உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jammu and Kashmir: ایل او سی پر مشکوک سرگرمیاں، اری میں فوج کا سرچ آپریشن جاری

    Jammu and Kashmir: ایل او سی پر مشکوک سرگرمیاں، اری میں فوج کا سرچ آپریشن جاری

    Jammu and Kashmir: ایل او سی پر مشکوک سرگرمیاں، اری میں فوج کا سرچ آپریشن جاری

    Jammu and Kashmir: افسران نے کہا کہ ستمبر اور اکتوبر مہینے ہمیشہ دراندازی کے نظرے سے اہم ہوتے ہیں۔ کیونکہ عام طور پر برف باری کے سبب دراندازی کے لئے دروں اور رج کا استعمال کیا جاتا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      سری نگر: ہندوستانی فوج (Indian Army) نے اتوار کو شمالی کشمیر کے اری سیکٹر (Uri Sector) میں کچھ مشتبہ سرگرمیوں کا پتہ لگانے کے بعد لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر تلاشی مہم شروع کی ہے۔ حالانکہ ابھی تک کوئی رابطہ قائم نہیں ہوا ہے، ساتھ ہی فوج بھی غیر یقینی صورتحال کا شکار ہے کہ درانداز اری میں گھس گئے ہیں یا پاکستان مقبوضہ کشمیر واپس لوٹ گئے ہیں۔ دفاعی تعلقات عامہ کے افسر کرنل ایمران مساوی نے کہا، ’گزشتہ رات اری سیکٹر میں کنٹرول لائن کے پاس مشتبہ سرگرمیاں دیکھی گئیں۔ علاقے میں تلاشی مہم جاری ہے‘۔

      اس سال شمالی کشمیر میں خصوصی طور پر اری، نوگام، تنگدھار، کیرن، ماچھل اور گریج سیکٹروں میں ایل او سی پر دراندازی کی کوششوں میں گراوٹ آئی ہے۔ فوج کے 19 انفینٹری اور 27 انفینٹری ڈویژن کے افسران نے بھی ایل او سی کے پار سے دراندازی کی کوششوں میں گراوٹ کا اعتراف کیا ہے۔ واضح رہے کہ 19 انفینٹری ڈویژن کے پاس اری سے گریز تک کنٹرول لائن پر نظر رکھنے کی ذمہ داری ہے۔

      شمالی کشمیر میں تعینات فوج کے ایک سینئر افسر نے کہا، ’احتیاط میں کوئی کمی نہیں کی جاسکتی۔ ہمیں نہیں معلوم کہ چیزیں کب بدل جائیں گی۔ ہمارے جوان مسلسل نگہبانی کر رہے ہیں۔ ایل او سی پر سخت نگرانی کے سبب ہی دراندازی کے معاملوں میں کمی آئی ہے‘۔

      افسران نے کہا کہ ستمبر اور اکتوبر مہینے میں ہمیشہ دراندازی کے نظریے سے اہم ہوتے ہیں، کیونکہ عام طور پر بھاری برف باری کے سبب دراندازی کے لئے دروں اور رج کا استعمال کیا جاتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ گزشتہ کچھ ماہ میں کشمیر کے مختلف علاقوں میں دراندازی کی کئی کوششیں ہوئی ہیں۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: