உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News : جموں و کشمیر میں بھاری  برف باری کے دوران لوگوں کی مدد کیلئے سامنے آئی پولیس

    J&K News : جموں و کشمیر میں بھاری  برف باری کے دوران لوگوں کی مدد کیلئے سامنے آئی پولیس

    J&K News : جموں و کشمیر میں بھاری  برف باری کے دوران لوگوں کی مدد کیلئے سامنے آئی پولیس

    Jammu and Kashmir News : وادی کشمیر میں بھاری برف باری کے بعد جہاں عام زندگی کافی متاثر ہوئی اور لوگوں کا کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ، وہیں اس دوران جموں و کشمیر پولیس نے جنوبی کشمیر کے مختلف علاقوں میں عام لوگوں کو کافی راحت پہنچائی ہے ۔

    • Share this:
    پلوامہ : وادی کشمیر میں بھاری برف باری کے بعد جہاں عام زندگی کافی متاثر ہوئی اور لوگوں کا کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ، وہیں اس دوران جموں و کشمیر پولیس نے جنوبی کشمیر کے مختلف علاقوں میں عام لوگوں کو کافی راحت پہنچائی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق جموں و کشمیر پولیس کی ایک پارٹی نے ضلع پلوامہ کے بالائی علاقہ آبہامہ میں بھاری برف میں پھنسی حاملہ خاتوں کو بحفاظت اسپتال پہنچایا ہے ، جموں و کشمیر پولیس کو آج راجپورہ تحصیل کے کنڈی علاقہ آبہامہ سے ایک تکلیف دہ کال موصول ہوئی، جس میں بتایا گیا کہ آبہامہ میں بھاری برف جمع ہونے کی وجہ سے ایک حاملہ خاتون اپنے گھر میں پھنسی ہوئی ہے اور اس کے کنبہ کے افراد اس کو لے جانے کے قابل نہیں ہیں۔ اسے اپنے طور پر اسپتال لے جایا گیا اور اسے فوری طبی امداد کی ضرورت تھی ۔

    اسی مناسبت سے ایس ایچ او پولیس تھانہ راجپورہ کی سربراہی میں پولیس اسٹیشن راجپورہ کی ایک پولیس پارٹی نے ایمبولینس کے ساتھ ایک جے سی بی کا انتظام کیا اور سخت جدوجہد کرکے  مسدود راستوں اور پھسلن والی سڑکوں کے ذریعہ موقع پر پہنچ کر خاتون کو اس کے گھر سے نکالا اور اسے طبی اعلاج کے لیے ڈسٹرکٹ اسپتال پلوامہ پہنچایا۔ اسی طرح پولیس تھانہ کاکہ پورہ کو ایک اور اذیت ناک کال موصول ہوئی کہ لیلہار کاکاپورہ میں ایک ٹین شیڈ کرگیا ۔ پولیس زخمی خاتون کو اسپتال پہنچنے میں مدد فراہم کررہی ہے۔

    پلوامہ پولیس نے بھاری برف باری کے دوران لوگوں کی مدد کے لیے ہیلپ لاین نمبرات بھی جاری کئے ہیں ، جن پر لوگ مشکلات کے دوران پولیس سے مدد حاصل کرسکتے ہیں ۔ ادھر ضلع پلوامہ کے آچھن گاوں میں بھی ایک ٹین شڈ کے گرنے سے ایک خاتون شدید زخمی ہوگئی جس کو مقامی لوگوں نے اسپتال پہنچایا ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: