ہوم » نیوز » تعلیم و روزگار

جموں وکشمیر:ملازمت کے مواقع، دوسری ریاستوں کے امیدواربھی دے سکتے ہیں درخواست

سرکاری ملازمت کے منتظرامیدواروں کے لئے خوشخبری ہے۔ جموں وکشمیرمیں 33 نان گزیٹیڈ عہدوں کے لئے درخواستیں طلب کی گئیں ہیں۔ یہ پوسٹیں جموں وکشمیر کورٹ کی جانب سے طلب کی گئی ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر:ملازمت کے مواقع، دوسری ریاستوں کے امیدواربھی دے سکتے ہیں درخواست
سرکاری ملازمت کے منتظرامیدواروں کے لئے خوشخبری ہے۔ جموں وکشمیرمیں 33 نان گزیٹیڈ عہدوں کے لئے درخواستیں طلب کی گئیں ہیں۔ یہ پوسٹیں جموں وکشمیر کورٹ کی جانب سے طلب کی گئی ہے۔

سرکاری ملازمت کے منتظرامیدواروں کے لئے خوشخبری ہے۔ جموں وکشمیرمیں 33 نان گزیٹیڈ عہدوں کے لئے درخواستیں طلب کی گئیں ہیں۔ یہ پوسٹیں جموں وکشمیر کورٹ کی جانب سے طلب کی گئی ہے۔ لیکن خاص بات یہ ہے کہ نہ صرف جموں وکشمیر میں رہنے والے افراد ، بلکہ ملک بھر سے امیدوار ان عہدوں کے لئے درخواست دے سکتے ہیں۔ ہم آپ کو بتادیں کہ رواں سال 5 اگست کو مرکزی حکومت کی جانب سے ریاست میں آرٹیکل 370 اور 35A کے کی منسوخی کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب پورے ملک سے درخواستیں طلب کی گئیں ہیں۔ دراصل، وادی کشمیر میں اب سرکاری ملازمتوں کے لئے اہلیت صرف کشمیراورلداخ کےمستقل باشندوں تک ہی محدود نہیں ہے بلکہ دیگر ریاستوں ںے تعلق رکھنے والے امیدوار بھی خالی عہدوں کے کے لئے درخواست دے سکتے ہیں۔


فائل فوٹو ۔ اے پی ۔
فائل فوٹو ۔ اے پی ۔


سرکاری نوٹیفکیشن کے مطابق جموں وکشمیر ہائی کورٹ نے اسٹینوگرافر ، ٹائپسٹ اور ڈرائیور کے عہدوں کے لئے درخواستیں طلب کی ہیں۔ یاد رہے کہ ایک امیدوار صرف ایک عہدے کے لئے درخواست دے سکتا ہے۔ تاہم ، ان عہدوں پر کچھ نشستیں ریاست کے مستقل رہائشیوں کے لئے مخصوص ہوں گی۔ جموں وکشمیر ریزرویشن رولز 2005 کے مطابق ان نشستوں پر امیدواروں کا انتخاب کیا جائے گا۔ دوسری ریاستوں کے امیدوار 33 آسامیوں میں سے 17 آسامیوں کے لئے درخواست دے سکتے ہیں۔


جموں وکشمیرمیں 33 نان گزیٹیڈ عہدوں کے لئے درخواستیں طلب کی گئیں ہیں۔ یہ پوسٹیں جموں وکشمیر کورٹ کی جانب سے طلب کی گئی ہے۔
جموں وکشمیرمیں 33 نان گزیٹیڈ عہدوں کے لئے درخواستیں طلب کی گئیں ہیں۔ یہ پوسٹیں جموں وکشمیر کورٹ کی جانب سے طلب کی گئی ہے۔


درخواست دینے کا طریقہ

امیدواروں کو ان آسامیوں کے لئے آن لائن درخواست دینا ہوگا اور جموں میں رجسٹرار جنرل کے پاس اپنی درخواست جمع کرانی ہوگی۔ جبکہ کشمیراور لداخ میں رہنے والے لوگ پرنسپل ڈسٹرکٹ ججوں کو درخواستیں جمع کرواسکتے ہیں۔
First published: Dec 30, 2019 11:23 AM IST