ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

بندوق لائسنسز گھوٹالہ : جموں و کشمیر میں سی بی آئی کے 22 مقامات پر چھاپے، آئی اے ایس افسر کے گھر پر دی دبش

Gun License Scam: سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سی بی آئی کے اہلکاروں نے ہفتے کو جموں و کشمیر میں 22 مقامات، جن میں کشمیر میں 12 اور جموں 10 مقامات شامل ہیں، پر چھاپے مارے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 24, 2021 04:23 PM IST
  • Share this:
بندوق لائسنسز گھوٹالہ : جموں و کشمیر میں سی بی آئی کے 22 مقامات پر چھاپے، آئی اے ایس افسر کے گھر پر دی دبش
بندوق لائسنسز گھوٹالہ : جموں و کشمیر میں سی بی آئی کے 22 مقامات پر چھاپے، آئی اے ایس افسر کے گھر پر دی دبش

سری نگر : سینٹرل بیورو آف انوسٹی گیشنز (سی بی آئی) نے جعلی بندوق لائسنسسز کیس کے سلسلے میں ہفتے کو جموں و کشمیر میں 22 مقامات پر چھاپے مارے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سی بی آئی کے اہلکاروں نے ہفتے کو جموں و کشمیر میں 22 مقامات، جن میں کشمیر میں 12 اور جموں 10 مقامات شامل ہیں، پر چھاپے مارے۔ انہوں نے بتایا کہ یہ چھاپے جعلی بندوق لائسنسز کیس کے سلسلے میں مارے گئے جس کو سال 2018 میں سی بی آئی کے سپرد کیا گیا تھا۔


بتا دیں کہ اینٹی ٹیرر سکارڈ (اے ٹی ایس) راجستھان پہلے اس کیس کی تحقیقات کر رہا تھا تاہم بڑے پیمانے پرغیر مقامی لوگوں کو جعلی بندوق لائسنسز کی فراہمی کا معاملہ منظر عام پر آنے کے بعد اس کیس کو سی بی آئی کے سپرد کیا گیا تھا۔


اے ٹی ایس نے انکشاف کیا تھا کہ جموں و کشمیر کے ضلع اودھم پور، ڈوڈہ، رام بن اور کپوارہ میں جعلی دستاویزات پر چالیس ہزار بندوق لائسنسز فراہم کی گئی ہیں۔ ابتدائی تحقیقات کے مطابق ایک آئی اے ایس افسر جو اُس وقت ایک ضلع کا مجسٹریٹ تھا، نے بڑی تعداد میں غیر مقامی لوگوں کو جعلی بندوق لائسنسز فراہم کی ہیں۔


ڈوگرہ فرنٹ کا جموں میں پاکستان کے خلاف احتجاج

ادھر شیو سینا ڈوگرہ فرنٹ جموں یونٹ نے ہفتے کے روز یہاں پاکستان کے خلاف احتجاج درج کرکے پاکستان کے ذریعہ بھیجے جانے والے ڈرونز پر پارلیمنٹ میں بحث کرنے کا مطالبہ کیا۔ احتجاجیوں نے ہاتھوں میں ڈرونز کی تصویریں اٹھا رکھی تھی اور وہ ’پارلیمنٹ میں بحث کرو‘ جیسے نعرے لگا رہے تھے۔ اس موقع پر فرنٹ کے صدر اشوک گپتا نے میڈیا کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی طرف سے بھیجے جانے والے ڈرونز پر پارلیمنٹ میں بحث ہونی چاہئے ۔

انہوں نے کہا کہ جو حال ہی میں ڈرون مار گرایا گیا اگر اس کے ساتھ نصب پانچ کلو وزنی آر ڈی ایکس پھٹ جاتا تو تباہی مچ جاتی۔ موصوف صدر نے کہا کہ پاکستان لگاتار ڈرونز کے ذریعے اس طرف ہتھیار اور ڈرگس بھیج رہا ہے لہذا اس پر پارلیمنٹ میں بحث ہونی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں مل جل کر پاکستان کا مقابلہ کرنا چاہئے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 24, 2021 04:23 PM IST