ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : سرینگر میں ملی ٹینٹوں کا حملہ ، ایک پولیس اہلکار اور ایک شہری زخمی

Jammu and Kashmir News : حملہ میں عبد الوحید نام کے ایک پولیس کانسٹیبل اور اشتیاق احمد نام کے ایک شہری زخمی ہوگئے ۔ زخمیوں کو فوری طور پر اسپتال لے جایا گیا ، جہاں اُن کی حالت مستحکم بتائی جارہی ہے۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : سرینگر میں ملی ٹینٹوں کا حملہ ، ایک پولیس اہلکار اور ایک شہری زخمی
جموں و کشمیر : سرینگر میں ملی ٹینٹوں کا حملہ ، ایک پولیس اہلکار اور ایک شہری زخمی

سری نگر : جموں و کشمیر میں سرینگر کے خانیار علاقہ میں ملی ٹنٹوں نے فائرنگ کی ۔ پولیس کے مطابق فائرنگ پولیس پارٹی پہ کی گئی ، جس میں ایک پولیس اہلکار اور ایک شہری زخمی ہوگئے ، لیکن جائے واردات پر ایک آلٹو گاڑی پر زیادہ تر گولیوں کے نشان دیکھنے کو ملے ، جس میں خون بھی دیکھا گیا ۔ اس حملہ میں عبد الوحید نام کے ایک پولیس کانسٹیبل اور اشتیاق احمد نام کے ایک شہری زخمی ہوگئے ۔ زخمیوں کو فوری طور پر اسپتال لے جایا گیا ، جہاں اُن کی حالت مستحکم بتائی جارہی ہے۔


فائرنگ کے فورا بعد پولیس نے علاقہ کی گھیرا بندی کردی اور حملہ آوروں کی تلاش شروع کردی ، لیکن آخری خبریں ملنے تک ان کے ہاتھ کچھ نہیں لگا تھا ۔ یوم آزادی  اور دفعہ 370  کالعدم کئے جانے کی برسی کے مدنظر حفاظتی انتظامات سخت کئے گئے تھے ، کیونکہ ایسے مواقع پر ملی ٹینٹ اپنی موجودگی درج کرنے کی کوشش کرتے رہے ہیں ۔


جائے واردات پر ایک آلٹو گاڑی پر زیادہ تر گولیوں کے نشان دیکھنے کو ملے ، جس میں خون بھی دیکھا گیا ۔
جائے واردات پر ایک آلٹو گاڑی پر زیادہ تر گولیوں کے نشان دیکھنے کو ملے ، جس میں خون بھی دیکھا گیا ۔


پولیس پریس نوٹ میں کہا گیا ہے کہ معاملہ کی مزید تحقیقات کی جارہی ہے۔ اُدھر پولیس کس کہنا ہے کہ اس سال ابھی تک 90 ملی ٹینٹوں کو مختلف کاروائیوں میں مار گرایا گیا ہے اور 73 نوجوانوں نے ملی ٹینٹ صفوں میں شمولیت اختیار کی ہے ۔ پولیس کے اعلٰی عہدیداروں کے مطابق مارے گئے ملی ٹینٹوں میں سے 51 کا تعلق لشکر طیبہ سے تھا ، 20 کا حزب المجاہدین  اور باقی البدر، اور دوسری ملی ٹنٹ تنظیموں سے تعلق رکھتے تھے ۔

پولیس کے مطابق پچھلے دو سال میں نقص امن کے معاملات میں 70 فیصد کمی آئی ہے ۔ ان کے مطابق پچھلے دو سالوں میں سیکورٹی فورسز کے 76 اہلکار شہید ہوگئے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Aug 03, 2021 09:50 PM IST