உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر: سابق CM مفتی محمد سعید کی بیٹی کے خلاف عدالت نے جاری کیا وارنٹ، یٰسین ملک کی ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ پیشی

    روبیہ سعید اغوا معاملے میں یٰسین ملک کو دہلی کی تہاڑ جیل سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ عدالت میں پیش کیا گیا۔

    روبیہ سعید اغوا معاملے میں یٰسین ملک کو دہلی کی تہاڑ جیل سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ عدالت میں پیش کیا گیا۔

    Rubaiya Sayeed News: روبیہ سعید نے 15 جولائی کو یٰسین ملک اور تین دیگر کی ان لوگوں کے طور پر شناخت کی تھی، جنہوں نے ان کا 33 سال پہلے اغوا کیا تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir, India
    • Share this:
      جموں: جموں کی ایک عدالت نے جموں وکشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ مفتی محمد سعید کی بیٹی روبیہ سعید کے خلاف منگل کو ضمانتی وارنٹ جاری کیا۔ روبیہ سعید 1989 میں جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ (جے کے ایل ایف) کے اراکین کے ذریعہ جاری کئے گئے ان کے (روبیہ سعید) اغوا معاملے میں جرح کے لئے عدالت میں پیش نہیں ہوئی تھیں۔ اس معاملے میں ایک ملزم جے کے ایل ایف سربراہ یٰسین ملک کو دہلی کی تہاڑ جیل سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ عدالت میں پیش کیا گیا۔

      سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) کی مستقل وکیل مونیکا کوہلی نے بتایا کہ یٰسین ملک نے انفرادی طور پر عدالت میں پیش ہونے کی گزارش کی ہے اور قانونی مدد دستیاب کرانے کی عدالت کی پیشکش کو ٹھکرا دیا ہے۔ روبیہ سعید نے 15 جولائی کو یٰسین ملک اور تین دیگر کی ان لوگوں کے طور پر شناخت کی تھی، جنہوں نے ان کا  33 سال پہلے اغوا کیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      کیا عمران خان ہو جائیں گے گرفتار؟ جانیں پاکستان میں کیوں برے پھنسے PTI لیڈر 

      روبیہ سعید کو لال ڈیڈ اسپتال کے پاس سے 8 دسمبر 1989 کو اغوا کرلیا گیا تھا۔ اس وقت ان کے والد مفتی محمد سعید مرکزی وزیر تھے۔ انہیں پانچ دن تک قید رکھنے کے بعد 13 دسمبر کو تب آزاد کیا گیا تھا جب بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی حمایت والی وی پی سنگھ حکومت نے پانچ دہشت گردوں کو رہا کیا تھا۔

      روبیہ سعید تمل ناڈو میں رہتی ہیں اور سی بی آئی کے استغاثہ کے گواہوں میں شامل ان کا نام بھی ہے۔ مرکزی ایجنسی نے 1990 کی شروعات میں جانچ اپنے ہاتھ میں لی تھی۔ سی بی آئی کی وکیل نے کہا، ’روبیہ سعید کو جرح کے لئے (منگل کو) عدالت میں پیش ہونا تھا، لیکن وہ غیر حاضر رہیں۔ عدالت نے ان کے خلاف سماعت کی آئندہ تاریخ 21 ستمبر کو عدالت میں پیش ہونے کے لئے ضمانتی وارنٹ جاری کیا ہے‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: