ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں۔کشمیر: کپواڑہ کے کیرن سیکٹر میں دراندازی کی کوشش کو بنایاگیا ناکام، 5دہشت گردہلاک

کپواڑہ ضلع میں ایل او سی کے نزدیک کیرن سیکٹر میں فوج نے دراندازی کی کوشش کو ناکام بنایا اور پانچ دہشت گردوں کو ہلاک کردیا۔ حالیہ آپریشن میں فوج کے پانچ جوان بھی شہید ہوئے ہیں۔جن میں صوبیدارسنجیو کمار،پیرا ٹروپر بال کرشن، پیرا ٹروپر چھترا پل سنگھ، حوالدار دیویندر سنگھ اور پیرا ٹروپر امت کمار شامل ہیں۔چنار کورپس پندرہ کور کے کمانڈرلیفٹننٹ جنرل بی ایس راجو نے کیرن آپریشن کی تفصیلات فراہم کی۔

  • Share this:

کپواڑہ ضلع میں ایل او سی کے نزدیک کیرن سیکٹر میں فوج نے دراندازی کی کوشش کو ناکام بنایا اور پانچ دہشت گردوں کو ہلاک کردیا۔ حالیہ آپریشن میں فوج کے پانچ جوان بھی شہید ہوئے ہیں۔جن میں صوبیدارسنجیو کمار،پیرا ٹروپر بال کرشن، پیرا ٹروپر چھترا پل سنگھ، حوالدار دیویندر سنگھ اور پیرا ٹروپر امت کمار شامل ہیں۔چنار کورپس پندرہ کور کے کمانڈرلیفٹننٹ جنرل بی ایس راجو نے کیرن آپریشن کی تفصیلات فراہم کی۔

وہیں جموں وکشمیر کے ضلع پونچھ میں لائن آف کنٹرول کے قریب پاکستانی فورسز نے فائر بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔ دفاعی ترجمان نے بتایا  "منگل کےروز صبح قریب آٹھ بجے  پاکستان نے پونچھ ضلع کے مانکوٹ سیکٹر میں لائن آف کنٹرول کے قریب چھوٹے ہتھیاروں سے گولی باری کرکے مورٹار داغ کر بغیر کسی اکساوے کے جنگ بندی کی خلاف ورزی کی۔

انہوں نے کہا ، "ہندستانی فوج اس کا بھرپور جواب دے رہی ہے۔" اس سے قبل پیر کے روز ، پاکستانی فوج نے لائن آف کنٹرول کے قریب مانکوٹ سیکٹر میں جنگ بندی کی خلاف ورزی کی تھی اور چھوٹے ہتھیاروں سے فائرنگ کی تھی اور مورٹار داغے تھے۔

اس نے گزشتہ جمعہ کو سندربنی۔ نوشیرا سیکٹرمیں بھی فائرنگ کی تھی جس میں چھ سکیورٹی اہلکار زخمی ہوئے تھے۔

وزیر مملکت برائے دفاع شریپاد یاشو نائک نے مارچ میں پارلیمنٹ کو بتایا کہ یکم جنوری اور 23 فروری کے درمیان ہندستان اور پاکستان کے مابین بین الاقوامی سرحد اور لائن آف کنٹرول کے پاس جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کے کل 646 واقعات پیش آئے۔ سال 2019 میں ، پاکستانی افواج نے 3،200 سے زیادہ بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کی۔

First published: Apr 07, 2020 01:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading