ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

پاکستان مقبوضہ کشمیر میں ترنگا لہرانے کا وقت آگیا ، عبداللہ اور مفتی خاندان دفعہ 370 بھول جائے : ترون چُگ

ترون چُگ نے کہا کہ عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی کو توڑنے کی سیاست کرنے کی بجائے ملک سے جوڑنے کی بات کرنے چاہئے ۔ بی ڈی سی انتخاب کا ذکر کرتے ہوئے ترون چُگ نے کہا کہ رائے دہندگان نے گُپکار ایلائنس کے خلاف ووٹ دیا ہے۔

  • Share this:
پاکستان مقبوضہ کشمیر میں ترنگا لہرانے کا وقت آگیا ، عبداللہ اور مفتی خاندان دفعہ 370 بھول جائے : ترون چُگ
پاکستان مقبوضہ کشمیر پر ترنگا لہرانے کا وقت آگیا ، عبداللہ اور مفتی خاندان دفعہ 370 بھول جائے : ترون چُگ

بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری ترون چُگ نے کہا کہ اب پاکستان مقبوضہ کشمیر میں ترنگا لہرانے کا وقت آگیا ہے ۔ سرینگر میں آج پارٹی کے پنچایت ممبران کی عزت افزائی کے بعد میڈیا سے بات چیت کے دوران انہوں نے پاک مقبوضہ کشمیر کو واپس ہندوستان میں جوڑنے کی بات کہی اور عبداللہ اور مفتی خاندان کو مشورہ دیا کہ وہ دفعہ 370 کو واپس لانے کی باتیں کرنا چھوڈ دیں ۔


ترون چُگ نے کہا کہ دفعہ 370 مرچُکا ہے اور اب اسے زندہ کرنے کا خواب چھوڑ  دیں ۔ ترون چُگ نے کہا کہ عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی کو توڑنے کی سیاست کرنے کی بجائے ملک سے جوڑنے کی بات کرنے چاہئے ۔ بی ڈی سی انتخاب کا ذکر کرتے ہوئے ترون چُگ نے کہا کہ رائے دہندگان نے گُپکار ایلائنس کے خلاف ووٹ دیا ہے۔


عمر عبداللہ کی طرف سے اُن کی پارٹی کے بی ڈی سی ممبران کو زور زبردستی دوسری پارٹی میں شامل کرنے کے الزامات کے جواب میں بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری نے کہا کہ یہ لیڈر اپنی پارٹی کے امیدواروں پر بھی بوجھ بنے تھے اور انھوں نے ان کے نام پر ووٹ نہیں مانگا ۔ کیوں کہ بقول تروں چُگ لوگ ان کے نام پر انہیں ووٹ نہیں دیتے ۔


بی جے پی جنرل سکریٹری  نے کہا کہ عمر عبداللہ نے تو الیکشن مہم میں حصہ تک نہیں لیا ۔ کیونکہ کشمیر کے لوگ ان کی سیاست سے اُکتا گئے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 27, 2020 09:33 PM IST