ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : بھدرواہ میں ہر گزرتے دن کے ساتھ گہراتا جارہا ہے بجلی کا بحران ، جانئے کیا ہے وجہ

Jammu and Kashmir News : جموں و کشمیر کے ضلع بھدرواہ میں بجلی کا بحران ہر گزرتے دن کے ساتھ بد تر صورت اختیار کرتا جا رہا ہے ۔ لوگ اندھیرے میں رہنے پر مجبور ہیں ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : بھدرواہ میں ہر گزرتے دن کے ساتھ گہراتا جارہا ہے بجلی کا بحران ، جانئے کیا ہے وجہ
جموں و کشمیر : بھدرواہ میں ہر گزرتے دن کے ساتھ گہراتا جارہا ہے بجلی کا بحران ، جانئے کیا ہے وجہ

سائر حسین 


سری نگر : جموں و کشمیر کے ضلع بھدرواہ میں بجلی کا بحران ہر گزرتے دن کے ساتھ بد تر صورت اختیار کرتا جا رہا ہے ۔ لوگ اندھیرے میں رہنے پر مجبور ہیں ۔ کھیلانی سے بھدرواہ کے بیچ میں 33kv ٹرانسمیشن لائن میں خامیوں کے نتیجہ میں یہ صورتحال پیدا ہوئی ہے ۔ پاور ڈیویلوپمینٹ ڈیپارٹمنٹ کے آفیشل رپورٹ کے مطابق بھدرواہ میں 30 میگاواٹ کی ضرورت ہے ۔ لیکن برسوں پرانی ٹرانسمیشن لائن اتنی بجلی کا بوجھ برداشت کرنے کے قابل نہیں ہے ۔ ٹرانسمیشن لائن پر لگائے گئے کنڈکٹر 15 میگاواٹ سے زیادہ بجلی سپلائی نہیں کر سکتے ہیں ، جس کی وجہ سے علاقہ میں غیر علانیہ کٹوتی اور بار بار لائن میں خامیاں پیدا ہوتی رہتی ہیں ۔


آر ٹی آئی کے ذریعہ حاصل کی گئی معلومات کے مطابق 1960 میں ڈالی گئی لائن پر لوڈ کم کرنے کے لئے دوسری ٹرانسمیشن لائن لگائی گئی ۔ کھیلانی سے بھدرواہ کے بیچ میں سال 2009 - 2010  میں ڈالی گئی ، جس پر 17055000 کی لاگت آئی تھی ۔ یہ پوری لائن تب برسرِ کار رہنے والے جونیئر انجینئر نے نصب کرائی تھی ۔ بجلی سپلائی کا یہ پروجیکٹ بنانے کے لئے ٹینڈر طلب نہیں کیا گیا تھا ۔ زمینی سطح پر صورتحال کا جائزہ لینے پر حقیقت عیاں ہو گئی کہ نئی ٹرانسمیشن لائن صرف  9 سالوں تک ہی کام کے قابل کیوں رہی ۔ لائن کی تعمیر میں  غیر معیاری سامان استعمال کیا گیا تھا۔


سماجی کارکن نیرج سنگھ منہاس نے نیوز 18 کو بتایا کہ لگاتار بجلی کی غیر علانیہ کٹوتی کی وجہ سے انہیں پچھلے 15 سالوں سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ معمولی بارش ہو یا تیز ہوا کا جھونکا ، ہمیں کئی گھنٹوں یا کئی دنوں تک اندھیرے میں رہنا پڑتا ہے۔ جب 33 کے وی کی دوسری لائن بچھائی گئی تو ہمیں امید ہوئی اب ہمیں بجلی کی اس پریشانی سے نجات مل جائے گی ، مگر ایسا نہیں ہوسکا ۔

 

وہیں آر ٹی آئی کارکن راشد چودھری نے کہا کہ آر ٹی آئی سے ملی جانکاری کے بعد ہم نے ایک ریئلٹی چیک کیا ، جس میں ہم نے دیکھا کہ جگہ جگہ پہ بجلی کے کھمبے ٹیڑھے میڑھے پڑے ہیں ، کئی جگہ ہوا میں لٹکے ہیں ، اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے یہ جو دوسری لائن بچھائی گئی تھی ، یہ لوگوں کو مشکلات سے نجات دلانے کیلئے نہیں بلکہ اپنی جیبیں بھرنے کے لئے لگائی گئں تھیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 18, 2021 11:20 PM IST