ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : کورونا قہر سے کاروبار ، ہو ٹل اور انڈسٹریز سے وابستہ لوگوں کو بھاری نقصان ، مگر پھر بھی کیا لاک ڈاؤن کا خیرمقدم ، جانئے کیوں

Jammu and Kashmir News : لوگوں کا کہنا ہے گورنر انتظامیہ کا یہ ایک اچھا فیصلہ ہے اور یہ وقت کی ضرورت تھی ۔ جموں و کشمیر میں جو آج بھی کورونا کے 3400 سے زائد معاملات سامنے آئے اور کئی ساری اموات بھی ہوئی ہیں ۔ اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ حالات کتنے نازک ہیں ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : کورونا قہر سے کاروبار ، ہو ٹل اور انڈسٹریز سے وابستہ لوگوں کو بھاری نقصان ، مگر پھر بھی کیا لاک ڈاؤن کا خیرمقدم ، جانئے کیوں
جموں و کشمیر : کورونا قہر سے کاروبار ، ہو ٹل اور انڈسٹریز سے وابستہ لوگوں کو بھاری نقصان

جموں : جموں و کشمیر کے 11 ضلعوں میں کورونا کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے ۔ جموں و کشمیر کے 11ضلعوں میں لوگوں کی آمدورفت پر بھی بندشیں رہیں گی ۔ گائیڈ لائنس کے مطابق میڈیکل شاپ ، ویجیٹیبل وینڈر، گروسری کی دکانیں کھلی رہیں گی ۔ سرکاری اور غیر سرکاری دفاتر میں کام متاثر رہے گا ۔ کورونا کے پیش نظر تمام پبلک پرائیویٹ ٹرانسپورٹ بند رہے گا ۔ اسکولوں ، کالجوں اور یونیورسٹیوں کو پہلے ہی بند کر دیا گیا تھا ۔ گورنر انتظامیہ کے اس فیصلہ کا جموں کے لوگوں نے خیرمقدم کیا ہے ۔ بالخصوص جموں کے مختلف تاجر طبقہ نے اس فیصلہ کا خیرمقدم کیا ۔


لوگوں کا کہنا ہے گورنر انتظامیہ کا یہ ایک اچھا فیصلہ ہے اور یہ وقت کی ضرورت تھی ۔ جموں و کشمیر میں جو آج بھی کورونا کے 3400 سے زائد معاملات سامنے آئے اور کئی ساری اموات بھی ہوئی ہیں ۔ اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ حالات کتنے نازک ہیں ۔ ایسے حالات میں لاک ڈاون کا جو عمل ہے ، وہ بہت ضروری ہے ۔ لوگوں نے گورنر انتظامیہ کے اس فیصلے کا خیرمقدم کیا ۔


ویئر ہاوس ایسوسی ایشن کے صدر دیپک گپتا کا کہنا تھا آج حالات ایسے نہیں ہیں کہ ہم اپنا فائدہ یا نقصان دیکھیں ، اس وقت ہمیں کورونا سے لوگوں کی جان بچانے کی فکر ہے ۔ جیسے اس وقت جموں میں حالات بن رہے ہیں ، سرکاری اور غیر سرکاری اسپتالوں میں تمام بیڈ کورونا مریضوں سے بھرے ہوئے ہیں ، اب اگر کسی مریض کو داخل کرنا ہو تو وہاں جگہ خالی نہیں ہے ، ہو سکتا ہے جموں کے اسپتالوں میں بھی آکسیجن کی کمی کی بات سامنے آئے ۔


گپتا نے مزید کہا کہ ہم دیگر ریاستوں کا حال دیکھ رہے ہیں ۔ اگر جموں و کشمیر میں ایسے حالات پیدا ہوئے تو اس سے نمٹنا مشکل ہوگا ۔ گورنر انتظامیہ نے جو لاک ڈاؤن لگانے کا فیصلہ کیا ہے ، ہم اس کا خیرمقدم کرتے ہیں ۔

نائب صدر ویئر ہاوس ٹریڈر منیش مہاجن کا کہنا ہے سرکار اپنی طرف سے پوری کوشش کر رہی ہے کہ کورونا سے لوگوں کو بچایا جائے ۔ گزشتہ سال جب سرکار کی طرف سے لاک ڈاون لگایا گیا تھا ، تو اس وقت بھی ہم نے سرکار کے فیصلے کا پورا ساتھ دیا تھا اور آج بھی ہم سرکار کے اس فیصلہ کا پورا ساتھ دیتے ہیں ۔ لاک ڈاون ہی کورونا سے لوگوں کو محفوظ رکھنے کا واحد راستہ ہے ۔

جموں چمبر آف کامرس انڈسٹریز کے صدر ارون گپتا کا کہنا ہے یہ سرکار کا ایک اچھا فیصلہ ہے ۔ ہم نے بھی سرکار سے گزارش کی تھی کہ جموں میں لاک ڈاؤن لگایا جائے ۔ اس لاک ڈاؤن سے کورونا کی جو چین بنی ہے ، اس کو توڑنے میں مدد ملے گی ۔ ہم لوگوں سے درخواست کررہے ہیں کہ سرکار کے اس فیصلہ میں اپنا پورا تعاون دیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 30, 2021 12:22 AM IST