ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : یوٹی کیلئے 12،600.58 کروڑ روپے ضلعی کیپکس بجٹ کی منظوری

Jammu and Kashmir News : یہ اعلان لیفٹیننٹ گورنر جے اینڈ کے کے دفتر کے ذریعہ جاری کردہ ٹویٹس کے ذریعے کیا گیا ، جس میں کہا گیا ہے کہ ڈسٹرکٹ کیپیکس بجٹ 2021-22 کے طور پر منظور شدہ رقم گذشتہ بجٹ کے مقابلے میں دوگنا ہے۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : یوٹی کیلئے 12،600.58 کروڑ روپے ضلعی کیپکس بجٹ کی منظوری
جموں و کشمیر : یوٹی کیلئے 12،600.58 کروڑ روپے ضلعی کیپکس بجٹ کی منظوری

جموں : جموں و کشمیر انتظامیہ نے 12،600.58 کروڑ ڈسٹرکٹ کیپکس بجٹ 2021-22 کے تحت وسطی علاقوں کی مساوی ترقی کے لئے منظوری دی ۔ یہ اعلان لیفٹیننٹ گورنر جے اینڈ کے کے دفتر کے ذریعہ جاری کردہ ٹویٹس کے ذریعے کیا گیا ، جس میں کہا گیا ہے کہ ڈسٹرکٹ کیپیکس بجٹ 2021-22 کے طور پر منظور شدہ رقم گذشتہ بجٹ کے مقابلے میں دوگنا ہے۔  یہ بجٹ جموں و کشمیر کے لئے تاریخی بجٹ اور اہم دن ہے۔ 12،600.58 کروڑ ڈسٹرکٹ کیپیکس بجٹ 2021-22 ، جو پچھلے سال سے دوگنا ہے ، جس کےتحت پنچایتوں ، بی ڈی سی اور ڈی ڈی سی کی فعال شمولیت سے یوٹی کی مساوی ترقی کے لئے منظوری دی گئی ہے۔ یہ جانکاری بھی ٹیوٹ کے ذریعے سے دی گئی۔


ٹویٹ میں کہا گیا کہ عوامی ضرورت کے مطابق تیار کردہ کمیونٹی پر مبنی منصوبہ ، سماجی و اقتصادی ترقی کے لئے بہترین حکمت عملی اوربنیادی سہولیات کی مضبوطی ، صحت کو مستحکم کرکے معاشرے کی ترقی ، تعلیمی اداروں کو اپنانے کے لئے کافی اہم ہے ۔ انفراسٹرکچر منصوبوں میں عمل درآمد کی رکاوٹوں سے نمٹنے کے لئے ڈی سی کو فوری کارروائی کے لئے ہدایات دئے گئے۔ اس سال کئے گئے 80 فیصد سے زیادہ کام پی آر آئی اور عام آدمی کی مدد سے جن بھاگیداری کے ساتھ 12 ماہ کے اندر مکمل ہونے چاہئیں ۔


اس اعلان میں مزید کہا گیا ہے کہ یہ منصوبہ لوگوں کی معیار زندگی میں تیزی سے اضافے ، مقامی لوگوں کو روزگار کے مواقع ، بہتر سڑکیں ، پینے کے پانی اور بجلی کو یقینی بنانا ، نوجوانوں کو بااختیار بنانا اور عوامی مطالبہ کے مطابق ترجیحات کا تعین کرنے پر مرکوز ہے ۔ اس بجٹ سے جموں و کشمیر میں پنچایتی نظام کو مزید تقویت ملے گی ۔ اس میں مزید کہا گیا کہ لوگوں کو بہتر گورننس ، شفافیت اور فلاحی منصوبوں کی بروقت تکمیل کی ضرورت ہے اور لوگوں کی ضروریات کو پورا کرنا سرکارکی اولین ترجیح ہے ۔


ایل جی کے دفتر کے ٹویٹ میں کہا گیا کہ ڈی سی اور پی آرآئی  کو نوجوانوں کی مشغولیت ، سالڈ ویسٹ مینجمنٹ ، صحت اور تعلیم کے شعبے میں بہتری ، پینے کے صاف پانی، آبپاشی کی سہولیات کی فراہمی ، بہتر نقل و حرکت اور معیشت کی بہتری پر توجہ دینی چاہئے ۔ ڈی سی سے مختلف منصوبوں کے تحت کاموں کے علاوہ فائدہ اٹھانے والے اور سماجی تحفظ کی اسکیموں کی تفصیلات کے ساتھ اضلاع کی ویب سائٹ کو اپ ڈیٹ کرنے کو بھی کہا گیا ۔ ساتھ ہی آن لائن خدمات کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 17, 2021 12:10 AM IST