ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں شہر اور اس کے مضافات میں بجلی اور پانی کی عدم دستیابی سے بحرانی صورتحال

جموں میں گرمی کی شدت اور درجہ حرارت میں اضافہ کے ساتھ ساتھ لاک ڈاون کے درمیان جموں شہر میں بجلی کی عدم دستیابی اور آنکھ مچولی نے لوگوں کیلئے طرح طرح کی پریشانیاں پیدا کر دی ہیں ۔

  • Share this:
جموں شہر اور اس کے مضافات میں بجلی اور پانی کی عدم دستیابی سے بحرانی صورتحال
جموں شہر اور اس کے مضافات میں بجلی اور پانی کی عدم دستیابی سے بحرانی صورتحال

جموں میں گرمی کی شدت اور درجہ حرارت میں اضافہ کے ساتھ ساتھ لاک ڈاون کے درمیان جموں شہر میں بجلی کی عدم دستیابی اور آنکھ مچولی نے لوگوں کیلئے طرح طرح کی پریشانیاں پیدا کر دی ہیں ۔ گرمی سے راحت پانے کیلئے لوگ پنکھوں ، کولرس اور دیگر ضروری آلات کا استمعال کررہے ہیں ۔ لیکن بجلی کی عدم دستیابی کی صورت میں یہ سب راحتی آلات ٹھپ پڑ گئے ہیں ۔ گھروں کے اندر لوگوں کا ٹھہرنا ممکن ہی نہیں ہورہا ہے ۔ حالانکہ لاک ڈاون کی وجہ سے لوگ باہر نکل نہیں سکتے ہیں ۔ تاہم اندر گرمی میں رہ نہیں سکتے ہیں ، جس کی وجہ سے لوگ شدید مشکلات کے شکار ہیں ۔


جموں کے مضافاتی علاقوں میں لوگوں نے بجلی کی آنکھ مچولی اور شیڈول پر نہ آنے کا الزام عائد کرتے ہوئے بتایا کہ کسی بھی جگہ بجلی دستیاب نہیں ہے ، جس کی وجہ سے وہ شدید تکلیف میں ہیں اور درجہ حرارت میں پچھلے ایک ماہ کے دوران زبردست اضافہ نے بجلی کی ضرورت زیادہ محسوس ہورہی تھی ۔ لیکن ایسے مشکل وقت میں بھی انہیں بجلی نصیب نہیں ہو رہی ہے ، جس کی وجہ سے گرمی سے ان کا برا حال ہے ۔ شام وصبح کے اوقات کے ساتھ ساتھ دن میں بھی بجلی اپنے من مطابق ہی آتی اور چلی جاتی ہے ، جس کے نتیجے میں لوگوں کیلئے ہر گزرنے والا دن مشکل ہورہا تھا ۔


لوگوں کا الزام ہے کہ اس مرتبہ جموں شہر میں گرمیوں کے دوران بجلی کی نایابی سے لوگ انتہائی پریشان رہے ۔ ایسے میں محکمہ کا کہنا تھا کہ درجہ حرارت میں اضافہ کی وجہ سے پانی کے ذخائر میں سطح آب انتہائی حد تک کم ہوچکا ہے ، جس کی وجہ سے بجلی کی پیداواری صلاحیت بھی کم ہورہی ہے ۔ لوگوں نے نیوز 18 کے ساتھ بات کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ محکمہ لوگوں کو بجلی فراہم کرنے میں ناکام رہا ہے ، جس کی وجہ سے صورتحال ہر گزرنے والے دن کے ساتھ ابتر ہورہی ہے اور ایسے میں جموں شہر میں بجلی کی کمی سے بحرانی صورتحال پیدا ہوچکی ہے ۔


جموں کے مضافات میں رہنے والے سنجے کمار کا کہنا تھا کہ ان کے گھر میں بیمار والد ہیں ، لیکن اے سی کی سہولت ہونے کے باوجود بھی وہ مریض کو یہ سہولیت فراہم نہیں کرسکتے ۔ کیونکہ بجلی غائب ہے ۔ ادھر بجلی کے اعلیٰ افسران نے نیوز 18 کو بتایا کہ صورتحال پر بہت جلد قابو پایا جائے گا اور پن بجلی پروجیکٹوں کی تیاری سے بجلی کی پیداوار بڑھ سکتی ہے اور لوگوں کو راحت ملے گی ۔

ادھر بجلی کے ساتھ ساتھ اب جموں اور اس کے مضافاتی علاقوں میں لوگو ں کو صاف پانی بھی نہیں مل رہا ہے اور پینے کے صاف پانی میں بھی مسلسل خلل پڑا ہوا ہے اور لوگ بے حال ہیں ۔ کئی ایک علاقوں میں لوگوں نے الزام عائد کیا کہ وہ پانی کی بوند بوند کیلئے ترس رہے ہیں ، جس کے باعث ہاہا کار مچی ہوئی ہے ۔ اس سلسلہ میں نیوز 18 نے جب پی ایچ ای کے چیف انجینئر مہیش بٹ سے بات کی تو ان کا کہنا تھا کہ پائپوں کی مرمت ہورہی ہے ۔ لیکیج ٹھیک کئے جارہے ہیں ۔ وہیں نئے پروجیکٹ بھی تیار ہورہے ہیں اوربہت جلد لوگوں کو راحت مل سکتی ہے ۔

 

تاہم صورتحال کسی بھی طور ٹھیک ہوتی نظر نہیں آرہی ہے اور لوگ تکلیف میں مبتلا ہیں ۔ پورے جموں شہر میں پانی کی عدم دستیابی سے بحرانی صورتحال پیدا ہوچکی ہے ۔ وہیں گرمی کے بیچ بجلی کی عدم دستیابی ایک سنگین مسئلہ بن گیا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Aug 31, 2020 11:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading