உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں و کشمیر : سرینگر میں ملی ٹینٹوں کی فائرنگ میں ایک پولیس اہلکار زخمی

    جموں و کشمیر : سرینگر میں ملی ٹینٹوں کی فائرنگ ایک پولیس اہلکار زخمی

    جموں و کشمیر : سرینگر میں ملی ٹینٹوں کی فائرنگ ایک پولیس اہلکار زخمی

    Jammu and kashmir News : زخمی پولیس اہلکار کی پہچان محمد مقبول کے طور ہوئی ہے ۔ ان کی عمر 37 سال ہے ۔ اطلاعات کے مطابق گولی اس کی گردن میں لگی ہے ۔

    • Share this:
    سری نگر : ملی ٹینٹوں نے اتوار دیر شام  نواکدل سرینگر کے جمالٹہ علاقہ میں فائرنگ کردی۔ اس فائرنگ میں ایک پولیس اہلکار زخمی ہوا ہے ۔ جس کو نزدیکی اسپتال لے جایا گیا۔ زخمی پولیس اہلکار کی پہچان محمد مقبول کے طور ہوئی ہے ۔ ان کی عمر 37 سال ہے ۔ اطلاعات کے مطابق گولی اس کی گردن میں لگی ہے ۔ ادھر ڈائریکٹر جنرل پولیس جموں و کشمیر دلباغ سنگھ نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کا ایک دستہ ملی ٹینٹوں کی ایک کمین گاہ پر چھاپہ مارنے کی غرض سے وہاں گیا تھا اور اسی بیچ ملی ٹینٹوں نے پولیس دستہ پر فائرنگ کردی۔

    واضح رہے کہ اکتوبر مہینے سے کشمیر اور خاص طور سے سرینگر میں ملی ٹینٹوں حملوں میں اضافہ ہوا ہے ۔ ان حملوں میں کئی عام شہری بھی مارے گئے۔ پہلی اکتوبر سے ابھی تک 13 عام شہری ملی ٹینٹ حملوں میں مارے گئے ، جن میں سے زیادہ تر سرینگر شہر میں ہی مارے گئے ہیں ۔ حالانکہ پچھلے ایک مہینے سے ٹارگٹ کلنگس کو روکنے کے لئے پولیس سخت پہرہ  لگائے بیٹھی ہے اور جگہ جگہ  گاڑیوں کی بھی تلاشی لی جا رہی ہے ، لیکن اس کے باوجود ان حملوں پر قابو نہیں پایا جا سکا ہے ۔

    ان حملوں سے نمٹنے کے لئے کئی علاقوں میں پچھلے مہینے سے انٹرنیٹ بھی بند کردیا گیا ہے اور اسکوٹر اور موٹر سائیکل سواروں کو روک کر بغیر کسی قانونی جواز کے تھانوں میں رکھا جارہا ہے ، لیکن یہ حملہ ابھی بھی جاری ہے ۔

    پولیس کے اعلٰی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ یہ ایک نئے انداز کی ملی ٹینسی ہے جس میں سلیپر سیل کام کررہے ہیں اور حملے پستول کا استعمال کرکے کئے جارہے ہیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: