ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : 35 سالہ شخص نے 14سالہ معصوم کی آبروریزی کی ، حاملہ ہوئی تو اس طرح کھلا راز ، گرفتار

متاثرہ لڑکی نے پولیس کے سامنے بیان دیا ہے کہ کئی ماہ قبل اسے ملزم نے نشیلی دوائیاں دیکر بے ہوشی کی حالت میں گنونی حرکت انجام دی اور اس کے بعد اس کو خوف زدہ کر کے اس جرم کو راز میں رکھنے کیلئے کہا ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : 35 سالہ شخص نے 14سالہ معصوم کی آبروریزی کی ، حاملہ ہوئی تو اس طرح کھلا راز ، گرفتار
جموں و کشمیر : 35 سالہ شخص نے 14سالہ معصوم کی آبروریزی کی ، حاملہ ہوئی تو اس طرح کھلا راز ، گرفتار

اننت ناگ : جنوبی کشمیر کے اننت ناگ ضلع کے ایک دور افتادہ علاقہ میں 35 سالہ شخص کو 14 برس کی نابالغ لڑکی کی آبرو ریزی اور اسے حاملہ بنانے کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق شانگس اترسو کےایک بالائی علاقہ میں آٹھویں جماعت کی طالبہ کو اس کی ماں کے ایک رشتہ دار نے لگاتار اپنی ہوس کا شکار بنا کر اسے حاملہ بنا دیا ۔ متاثرہ لڑکی کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ کچھ دن قبل ان کی لڑکی نے پیٹ میں درد کی شکایت کی ، جس کے بعد اس کو مقامی حکیم کے پاس لے جایا گیا ۔ تاہم جب لڑکی کی حالت سدھرنے کی بجائے بگڑتی ہی چلی گئی ، تو اسے اننت ناگ کے اسپتال میں منتقل کردیا گیا ، جہاں پر ڈاکٹروں نے الٹرا سونوگرافی کے بعد بتایا کہ کمسن لڑکی 8 ماہ کی حاملہ ہے ۔


معاملہ سامنے آنے کے بعد متاثرہ لڑکی نے گاؤں میں انصاف کا مطالبہ کیا اور مقامی اوقاف کمیٹی کی مداخلت کے بعد اترسو پولیس تھانے میں ایک تحریری شکایت درج کی گئی ۔ ایک پولیس افسر کی تصدیق کے مطابق پاسکو ایکٹ کے تحت ایف آئی آر درج کرنے کے فورا بعد ملزم 35 سالہ شخص کو گرفتار کر لیا گیا ۔ متاثرہ لڑکی کے افراد خانہ کا کہنا ہے کہ ملزم شخص ان کا رشتہ دار ہونے کے ساتھ ساتھ ان کا ہمسایہ بھی ہے ، جو وقتاَ فوقتاً مختلف بہانوں سے ان کے گھر آتا جاتا تھا ۔  اسی دوران مذکورہ شخص نے بربریت کا مظاہرہ کر کے ان کی کم عمر بیٹی آٹھویں جماعت کی طالبہ کو اپنی ہوس کا شکار بنا کر پوری انسانیت کو شرمسار کر دیا۔


 متاثرہ لڑکی کے افراد خانہ کا کہنا ہے کہ ملزم شخص ان کا رشتہ دار ہونے کے ساتھ ساتھ ان کا ہمسایہ بھی ہے ، جو وقتاَ فوقتاً مختلف بہانوں سے ان کے گھر آتا جاتا تھا ۔
متاثرہ لڑکی کے افراد خانہ کا کہنا ہے کہ ملزم شخص ان کا رشتہ دار ہونے کے ساتھ ساتھ ان کا ہمسایہ بھی ہے ، جو وقتاَ فوقتاً مختلف بہانوں سے ان کے گھر آتا جاتا تھا ۔


ادھر ذرائع کے مطابق متاثرہ لڑکی نے پولیس کے سامنے بیان دیا ہے کہ کئی ماہ قبل اسے ملزم نے نشیلی دوائیاں دیکر بے ہوشی کی حالت میں گنونی حرکت انجام دی اور اس کے بعد اس کو خوف زدہ کر کے اس جرم کو راز میں رکھنے کیلئے کہا ۔ متاثرہ کے مطابق مذکورہ شخص نے اس کے ڈر اور خوف کا فائدہ اٹھا کر مسلسل اس کی عصمت دری کی ، جس کے  بعد وہ حاملہ ہوگئی ۔ اس واقعہ سے پورے علاقہ کے لوگوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے اور لوگ ایسی انسانیت سوز حرکت میں ملوث شخص کو جلد ہی کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کر رہے ہیں ۔

مقامی اوقاف کمیٹی کے صدر و سماجی کارکن بیگ فیاض کا کہنا ہے کہ مقامی لوگوں کے تعاون سے انہوں نے مذکورہ شخص کو گرفتار کروا دیا ہے اور پولیس نے اس میں ایک قابل تعریف رول ادا کرتے ہوئے ملزم کو فورا گرفتار کر کے سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا ہے ۔ تاہم بیگ فیاض نے اس طرح کی حرکت کو پوری انسانیت کیلئے شرمناک قرار دیا اور کہا کہ سماج کی اخلاقی قدروں میں گراوٹ اس حد تک پہنچ گئی ہے کہ اب کمسن بچیاں اپنے ہی گھروں میں بھی محفوظ نہیں ہیں ۔

بیگ نے کہا کہ اگر گرفتار شدہ شخص واقعی طور پر اس شرمناک حرکت میں ملوث ہے ، تو فاسٹ ٹریک بنیادوں پر اس کو قانون کی رو سے سخت ترین سزا ملی چاہئے ، جو دوسروں کیلئے باعث عبرت ہو اور اس طرح کے شرمناک کاموں کو انجام دینے والے حیوان بھی اس طرح کی حرکت سے باز آئیں ۔
First published: May 31, 2020 02:12 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading