ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : ”ہیومن جموں“ غیر سرکاری تنظیم نے قائم کی انوکھی مثال ، ہر طرف ہورہی تعریف

Jammu and Kashmir News : "ہیومن جموں" نامی ایک غیر سرکاری تنظیم نے بھی انسانیت کی ایک انوکھی مثال قائم کی ہے ۔ وہ آکسیجن کے محتاج مریضوں کے لئے دیسی آکسیجن فلو میٹر تعمیر کررہی ہے۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : ”ہیومن جموں“ غیر سرکاری تنظیم  نے قائم کی انوکھی مثال ، ہر طرف ہورہی تعریف
جموں و کشمیر : ”ہیومن جموں“ غیر سرکاری تنظیم نے قائم کی انوکھی مثال ، ہر طرف ہورہی تعریف

جموں و کشمیر : کووڈ کے موجودہ بحران میں بہت سی سماجی اور غیر سرکاری تنظیمیں کورونا مریضوں کے زخموں پر مرہم لگانے کے لئے آگے آئی ہیں۔ "ہیومن جموں" نامی ایک غیر سرکاری تنظیم نے بھی انسانیت کی ایک انوکھی مثال قائم کی ہے ۔ وہ آکسیجن کے محتاج مریضوں کے لئے دیسی آکسیجن فلو میٹر تعمیر کررہی ہے۔  سب سے اچھی بات یہ ہے کہ یہ فلومیٹر ضرورت مند لوگوں کو مفت فراہم کیا جارہا ہے ہے ۔


کووڈ وبائی مرض کے دوران ملک بھر میں پی پی ای کٹس ، سینیائٹرز اور ماسک کی بڑی مانگ کی وجہ سے "میک ان انڈیا" اقدام کے تحت بہت سارے تاجروں کی 'سیٹ اپ پروڈکشن' دیکھی گئی ہے۔  تاہم  کورونا کی دوسری لہر نے خاص طور پر طبی آکسیجن ، سلنڈرز ، فلو میٹیرس اور وینٹیلیٹروں کے آس پاس آکسیجن سے متعلق طبی سامان کی فراہمی اور طلب کا فرق پیدا کیا ہے۔  اس کی وجہ سے ان تمام مصنوعات کے لئے بڑے پیمانے پر بلیک مارکیٹنگ کا ایک بہت بڑا جال پھیل گیا ہے جس سے یہ ضروری طبی سازوسامان بھی زیادہ تر مریضوں کے لئے دستیاب نہیں ہوپاتا ہے۔


جانچ کے بعد اور پروٹو ٹائپنگ کے کئی دنوں کے بعد انتہائی ہنر مند کاریگری کے تحت ہیومن جموں کو "میڈ ان جموں" فلو میٹر بنانے میں کامیابی ملی ، جسے وہ اُن ضرورت مند مریضوں کو مہیا کراسکتے ہیں جو گھر پر آکسیجن سلینڈر کا انتظام نہیں کر سکتے تھے۔


فلو میٹرس کے بنانے والوں کا دعوی ہے کہ مارکیٹ میں چین کی مصنوعات قابل اعتماد نہیں ہیں اور ان ذیلی معیاری مصنوعات پر ہمارا انحصار کم کرنا ہے۔  لہذا انہوں نے طبی ایمرجنسی کے اس موڑ پر خود سودیشی آلات بنانے کا فیصلہ کیا۔  ہیومن جموں نے دیسی ساختہ آکسیجن فلو میٹر کو ترقی دینے اور مفت رسائی فراہم کرنے کا چیلنج قبول کیا ۔ آکسیجن سلنڈر سے مریض کو آکسیجن کی تکمیل کے لئے یہ فلو میٹر ایک ضروری اپریٹس ہیں۔

معاشرے کے مختلف طبقات سے تعلق رکھنے والے افراد فلو میٹر بنانے کے اقدام کی تعریف کر رہے ہیں۔  ان کا کہنا ہے کہ لوگوں کو ان لوگوں سے ضرور سیکھنا چاہئے ، جو گھر پر نہیں بیٹھے بلکہ باہر آئے اور اس کام کی بدولت ضرورت مند لوگوں کی مدد کرنے کی کوشش کی۔

وہیں اس تنظیم کے ممبروں کا کہنا ہے کہ مریض ڈاکٹر کے مشاورت اور پیرامیڈیکل عملہ کی نگرانی کے تحت فلو میٹر کا فائدہ اٹھا سکتے ہیں ۔ انہوں نے عوام سے یہ بھی اپیل کی ہے کہ وہ مزید کسی بھی امداد اور ضرورت کے لئے www.humanejammu.net پر جانکاری حاصل کرسکتے ہیں۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 09, 2021 09:45 PM IST