ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر پولس کی کارروائی منشیات کی بھاری کھیپ ضبط، ایک شخص گرفتار، مزیدگرفتاریاں متوقع

منشیات مخالف مہم کو جاری رکھتے ہوئے کپواڑہ پولس نے چرس اور براون شوگر کی باری کھیپ ضبط کرکے ایک شخص کی گرفتاری عمل میں لائی۔

  • Share this:
جموں وکشمیر پولس کی کارروائی منشیات کی بھاری کھیپ ضبط، ایک شخص گرفتار، مزیدگرفتاریاں متوقع
جموں وکشمیر پولس کی کارروائی منشیات کی بھاری کھیپ ضبط، ایک شخص گرفتار

سری نگر: منشیات مخالف مہم کو جاری رکھتے ہوئے کپواڑہ پولس نے چرس اور براون شوگر کی باری کھیپ ضبط کرکے ایک شخص کی گرفتاری عمل میں لائی۔ تفصیلات کے مطابق کراپورہ پولس کو مصدقہ اطلاع ملی تھی کہ منشیات میں ملوث افراد کراپورہ سے کپواڑہ منشیات اسمگلنگ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، لیکن پولس نے کراپورہ کے مقام پر سڑک پر نکاے کے دوران ایک گاڑی کی تلاشی لی۔


تلاشی کاروائی کے دوران گاڑی میں چرس اور بروان شوگر کی بھاری کھیپ ضبط کی گئی، جس کے بعد اس کاروبار میں ملوث افراد جس کی پہچان طارق احمد لون کے بطور ہوئی۔ ایس ایچ او کراپورہ رفیق احمد لون نے نیوز 18 کو بتایا کہ پولس نے فوری کارروائی کے دوران موقع پر ہی منشیات سمیت گرفتارکیا گیا، جب اس نیٹ ورک میں دیگر افراد کے خلاف چھاپہ مار کارروائی شروع کی گئی۔ تاکہ اس پورے نیٹ ورک کو بےنقاب کیا جائےگا۔لوگوں نے پولس کی اس کاروائی کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ پولس کو اس پورے نیٹ ورک کو بےنقاب کرنا چاہئے، تاکہ مزید نوجوانوں کو منشیات کی لعنت سے دور رکھا جائے۔ واضح رہے کہ کپواڑہ پولس اور ہندواڑہ پولس نے پھچلے ایک مہینے کے دوران درجنوں افراد کو اس نیٹ ورک میں ملوث ہونے کی پاداش میں گرفتارکیا گیا۔


دریں اثنا پاکستان مسلسل منشیات کو اس پار بھیجنے کی ناکام کوشش کرہا ہے، لیکن پولس ان کی ہرکوشش کو ناکام بنا رہی ہے۔ چنانچہ جموں وکشمیر پولیس مسلسل اس نیٹ ورک کا پردہ فاش کرنے میں لگی ہے۔ پولس زرائع  کے مطابق پاکستان ہمیشہ اس پار منشیات بھیج کر معصوم نوجوانوں کو اس نیٹ ورک میں ملوث کررہا ہے اور پاکستان اس طرح کی سازشیں رچ کرکشمیر میں امن کو زک پہنچانے کی کوشش کررہا ہے۔ اس سازش کا مقصد یہاں نوجوانوں کو منشیات کی طرف مائل کرنا ہے اور نوجوانوں کو ملیٹنسی کی طرف راغب کرنا شامل ہے، لیکن سرحدوں پر تعینات فوج اور فورسز پاکستان کی ہرکوشش کو ناکام بنارہے ہیں۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 10, 2021 04:01 PM IST