உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں کشمیر میں طلباء اور اساتذہ کو ویکسین کے ٹیکے لگوانے کی مہم شروع

    جموں کشمیر میں طلباء اور اساتذہ کو ویکسین کے ٹیکے لگوانے کی مہم شروع

    جموں کشمیر میں طلباء اور اساتذہ کو ویکسین کے ٹیکے لگوانے کی مہم شروع

    جموں و کشمیر حکومت نے حال ہی میں تمام تدریسی عملے اور یونیورسٹیوں، کالجوں کے طلباء کو ویکسینیشن لگانے کا حکم جاری کیا ہے تاکہ مستقبل میں ان تعلیمی اداروں کو دوبارہ کھول دیا جائے۔ اس سلسلے میں جموں کے مختلف سرکاری کالجوں میں خصوصی ویکسینیشن مہم شروع کی گئی ہے جہاں طلباء اور عملے کو ویکسین دی جا رہی ہے۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر حکومت نے حال ہی میں تمام تدریسی عملے اور یونیورسٹیوں ، کالجوں کے طلباء کو ویکسینیشن لگانے کا حکم جاری کیا ہے تاکہ مستقبل میں ان تعلیمی اداروں کو دوبارہ کھول دیا جائے۔ اس سلسلے میں جموں کے مختلف سرکاری کالجوں میں خصوصی ویکسینیشن مہم شروع کی گئی ہے جہاں طلباء اور عملے کو ویکسین دی جا رہی ہے۔

    کووڈ ویکسین کی خوراک حاصل کرنے والے یہ لوگ دراصل جموں کے مختلف کالجوں کے طالب علم ہیں۔ جموں کے کچھ ممتاز سرکاری کالجوں کے ان طلباء اور عملے کو محکمہ تعلیم کے تعاون سے محکمہ صحت کی طرف سے گورنمنٹ ویمن کالج جموں میں شروع کی جانے والی خصوصی ویکسینیشن مہم میں ویکسین کے ڈوز لگائے جا رہے ہیں۔  یہ ڈرائیو آج شروع کی گئی۔ اس ڈرائیو کے دوران ویمن کالج گاندھی نگر ، ایم اے ایم کالج اور ویمن کالج ، پریڈ کے پانچ سو سے زائد طالبات کو کوویڈ ویکسین کی پہلی خوراک دی گئی۔  منتظمین کا کہنا ہے کہ ایل جی نے محکمہ تعلیم اور صحت کو ہدایت کی ہے کہ کالجوں اور یونیورسٹیوں کے تمام طلباء کو جلد از جلد ویکسینیشن کی خوراک دی جائے۔

    ان کالجوں کے طلباء ویکسینیشن کی خوراک لینے کے لیے پرجوش نظر آئے۔  ان میں سے بیشتر کو پہلی خوراک ملی جبکہ ان میں سے کچھ کو ویکسین کی دوسری خوراک دی گئی۔  ان سب کا کہنا ہے کہ وہ اب گھر سے آن لائن کلاس لیتے ہوئے بور محسوس کر رہے ہیں۔ان کا کہنا ہے سبھی کالج جلد سے جلد کھولے جائیں تاکہ وہ دوبارہ آکر پہلے کی طرح آف لائن کلاسیں لے سکیں۔

    جموں و کشمیر حکومت نے حال ہی میں تمام تدریسی عملے اور یونیورسٹیوں ، کالجوں کے طلباء کو ویکسینیشن لگانے کا حکم جاری کیا ہے تاکہ مستقبل میں ان تعلیمی اداروں کو دوبارہ کھول دیا جائے۔ اس سلسلے میں جموں کے مختلف سرکاری کالجوں میں خصوصی ویکسینیشن مہم شروع کی گئی ہے جہاں طلباء اور عملے کو ویکسین دی جا رہی ہے۔
    جموں و کشمیر حکومت نے حال ہی میں تمام تدریسی عملے اور یونیورسٹیوں ، کالجوں کے طلباء کو ویکسینیشن لگانے کا حکم جاری کیا ہے تاکہ مستقبل میں ان تعلیمی اداروں کو دوبارہ کھول دیا جائے۔ اس سلسلے میں جموں کے مختلف سرکاری کالجوں میں خصوصی ویکسینیشن مہم شروع کی گئی ہے جہاں طلباء اور عملے کو ویکسین دی جا رہی ہے۔


    ایم اے ایم کالج کی طلبا ساکشی شرما نے بتایا جو حالات چل رہے ہیں ان حالاتوں میں کوویڈ ویکسین لگانا بہت ضروری ہے۔ بنا ویکسین کے ہم کالج نہیں جا سکتے ہیں۔ میں نے آج ویکسین کا پہلا ڈوز لیا تو اب میں اپنے باقی ساتھیوں سے بھی گزارش کرتی ہوں کہ وہ بھی جلد سے جلد ویکسین لگائیں تاکہ سرکار جلد سے جلد کالجوں کو کھولنے کا فیصلہ لیں۔

    ریتی منہاس طلبہ کا کہنا ہے کہ ہندوستان کی کئی ریاستوں میں 50 فیصد سکولوں اور کالجوں کو کھول دیا ہے لیکن جموں کشمیر میں ابھی تک ایسا کوئی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے جس کی وجہ ہے ویکسین۔ ابھی تک سبھی لوگوں نے ویکسین نہیں لگوایا ہے تو حکومت سکول اور کالجوں کو کھولنے کا فیصلہ کیسے لے سکتی ہے۔ آج میں نے ویکسین کی پہلی خوراک لی ہے اور میں چاہتی ہوں سبھی لوگ اپنے بچوں کو ویکسین کی خوراک لگوائے تاکہ حکومت پھر سے سکولوں اور کالجوں کو کھولنے کا فیصلہ لے سکے۔

    ریتی نے مزید کہا اب غالباً دو سال ہوگئے آن لائن پڑھتے ہوئے۔ میں اپنے کالج کے ساتھیوں کو بہت یاد کرتی ہوں اور میں اُن سب سے درخواست کرتی ہوں کہ وہ بھی ویکسین کی خوراک لیں تاکہ ہم بِنا کسی ڈر خوف کے پھر سے کالج میں ایک دوسرے سے مل سکیں۔ جموں کشمیر حکومت اس ماہ کے آخری ہفتے سے ویکسین لے چکے طلباء کی 50 فیصد حاضری کے ساتھ کالج اور یونیورسٹیاں کھولنے کا امکان رکھتی ہے۔  لہذا حکومت چاہتی ہے کہ تمام طلباء پہلے ویکسین لگائیں اور پھر تعلیمی ادارے کھولنے کے بارے میں حتمی فیصلہ کریں۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: