ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

غیر ملکی سفارتکاروں نے کیا جموں و کشمیر کا دورہ، شام کو دہلی کیلئے روانہ ہوگا وفد

جموں کشمیر کے موجودہ حالات کا جائزہ لینے کی غرض سے یوروپی یونین سمیت 24 ممالک کے سفارتکاروں کا ایک وفد آج کشمیر کے دورے پر پہنچا۔ سرینگر ایئر پورٹ پر اس وفد کا روایتی انداز میں استقبال کیاگیا اور ارکان پر پھول برسائے گئے۔ اس وفد میں یوروپی یونین کے علاوہ دیگر ممالک کے سفارتکار شامل ہیں۔

  • Share this:
غیر ملکی سفارتکاروں نے کیا جموں و کشمیر کا دورہ، شام کو دہلی کیلئے روانہ ہوگا وفد
یوروپی یونین اور دیگر ممالک کے سفارتکاروں نے آج کشمیر کا دورہ کیا۔

یوروپی یونین اور دیگر ممالک کے سفارتکاروں نے آج کشمیر کا دورہ کیا۔ سفارتکاروں کے وفد نے سول سوسائٹی گروپس، عوامی نمائندے اورمقامی افراد سے ملاقات کی اور زمینی صورتحال کا جائزہ لیا۔ جموں کشمیر کے موجودہ حالات کا جائزہ لینے کی غرض سے یوروپی یونین سمیت 24 ممالک کے سفارتکاروں کا ایک وفد آج کشمیر کے دورے پر پہنچا۔ سرینگر ایئر پورٹ پر اس وفد کا روایتی انداز میں استقبال کیاگیا اور ارکان پر پھول برسائے گئے۔ اس وفد میں یوروپی یونین کے علاوہ دیگر ممالک کے سفارتکار شامل ہیں۔


وادی پہنچنے کے بعد یہ وفد بڈگام ضلع کے ماگام پہنچا جہاں پر ڈی ڈی سی چیئرمین نذیر خان سمیت دیگر پنچایتی نمائندوں نے ان کا خیر مقدم کیا۔ اس موقع پر بیرونی سفارتکاروں کو پنچایتی راج اور حکومت کے دیگر پروگرامس جیسے بیک ٹو ولیج کے بارے میں جانکاری دی گئی۔ غیرملکی سفارت کاروں کےوفدنے ڈگری کالج ماگام میں ڈی ڈی سی چئیرمین،سرپنچ،پنچ اور دیگر لوگوں کے ساتھ تبادلہ خیال کیا۔کشمیر خاص کربڈگام کی تعمیر وترقی کے حوالے سے بات چیت ہوئی۔


ماگام کے بعد غیر ملکی سفارتکاروں نے سرینگر میں ایس ایم سی میئر جنید عظیم متوسمیت ڈی ڈی سی ، بی ڈی سی اورمیونسپل کونسل چیئر پرسنس سے ملاقات کی۔ عوامی نمائندوں نے وفد کو بتایا کہ کشمیر میں جمہوریت مزیدمضبوط ہوئی ہے اورامن وامان اور ترقی کے لئے راہ ہموار ہوئی ہے۔ انہوں نے جموں کشمیر میں سرمایہ کاری اور سیاحت کے فروغ کے لئے سفارتکاروں کا تعاون طلب کیا۔


بعد میں اس وفد نے درگاہ حضرت بل پر حاضری دی ۔ حضرت بل انتظامیہ نے انھیں حضرت بل کی تاریخی اہمیت سے واقف کرایا۔یہاں پر وفد کے ارکان نے تصویریں بھی کھنچوائیں۔غیر ملکی سفارتکاروں نےسرینگر میں سول سوسائٹی کے ارکان سے تبادلہ خیال کیا اور صورتحال سے واقفیت حاصل کی۔

واضح رہے کہ پانچ اگست دو ہزار انیس کو جموں کشمیر کی خصوصی پوزیشن ختم کرنے کے بعد غیر ملکی نمائندوں کا یہ تیسرا دورہ ہے ۔یہ سفارتکار ایسے وقت کشمیر پہنچے ہیں جب یوٹی میں ڈی ڈی سی انتخابات کا کامیاب انعقاد ہوا اور حال ہی میں فور جی انٹرنیٹ خدمات بحال ہوئی ہیں۔اس وفد کے ارکان جمعرات کو جموں کا دورہ کریں گے۔

غیر ملکی وفد کی آمد کے تناظر میں سرینگر شہر کے چند علاقوں میں جزوی ہڑتال رہی۔ لال چوک سمیت شہر خاص کے کئی علاقوں میں دکانیں اور دیگر تجارتی مراکز بند رہے۔ امن وضبط برقرار رکھنے کے لئے حساس مقامات پر سکیورٹی فورسز کو تعینات کیا گیا تھا۔ اس موقع پر صرف چنندہ میڈیا اداروں کو ہی ان سرگرمیوں کے کوریج کی اجازت تھی۔
Published by: Sana Naeem
First published: Feb 18, 2021 04:02 PM IST