ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : امرناتھ کی مقدس گپھا میں پرتھم پوجا کا اہتمام ، علامتی یاترا کا آغاز

Jammu and Kashmir News : مذہبی اعتبار سے اہم اور ہم آہنگی کی مثال شری امرناتھ جی یاترا کے سلسلے میں جمعرات کو بابا برفانی کی مقدس گپھا میں پرتھم پوجا کا اہتمام ہوا ، جس کے بعد باضابطہ طور پر اس سال کی علامتی امرناتھ یاترا کا آغاز ہوگیا ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : امرناتھ کی مقدس گپھا میں پرتھم پوجا کا اہتمام ، علامتی یاترا کا آغاز
جموں و کشمیر : امرناتھ کی مقدس گپھا میں پرتھم پوجا کا اہتمام ، علامتی یاترا کا آغاز

جموں و کشمیر : مذہبی اعتبار سے اہم اور ہم آہنگی کی مثال شری امرناتھ جی یاترا کے سلسلے میں جمعرات کو بابا برفانی کی مقدس گپھا میں پرتھم پوجا کا اہتمام ہوا ، جس کے بعد باضابطہ طور پر اس سال کی علامتی امرناتھ یاترا کا آغاز ہوگیا ۔ سخت ترین سیکورٹی کے بیچ جنوبی کشمیر کے ہمالیائی پربتوں میں قائم بابا امرناتھ کی مقدس گپھا میں بم بم بھولے کے نعرے اس وقت گونج اٹھے ، جب وہاں پر آرتی کے ساتھ ساتھ مذہبی اعتبار سے اہم پرتھم پوجا کا اہتمام ہوا ۔ پوجا کے ساتھ ہی ہر سال باضابطہ طور پر شری امرناتھ یاترا کا آغاز ہوتا ہے ، لیکن اس سال کووڈ کی وبائی صورتحال کی وجہ سے سرکار نے گزشتہ سال کی طرح پھر ایک بار ملتوی کر دیا ۔ تاہم یاترا کی خصوصیت اور مذہبی نوعیت کو مدنظر رکھتے ہوئے سرکار نے امرناتھ یاترا کو علامتی طور پر منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ۔


جمعرات کو پرتھم پوجا میں سی ای او شری امرناتھ شرائن بورڈ نتیشور کمار، ڈی سی گاندربل کرتیکا جوتسنا ، سی ای او پہلگام ڈیولپمنٹ اتھارٹی مشتاق سمنانی کے علاؤہ دیگر افسران و مذہبی رہنماؤں نے بھی شرکت کی۔ اس موقع پر مقدس برفانی شیو لنگم اور ماتا پاروتی کے پہلے درشن بھی ہوئے ۔ پرتھم پوجا کے دوران عالمی امن اور بھائی چارے و قیام امن کی خاص دعائیں مانگی گئیں ، جبکہ کووڈ کی وبائی صورتحال سے نجات کیلئے بھی بھگوان شنکر کی گپھا میں خاص پراتھنا کی گئی ۔


شیو لنگم کے پورے شباب میں ہونے کی وجہ سے اس برس برفانی لنگم کی بناوٹ بھی قدرے بہتر ہے ، جس سے یاتریوں کو اچھے درشن ہونے کی توقع کی جا رہی ہے۔ لیکن یاترا رجسٹریشن پر سرکار کی جانب سے پہلے ہی روک لگانے کے بعد اب کچھ متعلقہ لوگ اور مذہبی رہنما ہی شیو لنگم کے درشن کر سکتے ہیں ، جبکہ روایات کو روا رکھتے ہوئے مقدس گپھا میں علامتی طور پر رکشا بندھن کے روز آخری درشن کے ساتھ ہی اس سال کی امرناتھ یاترا اختتام پذیر ہوگی ۔


واضح رہے کہ 2019 سے مختلف وجوہات کی بنا پر تاحال شری امرناتھ جی یاترا متاثر رہی ہے ۔ اگست 2019 میں جموں و کشمیر کی خصوصی پوزیشن  اور دفعہ 370 و 35 اے کے خاتمے سے قبل ہی سیکورٹی وجوہات کی بنا پر امرناتھ یاترا کو بیچ میں رد کرنا پڑا تھا ، جس کے بعد کشمیر میں موجود یاتریوں اور سیاحوں کو فی الفور کشمیر چھوڑنے کیلئے سرکاری سطح پر ایڈوائزری جاری کر دی گئی ۔ اس کے بعد 2020 میں کووڈ کی پہلی لہر کے دوران انسانی جانوں کے تحفظ کو مدنظر رکھتے ہوئے اس سال بھی امرناتھ یاترا کو ملتوی کر دیا گیا۔

سال 2021 میں جہاں یاترا کے انعقاد کو لے کر مختلف عوامی اور سیاسی حلقوں سے ملاجلا ردعمل سامنے آیا تھا ، وہیں مقامی لوگوں کے یاترا کے انعقاد کرنے کی وکالت کے باوجود بھی سرکار نے امرناتھ یاترا کو پھر ایک بار رد کر دیا ۔ جبکہ روایات اور یاترا کی اہمیت کے تناظر میں سرکار نے علامتی طور پر اس سال شری امرناتھ جی یاترا کو انعقاد کرنے کا فیصلہ کیا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 24, 2021 10:42 PM IST