ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : چرس اور نارکوٹکس کی بھاری کھیپ برآمد ، اننت ناگ اور کولگام میں 6 منشیات فروش گرفتار

Jammu and Kashmir News : ایس ایس پی اننت ناگ امتیاز حسین نے کہا کہ منشیات کے خلاف یہ جنگ جاری رہے گی اور اس غیر قانونی کاروبار میں ملوث افراد کو کیفرِ کردار تک پہنچانے کےلئے ہر ممکنہ اقدام اٹھایا جائے گا ۔ جبکہ سماج کو منشیات کی لعنت سے صاف و پاک بنانے کیلئے سماج کے ہر طبقہ کو اٹھ کھڑا ہونے کی ضرورت ہے ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : چرس اور نارکوٹکس کی بھاری کھیپ برآمد ، اننت ناگ اور کولگام میں 6 منشیات فروش گرفتار
جموں و کشمیر : چرس اور نارکوٹکس کی بھاری کھیپ برآمد ، اننت ناگ اور کولگام میں 6 منشیات فروش گرفتار

جموں و کشمیر:  معاشرے سے منشیات کی بدعت کے خاتمے کی کوششوں کو جاری رکھتے ہوئے پولیس نے جنوبی کشمیر کے اننت ناگ اور کولگام اضلاع میں 06 منشیات فروشوں کو گرفتار کیا ہے ۔ اننت ناگ پولیس نے ایک مصدقہ اطلاع کی بنا پر تلکھن بجبہاڑہ میں زیرزمین خفیہ ٹھکانے میں چھپائی گئی منشیات کی بھاری کھیپ کو برآمد کر کے ضبط کر لیا۔ اس سلسلے میں ایس ایس پی اننت ناگ امتیاز حسین نے معلومات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ مخصوص معلومات کی بنیاد پر تلکھن کراسنگ پر قائم ایک ناکے پر پولیس تھانہ بجبہاڑہ کی پولیس پارٹی نے ایک شخص کو روکا ، جس کی شناخت فاروق احمد بٹ ساکن مرہامہ کے نام سے ہوئی ہے۔ مذکورہ شخص کی تلاشی کے دوران اس کے قبضے سے کوڈین فاسفیٹ کی 10 بوتلیں برآمد ہوئی ۔ اسے گرفتار کرکے پولیس اسٹیشن منتقل کردیا گیا ، جہاں پر مذکورہ شخص سے پوچھ تاچھ کی گئی اور تفتیش کے دوران تفتیشی ٹیم کو معلوم ہوا کہ وہ منشیات فروش سے منشیات خرید رہا تھا ، جس کی شناخت تلکھن گاؤں کے محمد اشرف خان کے نام سے ہوئی ہے۔


اس اطلاع پر تھانہ بجبہاڑہ کی پولیس پارٹی نے ایگزیکٹو مجسٹریٹ کے ہمراہ منشیات فروش کے گھر پر چھاپہ مارا۔ گھر اور صحن کی تلاشی کے دوران 34.7 کلو گرام چرس پاؤڈر ، 80 بوتلیں کوڈین فاسفیٹ اور اسپاسمو پروکسیون کے 4500 کیپسول ایک زیرزمین کمین گاہ سے برآمد ہوئیں ، جس کو جے سی بی کے ذریعہ کھودا گیا۔ منشیات فروش کو گرفتار کرکے پولیس اسٹیشن منتقل کردیا گیا ہے ، جہاں وہ زیر حراست ہے ۔


ایس ایس پی اننت ناگ امتیاز حسین نے کہا کہ منشیات کے خلاف یہ جنگ جاری رہے گی اور اس غیر قانونی کاروبار میں ملوث افراد کو کیفرِ کردار تک پہنچانے کےلئے ہر ممکنہ اقدام اٹھایا جائے گا ۔ جبکہ سماج کو منشیات کی لعنت سے صاف و پاک بنانے کیلئے سماج کے ہر طبقہ کو اٹھ کھڑا ہونے کی ضرورت ہے ۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ رواں ماہ کے شروع میں اسی گاؤں میں اسی طرح کے ایک ٹھکانے کا سراغ لگایا گیا تھا اور منشیات کی بھاری کھیپ بھی برآمد ہوئی تھی ۔


دریں اثنا طرح کولگام میں پولیس پوسٹ فرصل کی پولیس پارٹی نے کھرپورہ میں گشت کے دوران ایک گاڑی کو روکا ، جس میں چار افراد سوار تھے۔ ان کی شناخت وقار احمد ڈار ولد محمد یٰسین ڈار ساکن پادشاہی باغ سرینگر ، محمد اسلم وار ولد غلام حسن وار ساکن آرونی بجبہاڑہ ، بلال احمد ہنجی ولد محمد مقبول ہنجی ساکن خار پورہ فریال اور مہراج الدین وانی کے طور پر ہوئی ۔ چیکنگ کے دوران 42 بوتلیں کوڈین فاسفیٹ اور 130 گرام چرس برآمد ہوئی۔ انہیں گرفتار کرکے پولیس اسٹیشن منتقل کردیا گیا ہے جہاں وہ زیر حراست ہیں ۔ جرم میں استعمال ہونے والی گاڑی بھی قبضے میں لے لی گئی ہے۔

ادھر پولیس تھانہ پہلگام نے جنگلاتی اراضی پر غیر قانونی قبضہ اور اس اراضی پر بھنگ کی کاشت کے خلاف 47 افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے۔ ان افراد پر الزام ہے کہ انہوں نے جنگلات کی زمین پر ناجائز طور پر قبضہ کیا اور بعد میں اسی زیر قبضہ زمین پر بھنگ کے پودے لگائے۔ اس سلسلے میں8/20 این ڈی پی ایس اے اور 26 انڈین فاریسٹ ایکٹ کی دفعات کے تحت مقدمہ ایف آئی آر نمبر 18/2021 پولیس اسٹیشن پہلگام میں علاقے کے فاریسٹ رینج آفیسر کے ذریعہ درج ایک مجرمانہ شکایت کی بنیاد پر درج کیا گیا تھا۔

تمام ملزمان کا تعلق جنگلات کے قریب واقع گاؤں لدرو سے ہے ۔ پولیس نے مضبوطی سے اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ منشیات کی اسمگلنگ اور منشیات کی کاشت میں ملوث تمام افراد کو قانون کے غضب کا سامنا کرنا پڑے گا۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 27, 2021 10:25 PM IST