ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر پولیس کی دویندر سنگھ پر صفائی، وزارت داخلہ کی طرف سے نہیں ملا کوئی میڈل

جموں وکشمیر پولیس نےکلگام میں حزب المجاہدین (Hizbul Mujahideen) کےدہشت گردوں کے ساتھ گرفتار کئےگئے ڈی ایس پی دویندرسنگھ (DSP Davinder Singh) کےمعاملے میں صفائی دیتے ہوئےکہا ہےکہ وزارت داخلہ کی طرف سے اسےکوئی بھی بہادری کا میڈل نہیں ملا تھا۔

  • Share this:
جموں وکشمیر پولیس کی دویندر سنگھ پر صفائی، وزارت داخلہ کی طرف سے نہیں ملا کوئی میڈل
دویندر سنگھ کے معاملے کی جانچ قومی تفتیشی ایجنسی کو سونپی گئی ہے۔

سری نگر: جموں وکشمیر پولیس نےکلگام میں حزب المجاہدین کے دہشت گردوں کے ساتھ گرفتارکئےگئے ڈی ایس پی دویندر سنگھ (DSP Davinder Singh) کے معاملے میں چل رہی الگ الگ خبروں پر صفائی دی ہے۔ جموں وکشمیر پولیس نےکہا ہےکہ وزارت داخلہ کی طرف سے دویندر سنگھ کو کوئی بھی بہادری کا میڈل نہیں ملا تھا۔ دویندر سنگھ کی گرفتاری کے بعد اس طرح کی خبریں چل رہی ہیں، جس میں کہا جارہا ہےکہ اسے صدر جمہوریہ بہادری میڈل سے سرفراز کیا جاچکا ہے۔


پولیس کے مطابق، اسے سروس کے دوران صرف بہادری میڈل سے سرفرازکیا گیا، جو یوم جمہوریہ پر 2018 میں جموں وکشمیر ریاست کے ذریعہ دیا گیا۔ یہ میڈل اسے 25/26 اگست 2017 کو پلوامہ کی پولیس لائن میں ہوئے فدائین حملے کے وقت چلائے گئے آپریشن میں شامل ہونےکےلئے دیا گیا۔ 2017 میں دویندر سنگھ پلوامہ حملے میں ڈی ایس پی کے طور پر تعینات تھا۔ جموں وکشمیر پولیس نے کہا، 'ہم میڈیا سے اپیل کرتے ہیں کہ دویندر سنگھ کے بارے میں افواہوں کی بنیاد پر خبرنہ چلائیں'۔


بیان میں کہا گیا ہے کہ جموں وکشمیر پولیس اپنے پروفیشنل ازم کے لئے جانی جاتی ہے۔ وہ اپنے کیڈر میں سے کسی کو بھی غیر قانونی کام یا کام میں شامل پائے جانے پر نہیں بخشے گی۔ پہلے بھی جموں وکشمیر پولیس ایسا کرچکی ہے۔ اس معاملے میں بھی قوانین اور ضوابط کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔ یہ سبھی ایک عام طریقے سے ہی نافذ ہوتے ہیں۔


وزارت داخلہ نے این آئی اے کو سونپی معاملے کی جانچ

مرکزی وزارت داخلہ نے ڈی ایس پی دویندر سنگھ کے معاملے کی جانچ قومی تفتیشی ایجنسی (این آئی اے) کو سونپ دی ہے۔ حالانکہ این آئی اے کا کہنا ہے کہ اسے اب تک جانچ سونپے جانے کو لے کر وزارت داخلہ کی طرف سے جاری نوٹیفکیشن نہیں ملا ہے۔ ایجنسی اس نوٹیفکیشن کا انتظار کر رہی ہے۔ حالانکہ، این آئی اے کا کہنا ہے کہ وزارت داخلہ کسی بھی وقت نوٹیفکیشن جاری کرسکتا ہے۔
First published: Jan 15, 2020 12:09 AM IST