உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں و کشمیر : بڈگام میں دردناک حادثہ ، کرنٹ لگنے سے محکمہ بجلی کے ملازم محمد امین کی موت

    جموں و کشمیر : بڈگام میں دردناک حادثہ ، کرنٹ لگنے سے محکمہ بجلی کے ملازم محمد امین کی موت

    جموں و کشمیر : بڈگام میں دردناک حادثہ ، کرنٹ لگنے سے محکمہ بجلی کے ملازم محمد امین کی موت

    Jammu and Kashmir News : محمد امین کھاگ کے کنچٹی پورہ میں بجلی کی ہائی ٹینشن ترسیلی لائن کی مرمت کررہا تھا ۔ اس دوران بجلی کی کرنٹ لگنے سے پوری طرح جھلس گیا۔ سنگین حالت میں انہیں اسپتال پہنچایا گیا ، جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا ۔

    • Share this:
    بڈگام : وادی کشمیر میں بجلی کی ترسیلی لائن کی مرمت کے دوران کافی ایسے حادثات رونما ہوئے ہیں ، جن سے لوگوں کی جانیں تلف ہوئی ہیں ۔ ایسا ہی ایک اور واقعہ وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام بیروہ کے کنچٹی پورہ میں پیش آیا ، جہاں سید پورہ بیروہ سے تعلق رکھنے والے محکمہ بجلی میں کام کررہے محمد امین نامی شخص بجلی کرنٹ لگنے سے موت ہوگئی ۔

    تفصیلات کے مطابق محمد امین کھاگ کے کنچٹی پورہ میں بجلی کی ہائی ٹینشن ترسیلی لائن کی مرمت کررہا تھا ۔ اس دوران بجلی کی کرنٹ لگنے سے پوری طرح جھلس گیا۔ اگر چہ نازک حالت میں انہیں اسپتال پہنچایا گیا ، جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا ۔ اس دوران بیروہ اسپتال میں دلخراش مناظر دیکھنے کو ملے ۔ ان کے گھر والے زاروقطار رو رہے تھے ۔ محمد امین کی لاش جوں ہی ان کے آبائی گاؤں سید پورہ بیروہ پہنچائی گئی تو وہاں صف ماتم بچھ گئی۔ بھاری تعداد میں لوگ ان کے گاؤں میں جمع ہوگئے ۔ ہر کوئی زارو قطار خون کے آنسوں بہارہا تھا۔

    لوگوں نے ایسے واقعات پر تشویش کا اظہار کیا ۔ سماجی کارکن محمد یوسف نے نیوز18 اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بیروہ میں اس سے پہلے بھی اس طرح کے کئی ایک حادثات پیش آئے ہیں ، جن کی وجہ سے لوگوں کی جانیں تلف ہوئیں ۔ انہوں نے زور دیا کہ ایسے دلدوز واقعات کی روک تھام کے لیے بیداری جانکاری دینے کی ضرورت ہے ۔

    ایک اور مقامی نوجوان تنویر احمد نے نیوز18 اردو کو بتایا کہ بجلی کی ترسیلی لائن کی مرمت کے دوران محکمہ کے ملازمین کو دوسرے ملازمین کی جانوں کا خیال رکھنا چاہئے نہ کہ لیت ولعل سے کام لینا چاہئے ۔ انہوں نے زور دیا کہ ملوث افراد کے خلاف قانونی کارروائی کی جانی چاہئے ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: