ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کشتواڑ میں مشتبہ ملٹینٹوں کے حملے میں ایک پولیس اہلکار شہید، دوسرا زخمی

شہید ایس پی او کی شناخت خورشید اقبال جبکہ زخمی ایس پی او کی شناخت وشال سنگھ کے بطور کی گئی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Apr 13, 2020 05:09 PM IST
  • Share this:
کشتواڑ میں مشتبہ ملٹینٹوں کے حملے میں ایک پولیس اہلکار شہید، دوسرا زخمی
فائل فوٹو

جموں۔ جموں وکشمیر کے ضلع کشتواڑ میں پیر کے روز مشتبہ ملٹینٹوں نے جموں وکشمیر پولیس کے دو اہلکاروں پر تیز دھار والے ہتھیاروں سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں ایک پولیس اہلکار شہید جبکہ دوسرا شدید زخمی ہو گیا۔ ذرائع کے مطابق کشتواڑ کے ایک دور افتادہ علاقے دچھن میں پیر کے روز مشتبہ ملٹینٹوں نے تیز دھار والے ہتھیاروں سے جموں وکشمیر پولیس میں ایس پی اوز کے بطور کام کرنے والے دو اہلکاروں پر حملہ کرکے ایک کو شہید جبکہ دوسرے کو شدید زخمی کردیا۔


شہید ایس پی او کی شناخت خورشید اقبال جبکہ زخمی ایس پی او کی شناخت وشال سنگھ کے بطور کی گئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ حملہ آوروں نے متذکرہ پولیس اہلکاروں سے اسلحہ بھی چھین لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ زخمی پولیس اہلکار کو علاج ومعالجے کے لئے نازک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ دریں اثنا ایس ایچ او کشتواڑ نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ دچھن ضلع ہیڈ کوارٹر سے کافی دور ہے اور ایک پولیس پارٹی کو وہاں روانہ کیا گیا ہے۔




جموں وکشمیر پولیس کے سربراہ دلباغ سنگھ نے رواں برس 26 فروری کو کہا تھا کہ خطہ چناب کے ضلع کشتواڑ میں ملی ٹینسی کو بہت جلد ختم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا تھا کہ ضلع میں صرف ایک یا دو ملٹینٹ سرگرم ہیں جو فورسز کے سامنے خود سپردگی اختیار کرسکتے ہیں۔ قبل ازیں 24 جون 2019 کو جموں زون پولیس کے اس وقت کے انسپکٹر جنرل منیش کمار سنہا نے کہا تھا کہ ضلع کشتواڑ میں دس مقامی ملٹینٹ سرگرم ہیں جن میں سے آٹھ حزب المجاہدین جبکہ دیگر دو لشکر طیبہ کے ساتھ وابستہ ہیں۔
First published: Apr 13, 2020 05:08 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading