ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : سیکورٹی فورسیز اور والدین نے کی اپیل ، پھر بھی نابالغ دہشت گرد نے نہیں کی خودسپرگی ، انکاونٹر میں ڈھیر

Jammu Kashmir Minor terrorist: اتوار کو جب شوپیاں کے ہادی پورہ گاوں میں سیکورٹی فورسیز اور دہشت گردوں کے درمیان انکاونٹر ہوا تو نابالغ بھی اس گروپ میں شامل تھا ۔ انکاونٹر کے دوران نابالغ دہشت گرد کو سمجھانے اور خودسپردگی کروانے کیلئے سیکورٹی فورسیز کے ذریعہ کافی کوششیں کی گئیں ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : سیکورٹی فورسیز اور والدین نے کی اپیل ، پھر بھی نابالغ دہشت گرد نے نہیں کی خودسپرگی ، انکاونٹر میں ڈھیر
جموں و کشمیر : سیکورٹی فورسیز اور والدین نے کی اپیل ، پھر بھی نابالغ دہشت گرد نے نہیں کی خودسپرگی ، انکاونٹر میں ڈھیر ۔ فائل فوٹو ۔

سری نگر : جموں و کشمیر میں اتوار کو تین الگ الگ مقامات پر سیکورٹی فورسیز نے پانچ دہشت گردوں کو انکاونٹر میں مارگرایا ۔ سیکورٹی فورسیز کے ذریعہ چلائے گئے اس آپریشن میں مارے گئے دہشست گردوں میں ایک 14 سال کا نابالغ بھی شامل ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ نابالغ تقریبا ایک ہفتہ سے گھر سے لاپتہ تھا اور اس دوران وہ کسی دہشت گرد تنظیم میں شامل ہوگیا تھا ۔


اتوار کو جب شوپیاں کے ہادی پورہ گاوں میں سیکورٹی فورسیز اور دہشت گردوں کے درمیان انکاونٹر ہوا ، تو نابالغ بھی اس گروپ میں شامل تھا ۔ انکاونٹر کے دوران نابالغ دہشت گرد کو سمجھانے اور خودسپردگی کروانے کیلئے سیکورٹی فورسیز کے ذریعہ کافی کوششیں کی گئیں ۔ نابالغ خودسپردگی کردے ، اس کیلئے جائے واقعہ پر اس کے ماں باپ کو بھی بلایا گیا ۔ حالانکہ اس نے کسی کی بات نہیں مانی اور آخر کار مارا گیا ۔


آپریشن کے دوران نابالغ دہشت گرد کے مارے جانے پر جموں و کشمیر پولیس کے آئی جی وجے کمار نے کہا کہ ہم نے اس کو خودسپردگی کرنے کا موقع دیا تھا ، لیکن اس کے دہشت گرد آقاوں نے اس کو ایسا کرنے سے روک دیا ۔ آئی جی وجے کمار نے بتایا کہ ہم اس کے والدین کو انکاونٹر کی جگہ پر لائے تھے اور اس سے خودسپردگی کی اپیل کی تھی ۔ وہ خودسپردگی کرنا بھی چاہتا تھا ، لیکن اس کے آقاوں نے اس کو ایسا کرنے سے روک دیا ۔


آخری مرتبہ ماں باپ سے کہی یہ بات

آئی جی وجے کمار کے مطابق ہفتہ رات کو انہیں ہادی پورہ گاوں میں دہشت گردوں کے چھپے ہونے کی اطلاع ملی تھی ، جس کے بعد سی آر پی ایف اور مقامی پولیس نے علاقہ کا محاصرہ کیا اور دہشت گردوں کو مار گرایا ۔ انہوں نے کہا کہ سیکورٹی فورسیز کی جانب سے گھیر لئے جانے کے بعد نابالغ نے اپنے ماں باپ کو فون کیا تھا ۔

اس نے بتایا کہ ایک دہشت گرد مارا گیا ہے اور میری جان بچا لیجئے ۔ ہم نے اس کی جان بچانے کی کوشش بھی کی ، لیکن دوسرے دہشست گرد آصف نے اس کو باہر نکلنے اور خودسپردگی کرنے سے روک دیا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 11, 2021 06:35 PM IST