ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کشمیر میں کورونا کی تازہ لہر کی زد میں آئے کئی اسکول ، متعدد طالب علم کورونا پازیٹیو ، انتظامیہ نے اٹھایا یہ بڑا قدم

Coronavirus in Jammu and Kashmir : کشمیر میں کورونا کی تازہ لہر نے کئی اسکولوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے ، جس کی وجہ سے انتظامیہ نے کشمیر میں فی الحال 8 اسکولوں کو عارضی طور پر بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس حوالے سے ضروری ہدایات جاری کردی گئی ہیں ۔

  • Share this:
کشمیر میں کورونا کی تازہ لہر کی زد میں آئے کئی اسکول ، متعدد طالب علم کورونا پازیٹیو ، انتظامیہ نے اٹھایا یہ بڑا قدم
کشمیر میں کورونا کی تازہ لہر کی زد میں آئے کئی اسکول ، متعدد طالب علم کورونا پازیٹیو ، انتظامیہ نے اٹھایا یہ بڑا قدم

جموں و کشمیر: کشمیر میں کورونا کی تازہ لہر نے کئی اسکولوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے ، جس کی وجہ سے انتظامیہ نے کشمیر میں فی الحال 8 اسکولوں کو عارضی طور پر بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس حوالے سے ضروری ہدایات جاری کردی گئی ہیں ۔ ان اسکولوں میں جنوبی کشمیر کے کھل احمد آباد کا اسکول شامل ہے ، جہاں پر 36 طالب علموں کو کووڈ متاثر پایا گیا ۔ جبکہ ضلع اننت ناگ کے کاٹھسو پہلگام علاقے میں واقع گورنمنٹ ہائی اسکول میں 14 طالب علموں کو کورونا سے متاثر پایا گیا ، جس کے بعد حکام نے ایک ہفتہ کیلئے اسکول کو بند رکھنے کا حکم دیا ہے ۔


زونل ایجوکیشن افسر سری گفواڑہ عبدالرشید ڈار نے اسکول میں چھٹی سے دسویں جماعت میں زیر تعلیم 14 طالب علموں کی کورونا سے متاثر ہونے کی تصدیق کی ہے۔ زونل ایجوکیشن افسر عبدالرشید نے بتایا کہ اسکول میں زیر تعلیم 138 طلبہ کے نمونے لئے گئے تھے اور ان میں سے 14 کی جانچ کی گئی ہے ، جن کے نتائج مثبت پائے گئے ہیں۔ ڈار کے مطابق 5 اسٹاف کے بھی نمونے حاصل کئے گئے تھے جو منفی پائے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ متعلقہ تحصیلدار سمیت انتظامیہ نے اسکول کو ایک ہفتہ کے لئے بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔


ادھر مٹن اننت ناگ کے ایک نجی اسکول کو بھی انتطامیہ نے احتیاطی طور پر 3 دن بند رکھنے کے حکم دیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق کچھ دن قبل اسکول کے چیئرمین کا کووڈ ٹیسٹ مثبت پایا گیا تھا ، جس کے تناظر میں یہ اقدام احتیاطی طور پر اٹھایا گیا ۔ تاہم اسکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ چیئرمین گزشتہ لمبے وقت سے اسکول نہیں آتے تھے۔ جبکہ احتیاطی طور پر پورے اسکول اسٹاف کے کووڈ ٹیسٹ کرائے گئے جو منفی نکلے ہیں ۔ اسلئے والدین کو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے ۔ اس کے علاوہ وسطی اور شمالی کشمیر کے بڈگام ، سرینگر اور بانڈی پورہ میں بھی کچھ اسکولوں میں کورونا کے مثبت معاملات سامنے آنے کے بعد انتظامیہ نے ان اسکولوں کو عارضی طور پر بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔


دریں اثا اسکولوں میں کورونا کے تازہ معاملات سامنے آنے کے بعد والدین میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ تاہم انتظامیہ نے والدین سے نہ گھبرانے کی اپیل کرتے ہوئے مزید احتیاط اور قواعد و ضوابط کو سختی سے نافذ کرنے کی ہدایت دی ہے۔ ڈی سی اننت ناگ ڈاکٹر پیوش سنگلا کے مطابق اسکولوں کو پہلے ہی ایس او پی و دیگر ضوابط نافذ کرنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔ جبکہ اسکولوں میں کورونا سے نمٹنے کیلئے گائڈلائنس کو پہلے ہی مرتب کیا گیا ہے اور طالب علموں میں دوری کو یقینی بنانے کے لیے اسکولوں کو اقدامات اٹھانے کی سختی سے ہدایت کی گئی ہے۔

ڈی سی نے مزید کہا کہ اسکولوں کی انتظامیہ کو طالب علموں و اسٹاف میں ماسک کے استعمال و سینیٹائزیشن کے عمل کو یقینی بنانے کے لیے سخت اٹھانے کی ہدایت دی گئی ہے اور اس حوالے سے کسی بھی غفلت کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ ڈی سی نے کہا کہ ایسے اسکولوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی جو کورونا سے نمٹنے کے لئے گائیڈلائنس کا سختی سے نفاذ کرنے میں ناکام رہیں گے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 01, 2021 06:12 PM IST