ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : عمر عبد اللہ پائے گئے کورونا پازیٹیو ، دو دنوں پہلے ہی لگوائی تھی ویکسین

دلچسپ بات یہ ہے کہ عمر عبداللہ نے محض دو روز قبل یعنی 7 اپریل کو کورونا وائرس سے بچاو کی ویکسین لگوائی تھی ۔ بتادیں کہ عمر عبداللہ سے قبل 30 مارچ کو ان کے والد ڈاکٹر فاروق عبداللہ میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی

  • Share this:
جموں و کشمیر : عمر عبد اللہ پائے گئے کورونا پازیٹیو ، دو دنوں پہلے ہی لگوائی تھی ویکسین
جموں و کشمیر : عمر عبد اللہ پائے گئے کورونا پازیٹیو ، دو دنوں پہلے ہی لگوائی تھی ویکسین

سری نگر : نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ کے بعد ان کے فرزند عمر عبداللہ میں بھی کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے ۔ عمر عبداللہ نے اس کی تصدیق اپنے ایک ٹویٹ میں کی ہے ۔ انہوں نے لکھا: میں ایک سال تک اس وائرس سے خود کو بچانے میں کامیاب رہا ، لیکن بالآخر اس نے مجھے متاثر کر ہی دیا۔ آج دوپہر کو میری کورونا وائرس رپورٹ مثبت آئی ہے۔ مجھ میں اس وبا کی کوئی ظاہری علامتیں نہیں ہیں۔


انہوں نے مزید لکھا کہ ڈاکٹروں کے مشورہ پر میں نے خود کو کوارنٹائن کر لیا ہے اور میں آکسیجن سیچوریشن کو مانیٹر کر رہا ہوں ۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ عمر عبداللہ نے محض دو روز قبل یعنی 7 اپریل کو کورونا وائرس سے بچاو کی ویکسین لگوائی تھی ۔



بتادیں کہ عمر عبداللہ سے قبل 30 مارچ کو ان کے والد ڈاکٹر فاروق عبداللہ میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی ۔ وہ پانچ دنوں تک سری نگر کے شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (سکمز) میں ڈاکٹروں کی نگرانی میں بھی رہے ۔

خیال رہے کہ سابق وزیر اعلی فاروق عبد اللہ نے دو مارچ کو کورونا ویکسین کی پہلی ڈوز سری نگر کے شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز میں لی تھی ۔ اس وقت عمر عبد اللہ نے بتایا تھا کہ ان کے والد اور والدہ نے کورونا ویکسین کی پہلی ڈوز لی ہے ۔ ساتھ ہی عمر عبداللہ نے دوسروں سے بھی ویکسین لگوانے کی اپیل کی تھی ۔

سابق وزیر اعلی عمر عبداللہ نے ٹویٹ کرکے کہا تھا کہ اسکمز سری نگر کے ڈاکٹروں ، نرسوں اور اہلکاروں کا شکریہ ۔ آج میرے 85 سالہ والد اور میری ماں نے کووڈ ویکسین کی پہلی ڈوز لی ۔ میرے والد کو کڈنی ٹرانسپلانٹ کیلئے امیونو سپریسنٹ سمیت صحت سے وابستہ کئی پریشانیاں لاحق ہیں ۔ اگر وہ ویکسین لگوا سکتے ہیں تو آپ بھی لگوا سکتے ہیں ۔

نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 09, 2021 05:03 PM IST