ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : پارلیمانی کمیٹی کی 31 رکنی ٹیم کا دورہ گلمرگ ، سیاحتی صنعت کا لیا جائزہ

دورہ کے دوران کمیٹی کے ممبران نے گلمرگ گنڈولہ کی بھی سواری کی اور گلمرگ کی حسین وادیوں کاخوب لطف اٹھایا ۔ ان کے ہمراہ جموں و کشمیریوٹی انتظامیہ کےاعلیٰ افسران بھی تھے ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : پارلیمانی کمیٹی کی 31 رکنی ٹیم کا دورہ گلمرگ ، سیاحتی صنعت کا لیا جائزہ
جموں و کشمیر : پارلیمانی کمیٹی کی 31 رکنی ٹیم کا دورہ گلمرگ ، سیاحتی صنعت کا لیا جائزہ

وادی کشمیر کے دورے پرآئے سیاحت، ثقافت اور رسل ورسائل وزارتوں کیلئے پارلیمانی کمیٹی کی اکتیس رکنی ٹیم نے سیاحتی مقام گلمرگ کا دورہ کیا ۔ کمیٹی کے ممبران نے سکی سلوپ پر مختلف اسکئیرس سے بات چیت کی ۔ ساتھ ہی انہوں نے سنوٹائیر اور سلیج والوں کے ساتھ بھی تبادلہ خیال کیا ۔ لوگوں نے کمیٹی کے سامنے فورجی انٹرنیٹ بحال کرنے کی بھی مانگ کی ۔ گلمرگ میں سیاحت سے وابستہ لوگوں نے بتایاکہ یہاں ٹوجی انٹرنیٹ کی وجہ سے سیاحوں کو کافی مشکلات پیش آرہی ہیں ۔


دورہ کے دوران کمیٹی کے ممبران نے گلمرگ گنڈولہ کی بھی سواری کی اور گلمرگ کی حسین وادیوں کاخوب لطف اٹھایا ۔ ان کے ہمراہ جموں و کشمیریوٹی انتظامیہ کےاعلیٰ افسران بھی تھے ۔ کمیٹی کے ممبران نے گلمرگ ٹورسٹ گائیڈس کے ساتھ بھی مختلف مطالبات کو لیکر تبادلہ خیال کیا ۔ ممبران نے انہیں یقین دلایا کہ ان کے مطالبات حل کئے جائیں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ وہ واپس جاکر پارلیمنٹ میں اپنی رپورٹ پیش کریں گے اور یہاں کے لوگوں کو درپیش مسائل حکومت کے سامنے رکھیں گے۔


کمیٹی نے بعد میں ایک مقامی ہوٹل میں انتظامی افسران، سیاحت وثقافت سے وابستہ افراد اور دیگر وفود کے ساتھ اقتصادی اورمعاشی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ۔ گلمرگ میں کمیٹی کے رکن منوج تیواری نے بتایا کہ آج تک سوئٹزرلینڈ کی تصاویر دیکھی ہیں ، لیکن ہمارے ملک کے لوگوں کویہ پتہ نہیں کہ ہمارے ملک میں سوئٹزرلینڈ سے بھی زیادہ خوبصورت جگہ گلمرگ ہے۔ انہوں نے ہاتھ جوڑ کر ملک کے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ کشمیر آئیں اور خاص کر گلمرگ ۔ یہاں کی خوبصورتی کا لطف اٹھائیں ۔


اکتیس رکنی کمیٹی کے چئیرمین نے بھی بتایا کہ وہ واپس جاکر پارلیمنٹ میں یہاں کے تمام درپیش مسائل اوریہاں کی سیاحت کے فروغ کیلئے اپنی رپورٹ پیش کریں گے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ گلمرگ ایک خوبصورت جگہ ہے ۔ ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ دفعہ تین سو ستہر اور پینتیس اے کی منسوخی کے بعد یہاں لوگ کافی خوش ہیں ۔ وہ جموں وکشمیرمیں ترقی چاہتے ہیں ۔ ان کے مطالبات پروہ کام کریں گے ۔ انہوں نے لوگوں کو یقین دلایا کہ آنے والے وقت میں کشمیر کی ترقی ایک نئے نقشے پر ہوگی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jan 23, 2021 08:58 AM IST