ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں کشمیر : کووڈ ٹیکوں پر سیاست کی چھاپ ، گزشتہ ایک ہفتے میں 95 فیصد ٹیکے جموں میں لگائے گئے

Jammu and Kashmir News : اعداد و شمار کے مطابق 45 سال سے زائد عمر کے افراد کے زمرے میں گزشتہ ہفتے یعنی 9 مئی سے 15 مئی تک جموں و کشمیر میں کل ایک لاکھ 6 ہزار 975 شہریوں کو ٹیکے لگائے گئے ہیں ، لیکن حیرت کی بات یہ ہے کہ اس میں سے کشمیر میں صرف 6 ہزار 253 اور جموں میں ایک لاکھ 722 ٹیکے لگائے گئے ہیں ۔

  • Share this:
جموں کشمیر : کووڈ ٹیکوں پر سیاست کی چھاپ ، گزشتہ ایک ہفتے میں 95 فیصد ٹیکے جموں میں لگائے گئے
جموں کشمیر : کووڈ ٹیکوں پر سیاست کی چھاپ ، گزشتہ ایک ہفتے میں 95 فیصد ٹیکے جموں میں لگائے گئے

جموں و کشمیر : کووڈ 19 کے خلاف جنگ میں ویکسین سب سے اہم ہتھیار ہے ، لیکن کشمیر میں کہیں ویکسین میسر نہیں ہے ۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق آج یعنی 16 مئی کو دس اضلاع پر مشتمل کشمیر وادی میں کہیں بھی کووڈ مخالف ٹیکہ نہیں لگایا گیا ، جبکہ جموں میں آج 8750 ٹیکے لگائے گئے ۔ سرکاری اعداد و شمار سے یہ عیاں ہے کہ ویکسین کی کمی کے علاوہ اس کی تقسیم میں بھی تفریق برتی جارہی ہے۔ ان اعداد و شمار سے صاف ظاہر ہے کہ 45 سال سے زائد عمر کے افراد کے زمرے میں گزشتہ ہفتے یعنی 9 مئی سے 15 مئی تک جموں و کشمیر میں کل ایک لاکھ 6 ہزار 975 شہریوں کو ٹیکے لگائے گئے ہیں ، لیکن حیرت کی بات یہ ہے کہ اس میں سے کشمیر میں صرف 6 ہزار 253 اور جموں میں 1 لاکھ 722 ٹیکے لگائے گئے ہیں ۔ یعنی گزشتہ ہفتے کل لگائے گئے کووڈ ٹیکوں کا 94.15 فیصد جموں میں جبکہ کشمیر وادی میں یہ فیصد صرف 5.84 فیصد رہا ۔


ٹیکوں کی کمی تو ہر جگہ محسوس کی جا رہی ہے ، لیکن جموں و کشمیر کے دو ڈویزنوں میں اتنا فرق کیوں ؟ اس سوال کا جواب دینے کیلئے کوئی تیار نہیں ۔ ڈایریکٹر جنرل ایمیونایزیشن ڈاکٹر سلیم الرحمان سے رابطہ کرنے کی کوشش کی ، لیکن وہ فون پر بھی دستیاب نہ ہوسکے ۔ پچھلے ایک ہفتے میں 6 دن ایسے بھی گزرے ، جب کشمیر میں کم سے کم 5 اضلاع میں ایک بھی ٹیکہ نہیں لگایا گیا ۔ کئی لوگوں کا کہنا ہے کہ کووڈ مخالف ٹیکوں کی تقسیم میں تفریق سیاست کا نتیجہ ہے ۔


سرینگر میں ایک سماجی کارکُن ارشد احمد کے مطابق جموں میں اموات کے بعد انتظامیہ سیاسی دباو میں آگئی اور  تمام میسر ٹیکے جموں کے مراکز میں تقسیم کئے جانے لگے ، جس کی وجہ سے کشمیر کے لوگ ان سے محروم ہوگئے ۔ جہاں تک کووڈ مثبت معاملات کا تعلق ہے تو 9 مئی سے 15 مئی تک کشمیر میں 13 ہزار 562 کووڈ مثبت کیس درج کئے گئے جبکہ جموں میں 9 ہزار 923 معاملات سامنے آئے ۔ ایکٹیو مثبت معاملات بھی کشمیر میں زیادہ ہیں ۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق کشمیر میں 15 مئی تک کل 31515 ایکٹیو پازیٹیو کیس درج کئے گئے ہیں ۔ جبکہ جموں میں اس سے کم کل 19 ہزار 960 ایکٹیو پازیٹیو کیس موجود ہیں ۔


تاہم اموات کے معاملہ میں جموں گزشتہ ہفتے کافی آگے نکل گیا ۔ جموں میں 237 اموات واقع ہوئیں ، لیکن کشمیر میں اس سے کم  127 اموات واقع ہوئی ہیں ۔ ۔ٹیکہ کاری میں سُست رفتاری کافی نقصان دہ ثابت ہوسکتی ہے اور کشمیر میں کئی لوگ شکایات کررہے ہیں کہ پہلا ٹیکہ لگوانے کے بعد اب دوسرا میسر نہیں ہو رہا ۔ سرکاری عہدیداروں کو آگے آکر لوگو ں کے سوالات کا جواب دینا چاہئے ۔

ادھر لیفٹننٹ گورنر منوج سنہا نے اگلے دس دن میں جموں و کشمیر میں 45 سال سے زائد تمام افراد کی ٹیکہ کاری کرنے کی ہدایت جاری کی ہے ۔ موجودہ حالات میں یہ کیسے ممکن ہوگا یہ محکمہ صحت کے افسران کو سوچنا ہوگا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 16, 2021 10:46 PM IST