ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں میں کورونا کے گراف میں کمی آنے کے بعد سرکار نے اٹھایا یہ بڑا قدم، لوگوں کو ملی راحت

Jammu and Kashmir : سرکار نے کئی اضلاع میں لاک ڈاون پوری طرح ختم کردیا ہے، جس کی وجہ سے عوام کو کافی راحت ملی ہے۔ تاہم ڈپٹی کمشنر جموں انشل گرگ نے کہا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد بھی احتیاط برتنے کی ضرورت ہے ۔ بازاروں اور ٹرانسپورٹ کی گاڑیوں میں بھی سخت احتیاط برتنے کی ضرورت ہے ۔

  • Share this:
جموں میں کورونا کے گراف میں کمی آنے کے بعد سرکار نے اٹھایا یہ بڑا قدم، لوگوں کو ملی راحت
جموں میں کورونا کے گراف میں کمی آنے کے بعد سرکار نے یہ بڑا اٹھایا قدم، لوگوں کو ملی راحت

جموں : جموں وکشمیر میں کورونا وائرس کے مثبت معاملات میں کافی کمی آئی ہے۔ یعنی کووڈ کا گراف کافی نیچے آیا ہے ۔ اسی تناظر میں سرکار نے کئی اضلاع میں لاک ڈاون پوری طرح ختم کردیا ہے، جس کی وجہ سے عوام کو کافی راحت ملی ہے۔ تاہم ڈپٹی کمشنر جموں انشل گرگ نے کہا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد بھی احتیاط برتنے کی ضرورت ہے ۔ بازاروں اور ٹرانسپورٹ کی گاڑیوں میں بھی سخت احتیاط برتنے کی ضرورت ہے ۔ انشل گرگ نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ سرکار نے جو لاک ڈاؤن میں نرمی دی ہے ، اس کو لے کر دکانیں صبح سات بجے سے شام سات بجے کھول سکتے ہیں اور اس دوران کسی بھی طرح کے روسٹر کی ضرورت نہیں ہے۔ لوگ ہفتہ وار طریقہ پر دکانیں کھول کر اپنی تجارت کرسکتے ہیں ۔


انشل گرگ نے مزید لوگوں کو خبردار کیا کہ جموں میں رات کے دوران شبانہ کرفیو نافذ ہوگا ۔ یہ کرفیو شام آٹھ بجے صبح سات بجے تک نافذ العمل رہے گا ۔ ڈپٹی کمشنر نے لوگوں کے بچاؤ کیلئے محکمہ صحت کی جاری کردہ گائیڈ لائن پر سختی سے عمل کرنی چاہئے ۔ انہوں نے لوگوں کو خبردار کیا کہ وہ یہ نہ سمجھے کہ لاک ڈاؤن کا خاتمہ ہوگیا ہے ، بلکہ کسی کوبھی کووڈ کی خلاف ورزی کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔ خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔


ادھر لاک ڈاؤن کے خاتمہ پر مقامی لوگوں نے مسرت کا اظہار کیا ۔ جموں سے تعلق رکھنے والے کرن سنگھ نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ لاک ڈاؤن کے خاتمے سے انہیں بہت راحت میسر ہوگی ، کیونکہ گزشتہ ایک سال سے لوگ اپنے گھروں میں محصور ہوکر رہ گئے ۔ ایک اور مقامی شخص گرمیت سنگھ نے اس اقدام کا خیر مقدم کیا ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ سرکار نے لوگوں کو چھوٹ دی ہے ، مگر بھیڑ بھاڑ سے احتیاط لازمی ہے ، کیونکہ یہاں کووڈ کی تیسری لہر آنے والی ہے ، جو ماہرین کے مطابق انتہائی خطرناک ہوگی ۔


راکیش پنڈت نامی شخص نے بھی نیوز 18 اردو کو بتایا کہ لوگوں کو احتیاطی تدابیر پر عمل پیرا ہوکر ہی گھروں سے باہر آنا چاہئے ۔ لاک ڈاؤن کے خاتمہ کے بعد بھی محکمہ ہیلتھ اور جموں وکشمیر پولیس لوگوں کو احتیاط برتنے سے متعلق جانکاری فراہم کررہے ہیں ۔ ماسک اور سماجی دوری پر سخت زور دیا جارہا ہے ، جو ہر ایک کے بچاؤ کیلئے لازمی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 23, 2021 12:03 AM IST