ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : گجر بکروال طبقہ اور دیگر قبائل کیلئے تاریخ ساز دن ، فارسٹ رائٹس ایکٹ 2006 پر عمل آوری کا آغاز

Jammu and Kashmir News : جموں وکشمیر کے گجر بکروال طبقے اور دیگر ایسے ہی قبائل سے تعلق رکھنے والے افراد تیرہ ستمبر دوہزار اکیس ایک تاریخ ساز دن کے طور پر یاد رکھیں گے ۔ کیونکہ آج کے دن جموں وکشمیر میں فارسٹ رائٹس ایکٹ۔2006 کا باضابطہ طور پر آغاز ہوا۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : گجر بکروال طبقہ اور دیگر قبائل کیلئے تاریخ ساز دن ، فارسٹ رائٹس ایکٹ 2006 پر عمل آوری کا آغاز
جموں و کشمیر : گجر بکروال طبقہ اور دیگر قبائل کیلئے تاریخ ساز دن ، فارسٹ رائٹس ایکٹ 2006 پر عمل آوری کا آغاز

جموں و کشمیر : جموں وکشمیر کے گجر بکروال طبقے اور دیگر ایسے ہی قبائل سے تعلق رکھنے والے افراد تیرہ ستمبر دوہزار اکیس ایک تاریخ ساز دن کے طور پر یاد رکھیں گے ۔ کیونکہ آج کے دن جموں وکشمیر میں فارسٹ رائٹس ایکٹ۔2006 کا باضابطہ طور پر آغاز ہوا۔ سرینگر میں منعقدہ ایک تقریب کے دوران لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے ان طبقات سے وابستہ پانچ سو بارہ اشخاص کو ضروری اسناد فراہم کیں۔ ان افراد کا تعلق جموں وکشمیر کے دس اضلاع سے ہے ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ایل جی منوج سنہا نے کہا کہ فارسٹ رائٹس ایکٹ کے عملانے سے گجر بکروال اور پہاڑی علاقوں میں آباد دیگر قبائل کے لوگوں کی ایک دیرینہ مانگ پوری ہوگئی ہے ، کیونکہ اس سے جموں وکشمیر کے دور دراز جنگلاتی علاقوں میں رہائش پذیر لوگوں کووہ تمام حقوق حاصل ہوپائیں گے جن کے وہ حقدار ہیں۔


انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کی گزشتہ سرکاروں نے اس اہم معاملے کی طرف کبھی بھی توجہ نہیں دی تاہم دوہزار انیس میں دفعہ تین سو ستہر اور پینتیس اے کی منسوخی اور جموں وکشمیر کو یوٹی کا درجہ دئے جانے کے بعد ملک بھر میں لاگو اس ایکٹ کو جموں وکشمیر میں لاگو کرنے کی پہل کی گئی اور آج وہ دن آگیا جب یوٹی میں فارسٹ رائٹس ایکٹ لاگو کرنے کی باضابطہ شروعات ہوگئی۔


انہوں نے کہاکہ اس ایکٹ کے عمل میں آجانے سے گجر بکروال اور دیگر پچھڑے قبائلی طبقوں کی ترقی یقینی بن جائے گی۔ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کہا کہ آج میں وزیر اعظم نریندر مودی کا دل کی عمیق گہرائیوں سے شکریہ ادا کروں گا ، جن کی کوششوں کی وجہ سے یہ ایکٹ لاگو ہو پایا ہے ۔ دوہزار انیس سے پہلے ملک کے دیگر حصوں میں لاگو کئے جانے والے کئی قانون یہاں لاگو نہیں ہوتے تھے۔ تاہم جموں و کشمیر کے محکمہ جنگلات اور قبائلی معاملات سے متعلق محکمے نے مل کر یہ کوشش شروع کی کہ ان پچھڑے طبقوں کی ترقی کے لیے کیا کیا جاسکتا ہے۔


بیس ہزار کے قریب درخواستیں موصول ہوئی ہیں ، ان میں کچھ افراد اور قبائل بھی شامل ہیں۔ اور ان کی گزارشات پر لازمی طور پر مقررمدت یعنی پچہتر دنوں میں فیصلہ لیا جائے گا ۔ اس کے علاوہ ان لوگوں کی فلاح و بہبود کے لیے کئی اسکیمیں چلائی جارہی ہیں اور مجھے اس بات کا اطمینان ہے کہ ان اسکیموں سے گجر بکروال طبقے کی ترقی کویقینی بنانے میں مدد ملے گی ۔ انہوں نے کہاکہ جنگلات اور قبائلی عوام صدیوں سے ہم اثر رہے ہیں اور اس ایکٹ کے ذریعے ان لوگوں کا مستقبل سنوارنے میں کافی مدد ملے گی ۔ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے تاہم قبائلی عوام سے اپیل کی کہ وہ جنگلات اور جنگلی حیاتیات کی حفاظت یقینی بنانے میں اپنی ذمہ داریاں بخوبی نبھائیں ۔

گجر بکروال طبقے سے وابستہ افراد نے یوٹی انتظامیہ کے اس فیصلے کا خیر مقدم کیا۔ راجوری کے اشفاق چودھری نے اس پہل کو خوش آئند قرار دیا ۔ نیوز18 اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج کا دن گجر بکروال طبقے کے لیے ایک تاریخی دن ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پہاڑی علاقوں میں قیام پذیر عوام موسمی حالات کی وجہ سے کافی نقصانات سے دوچار ہورہے ہیں ۔ تاہم اس ایکٹ کو لاگو کرنے سے ان کی مشکلات کا ازالہ ممکن ہوپائے گا ۔ پونچھ ضلع سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر شبیر نے نیوز18 اردو سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اگرچہ اس ایکٹ کو لاگو کرنے کی شروعات دوہزار انیس میں ہوئی تھی ۔ تاہم آج یہ ایکٹ باضابطہ طور پر عمل میں لایا گیا ، جو اس طبقے کے لیے ایک نیک شگون ہے۔

پونچھ ضلع سے تعلق رکھنے والے محمد الدین چودھری نامی ایک شخص نے نیوز18 اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حالانکہ گزشتہ سرکاروں نے فارسٹ رائٹس ایکٹ کے نفاذ کے معاملہ پر کافی زبانی جمع و خرچ کیا ۔ تاہم عملی طور پر اس بارے میں کوئی بھی قدم نہیں اٹھایا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ ایل جی انتظامیہ نے اس معاملہ میں ٹھوس اقدامات کرکے گجر بکروال طبقے کے وابستہ افراد کے چہروں پر مسکراہٹ لانے کا کام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فارسٹ رائٹس ایکٹ نافذ ہوجانے سے جموں وکشمیر کے جنگلی علاقوں میں رہائش پذیر لوگوں کو جنگلاتی اراضی پر وہ تمام حقوق حاصل ہوپائیں گے جن سے وہ ابھی تک محروم رکھے گئے تھے ۔ انہوں نے کہاکہ وہ وزیراعظم نریندر مودی اور جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے مشکور ہیں ، جنہوں نے یہ تاریخی قدم اٹھایا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Sep 13, 2021 08:50 PM IST