உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Amarnath Yatra 2022: شری امرناتھ جی یاترا کے لیے اعلیٰ سطحی حفاظتی انتظامات 

    Amarnath Yatra 2022: نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کے نئے مقرر کردہ سربراہ دنکر گپتا فورس کے سربراہ کے طور پر یونین ٹیریٹری کے اپنے پہلے دورے پر وادی کشمیر میں ہیں۔

    Amarnath Yatra 2022: نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کے نئے مقرر کردہ سربراہ دنکر گپتا فورس کے سربراہ کے طور پر یونین ٹیریٹری کے اپنے پہلے دورے پر وادی کشمیر میں ہیں۔

    Amarnath Yatra 2022: نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کے نئے مقرر کردہ سربراہ دنکر گپتا فورس کے سربراہ کے طور پر یونین ٹیریٹری کے اپنے پہلے دورے پر وادی کشمیر میں ہیں۔

    • Share this:
    Amarnath Yatra 2022: شری امرناتھ جی یاترا کے لیے اعلیٰ سطحی حفاظتی انتظامات رکھنے کے لیے مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر میں تمام نیم فوجی دستوں کے سربراہوں کو حفاظتی اقدامات کا مسلسل جائزہ لینے کے لیے تعینات کیاگیا۔نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کے نئے مقرر کردہ سربراہ دنکر گپتا فورس کے سربراہ کے طور پر یونین ٹیریٹری کے اپنے پہلے دورے پر وادی کشمیر میں ہیں۔ اگرچہ NIA شری امرناتھ جی یاترا کے سیکورٹی انتظامات سے براہ راست منسلک نہیں ہے، لیکن اس کے اہلکار دہشت گردی کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے ملی ٹینسی کی فنڈنگ ​​اور اس طرح کے دیگر جرائم کے خلاف انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں میں مصروف ہیں۔ این آئی اے جموں و کشمیر میں دہشت گردی کے خلاف کئی مقدمات کی تحقیقات کر رہی ہے۔

    خاص طور پر دہشت گردی کے حملوں، سرحد پار سے فنڈنگ وغیرہ شامل ہے۔تمام اہم نیم فوجی دستوں کے سربراہان جن کے دستے جموں و کشمیر میں شری امرناتھ یاترا کے حفاظتی انتظامات کے لیے تعینات کیے گئے ہیں۔ وہ بھی حفاظتی اقدامات کا مسلسل جائزہ لینے کے لیے مرکز کے زیر انتظام علاقوں خاص طور پر وادی کا سفر کررہے ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ آرمی چیف جنرل منوج پانڈے بھی جلد ہی جموں و کشمیر کا دورہ کریں گے۔ بال تل اور پہلگام کے دونوں راستوں کے ساتھ ساتھ گھپا پر یاتریوں کی حفاظت کے لیے فوج کو تعینات کیا گیا ہے۔بارڈر سیکورٹی فورس (بی ایس ایف)، سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف)، سینٹرل انڈسٹریل سیکورٹی فورس (سی آئی ایس ایف)، انڈو تبت بارڈر پولیس (آئی ٹی بی پی) اور ساشسٹرا سیما بال (ایس ایس بی) کو سیکورٹی انتظامات کے لیے تعینات کیا گیا ہے۔ جموں سری نگر نیشنل ہائی وے کی سیکورٹی جموں و کشمیر پولیس کے ساتھ سی آر پی ایف کے کنٹرول میں ہے۔ پٹھان کوٹ جموں قومی شاہراہ کے علاوہ جموں و کشمیر کے گیٹ وے لکھن پور پر بھی سی آر پی ایف کے جوانوں کو تعینات کیا گیا ہے۔

    Weather Alert: موسمی خرابی کے بعد کشمیر میں امرناتھ یاترا کو کیا گیا عارضی طور پر معطل

    ذرائع نے بتایا کہ "نئی دہلی میں اپنے ہیڈکوارٹر میں بیٹھ کر بھی نیم فوجی دستوں کے سربراہ شری امرناتھ جی یاترا کی سیکورٹی کے حوالے سے جموں و کشمیر کی صورتحال کا باقاعدگی سے جائزہ لے رہے ہیں۔ جنوبی کشمیر میں 43 روزہ شری امرناتھ جی یاترا 29 جون کو جموں اور 30 ​​جون کو پہلگام اور بال تل کے دونوں ٹریکس سے شروع ہوئی اور یاتریوں کے بھاری رش کے ساتھ آسانی سے آگے بڑھ رہی ہے۔جب کہ حکومت آٹھ لاکھ یاتریوں کے گھپا پر جانے کی توقع کر رہی ہے، ذرائع نے بتایا کہ یہ تعداد تھوڑی کم ہو سکتی ہے لیکن پھر بھی ملک بھر سے آنے والے یاتری کے ردعمل سے یہ کافی اچھی یاترا ہو گی۔


    یہ یاترا 11 اگست کو رکھشا بندھن کے ساتھ اختتام پذیر ہوگی۔مرکزی وزارت داخلہ نے یاتریوں کی حفاظت کے لیے جموں و کشمیر میں نیم فوجی دستوں کی 35000 اضافی کمپنیاں تعینات کی ہیں۔ جموں و کشمیر پولیس اور جموں و کشمیر مسلح پولیس نے بھی یاترا کی حفاظت کے لیے بڑی تعداد میں اپنے پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا ہے۔ 200 ہائی پاور والی بلٹ پروف گاڑیاں سیکورٹی فورسز کے ساتھ حساس مقامات پر تعینات کی گئی ہیں تاکہ دھماکہ خیز مواد کا پتہ لگانے کے ساتھ ساتھ جموں و کشمیر میں محفوظ یاترا کو یقینی بنانے کے لیے دیگر کام بھی انجام دی جا سکیں۔ خطرات سے نمٹنے کے لیے سیکورٹی فورسز تیار ہیں۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: