملک کی دوسری ریاستوں کی طرح جموں و کشمیر میں بھی کورونا وائرس کے مثبت کیسز سامنے آنے اور اس وبا سے ہلاکتوں کا نہ تھمنے والا سلسلہ جاری ہے۔
Published by: Sana Naeem
First published: May 22, 2021 07:38 PM IST