ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں کشمیر میں کووڈ کی لہر مزید تیز ، ایس ایم ایچ ایس اسپتال اور گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر میں معمول کی سرگرمیاں معطل

Jammu and Kashmir News : گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر کے پرنسپل کی جانب سے جاری ایک حکم نامہ کے تحت ایس ایم ایچ ایس اسپتال میں معمول کے او پی ڈی اور معمول کی جراحیوں پر مکمل روک لگا دی گئی ہے ۔ یہ قدم کورونا کے بڑھتے معاملات اور مریضوں کے بڑھتے رش پر قابو پانے کیلئے اٹھایا گیا ہے ۔

  • Share this:
جموں کشمیر میں کووڈ کی لہر مزید تیز ، ایس ایم ایچ ایس اسپتال اور گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر میں معمول کی سرگرمیاں معطل
جموں کشمیر میں کووڈ کی لہر مزید تیز ، ایس ایم ایچ ایس اسپتال اور گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر میں معمول کی سرگرمیاں معطل

جموں و کشمیر: مرکز کے زیر انتظام جموں و کشمیر میں کورونا کے تازہ معاملات میں آئے دن اضافہ کی وجہ سے لوگوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے ، جس کے تناظر میں انتظامیہ و سرکار کووڈ کے چین کو توڑنے کیلئے سخت اقدامات اٹھانے کے احکامات صادر کر رہی ہیں ۔ انتظامیہ کے حالیہ فیصلہ کے تحت کشمیر کے اہم ترین اسپتال ایس ایم ایچ ایس سرینگر میں معمول کی سرگرمیوں پر فوری روک لگا دی گئی ہے ۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر کے پرنسپل کی جانب سے جاری ایک حکم نامہ کے تحت ایس ایم ایچ ایس اسپتال میں معمول کے او پی ڈی اور معمول کی جراحیوں پر مکمل روک لگا دی گئی ہے ۔ یہ قدم کورونا کے بڑھتے معاملات اور مریضوں کے بڑھتے رش پر قابو پانے کیلئے اٹھایا گیا ہے ۔


ایس ایم ایچ ایس کے میڈیکل سپرنٹینڈنٹ ڈاکٹر نظیر چودھری نے نیوز18 سے بات چیت کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی کہ اسپتال میں معمول کے مریضوں کیلئے او پی ڈی اور آپریشنز فی الحال عارضی طور پر روک لگا دی گئی ہے ۔ تاکہ اسپتال میں معمول کے رش پر قابو پایا جا سکے اور کووڈ متاثرہ افراد کی بھرتیوں کیلئے اسپتال کی گنجائش میں اضافہ ممکن بنایا جا سکے ۔ تاہم ڈاکٹر نظیر چودھری نے اس بات کو واضح کیا کہ ایمرجنسی نوعیت والے مریضوں کے علاج اور ایمرجنسی آپریشنز کیلئے اسپتال کھلا رہے گا ۔


ڈاکٹر نظیر نے کہا کہ کورونا کی سنگین صورتحال کے مدنظر اسپتال انتظامیہ نے تمام پیڈ وارڈوں کو کووڈ وارڈوں میں تبدیل کردیا ہے ۔ جبکہ ایس ایم ایچ ایس کے لگ بھگ 12 وارڈوں کو بھی کووڈ وارڈوں میں تبدیل کر دیا گیا ہے ۔ ڈاکٹر نظیر چودھری نے کہا کہ ایس ایم ایچ ایس اسپتال کو کورونا مریضوں کے بڑھتے رش کو دیکھتے ہوئے متاثرہ مریضوں کو ہر طرح کی سہولیات فراہم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان وارڈوں میں 300 بیڈ کووڈ مریضوں کے لیے مختص رکھے گئے ہیں ۔ ادھر جی ایم سی سرینگر کے پرنسپل نے میڈیکل کالج میں بھی معمول کی سرگرمیوں کو بند رکھنے کا حکم جاری کیا ہے ۔


اس حکم نامہ کے مطابق میڈیکل کالج میں درس و تدریس اور تمام دیگر سرگرمیوں کو فوری طور پر روک لگا دی گئی ہے ۔ انتظامیہ بھی ضلع سطح پر کووڈ پر قابو پانے کیلئے اب سخت اقدامات اٹھا رہی ہے ، جس کیلئے جموں و کشمیر پولیس کی خدمات بھی طلب کی جا رہی ہیں ۔ پولیس نے مختلف اضلاع میں اپنی معمول کی چیکنگ میں شدت لاتے ہوئے گاڑیوں میں سفر کرنے والے مسافروں کو کووڈ ایس او پیز کے نفاذ کو لاگو کرنے کیلئے اقدامات تیز کردئے ہیں ۔

اس کے تحت مسافروں کو فیس ماسک لگانے کی ترغیب دی جا رہی ہے اور خلاف ورزی کی پاداش میں مسافروں پر جرمانہ بھی عائد کیا جاتا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 19, 2021 10:53 PM IST