உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سرینگر میں Republicday سے پہلے GrenadeAttack، پولیس اہلکار سمیت چار زخمی

    Youtube Video

    پولیس اور سی آر پی ایف نے آس پاس تلاشی مہم شروع کردی لیکن آخری خبریں آنے تک کوئی کامیابی اُن کے ہاتھ نہیں لگی تھی۔ پولیس اب سی سی ٹی فوٹیج کا بھی جائزہ لے گی ۔

    • Share this:
    جموں۔کشمیر: سرینگر میں یوم جمہوریہ سے پہلے ہی ملیٹنٹوں نے گرنیڈ حملہ  grenade attack کیا۔ اس حملہ میں ایک پولیس انسپکٹر اور تین عام شہری زخمی ہوئے۔ ملیٹنٹوں نے ہری سنگھ ہائی اسٹریٹ کے مصروف بازار میں دن کے ساڑھے تین بجے گرنیڈ داغا ۔ پولیس کی گاڑی کو بھی اس حملہ میں نقصان پہنچا ہے۔ زخمی افراد کی پہچان چرار شریف بڈگام کی عصمہ ، چھتہ بل سرینگر کے تنویرا اور انکے خاوند محمد شفیع اور زخمی پولیس انسپکٹر کی پہچان تنویر احمد کے طور کی گئی ہے۔ زخمی افراد کو فوری طور ایس ایم ایچ ایس سرینگر منتقل کیا گیا جہاں اُنکی حالت مستحکم بتائی گئی ہے۔

    کشمیر میں یوم جمہوریہ Republic Day 2022 کے اور دیگر ایسے مواقع پر ملی ٹنٹ حملوں کا خطرہ رہتا ہے اور ایسے مواقع پر ملی ٹنٹ اپنی موجودگی درج کرنے کی کوشش کرتے رہے ہیں۔ آئی جی پی کشمیر نے کل فُل ڈریس رہرسل کے دوران کہا تھا کہ سیکورٹی دستوں نے مکمل حفاظتی انتظامات کئے ہیں اور آج یہ واردات ہوئی۔
    آج کا گرنیڈ حملہ جہاں ہوا وہاں کافی بھیڑ رہتی ہے اور پچھلے کئی دنوں سے مسلسل تلاشیاں لی جارہی تھی۔ آج دن میں بھی کئی جگہ پر ناکے لگائے گئے تھے اور کچھ جگہوں پر جامہ تلاشیاں بھی کی جارہی تھی لیکن اس کے باوجود ملی ٹنٹ یہ حملہ کرنے میں کامیاب کیسے ہوئے یہ سیکورٹی ایجنسیوں کے لئے بڑا سوال ہئ۔ کچھ لوگ یہ بھی کہہ رہئے تھے کہ شاید تلاشی کے دوران ملی ٹنٹ نے گرنیڈ داغا اور خود بھیڑ میں گھس کر بھاگ نکلا۔

    پولیس اور سی آر پی ایف نے آس پاس تلاشی مہم شروع کردی لیکن آخری خبریں آنے تک کوئی کامیابی اُن کے ہاتھ نہیں لگی تھی۔ پولیس اب سی سی ٹی فوٹیج کا بھی جائزہ لے گی ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: