ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : ماگام سے گلمرگ تک اپنی نوعیت کی پہلی سائیکل ریس کا انعقاد ، یہ تھا خاص مقصد

Jammu and Kashmir News : وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے ماگام سے سیاحتی مقام گلمرگ تک اپنی نوعیت کی یہ پہلی ریس منعقد ہوئی ہے ۔ گلمرگ سطح سمندر سے آٹھ ہزار سات سو فٹ کی بلندی پر واقع ہے ۔ تیس کلومیٹر کی ریس میں تینتالیس سائیکلسٹس نے حصہ لیا ، جن میں قومی و بین الاقوامی سائیکلسٹ بھی شامل تھے ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : ماگام سے گلمرگ تک اپنی نوعیت کی پہلی سائیکل ریس کا انعقاد ، یہ تھا خاص مقصد
جموں و کشمیر : ماگام سے گلمرگ تک اپنی نوعیت کی پہلی سائیکل ریس کا انعقاد ، یہ تھا خاص مقصد

بڈگام : وادی کے نوجوان سماجی کارکن سید علی اصغر رضوی نے سائیکل اسٹرائیک کے نام سے وادی کشمیر کے نوجوانوں کو کھیل کود کی جانب راغب کرنے اور خاص کر منشیات کی لت اور دوسرے غلط کاموں سے دور رکھنے کے لئے سائیکل ریس کا اہتمام کیا۔ وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے  ماگام سے سیاحتی مقام گلمرگ تک اپنی نوعیت کی یہ پہلی ریس منعقد ہوئی ہے ۔ گلمرگ سطح سمندر سے آٹھ ہزار سات سو فٹ کی بلندی پر واقع ہے ۔ تیس کلومیٹر کی ریس میں تینتالیس سائیکلسٹس نے حصہ لیا ، جن میں قومی و بین الاقوامی سائیکلسٹ بھی شامل تھے ۔


ماگام رضوی اسٹاف سے اس ریس کا آغاز ہوا ۔ نوجوان سائکلسٹس میں کافی جوش نظر آیا۔ ان سائیکلسٹس کی فیزکل فٹنس کی تربیت مشہور فٹنس ٹرینر امتیاز ڈار نے دی۔ سماجی کارکن سید علی اصغر رضوی نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ نوجوان نسل کو غلط کاموں سے دور رکھنے کے لیے اس طرح کے اقدامات کئے جا رہے ہیں ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ مستقبل میں وہ خواتین کی سائیکل ریس بھی منعقد کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں ۔ ساتھ ہی دیگر ریاستوں کے کھلاڑیوں کو بھی یہاں دعوت دی جائے گی۔


ماگام سے گلمرگ تک تیس کلومیٹر کی مسافت طے کر کے محمد اکبر خان ، وحید احمد اور مونس احمد نے بالترتیب پہلی ، دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کی ۔ بین الاقوامی سائیکلسٹ محمد اکبر خان نے پہلی پوزیشن حاصل کرنے پر خوشی کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ماگام سے گلمرگ تک سائیکل ریس کرنے سے نیا تجربہ حاصل ہوا ہے۔ دیگر نوجوانوں سائیکلسٹ نے بھی خوشی کا اظہار کیا ۔ دوسری پوزیشن حاصل کرنے والے وحید احمد نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ انہیں آج گلمرگ تک ریس کرنے سے حوصلہ ملا ۔ انہوں نے کہاکہ گلمرگ صرف سیاحوں کے جگہ مانی جاتی ہے ۔ تاہم آج سائیکل ریس سے اس کی شناخت سائیکلنگ کے میدان میں بھی ابھر کر آئی۔


پوزیشن حاصل کرنے والوں کو ڈپٹی کمشنر بارہمولہ بوپندر کمار نے اعزازات سے نوازا۔ ڈپٹی کمشنر بارہمولہ نے نیوز 18 اردو سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس ریس کے انعقاد پر انتہائی خوش ہوئے ۔ انہوں نے بتایا کہ کشمیر کے نوجوانوں میں کافی صلاحیتیں موجود ہیں ۔ ان صلاحیتوں کو بروئے کار لانے کی ضرورت ہے۔ ڈی سی نے کہا کہ ضلع انتظامیہ بھی اس طرح کے مقابلے منعقد کریں گے ، جس سے نوجوانوں کو بہتر پلیٹ فارم فراہم ہوسکے ۔

ماہرین کا بھی کہنا ہے کہ وادی کشمیر میں ہر طرح کے کھیل کود میں یہاں کے نوجوانوں میں کافی صلاحتیں موجود ہیں ۔ ان صلاحیتوں کو نکھارنے اور بہتر پلیٹ فارم فراہم کرنے کی ضرورت ہے ۔ سائیکلنگ میں وادی کے کئی سائیکلسٹ نے بین الاقوامی سطح پر اپنا لوہا منوایا ہے ۔ دیگر نوجوانوں کو بھی اس میدان اپنا نام کمانے کیلئے راغب کرنے کی ضرورت ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 27, 2021 11:46 PM IST