ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : دربار مو ملازمین کو سرکاری رہائش گاہیں خالی کرنے کا حکم ، جانئے کیا ہے وجہ

Jammu and Kashmir News : انتظامیہ کا فیصلہ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے دربار مو کی قدیم روایت کو ختم کرنے کے اعلان کے کچھ دن بعد کیا گیا ہے۔ لیفٹیننٹ گورنر نے 20 جون کو اعلان کیا تھا کہ جموں و کشمیر انتظامہ اب مکمل طور پر ای آفس کے ذریعہ کام کاج سنبھال رہی ہے اس طرح ششماہی دوبار مو روایت کا خاتمہ ہوا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 30, 2021 09:19 PM IST
  • Share this:
جموں و کشمیر : دربار مو ملازمین کو سرکاری رہائش گاہیں خالی کرنے کا حکم ، جانئے کیا ہے وجہ
جموں وکشمیر : ایل جی منوج سنہا نے مالی سال کے پہلے دن 50 فیصد کیپٹل آوٹ لے کو دی منظوری

سری نگر : جموں و کشمیر انتظامیہ نے بدھ کے روز 'دربار مو' ملازموں کو سرکاری رہائش گاہیں خالی کرنے کی ہدایات دی ہیں۔ ان ملازمین سے کہا گیا ہے کہ وہ یونین ٹریٹری کی دونوں دارالحکومتوں سری نگر اور جموں میں تین ہفتوں کے اندر اندر سرکاری رہائش گاہوں کو خالی کریں۔


انتظامیہ کا فیصلہ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے دربار مو کی قدیم روایت کو ختم کرنے کے اعلان کے کچھ دن بعد کیا گیا ہے۔ لیفٹیننٹ گورنر نے 20 جون کو اعلان کیا تھا کہ جموں و کشمیر انتظامہ اب مکمل طور پر ای آفس کے ذریعہ کام کاج سنبھال رہی ہے اس طرح ششماہی دوبار مو روایت کا خاتمہ ہوا ہے۔



انہوں نے کہا کہ دربار مو کے خاتمے سے انتظامیہ کو سالانہ دو سو کروڑ روپے بچ جائیں گے ، جن کو سماج کے پسماندہ طبقے کی فلاح وبہبود پر صرف کیا جائے گا۔ اب یونین ٹریٹری کی دونوں دارلحکومتوں سری نگر اور جموں میں سیکریٹریٹ سال بھر چلتا رہے گا۔

اسٹیٹس محکمہ کے کمشنر سیکریٹری ایم راجو کی طرف سے جاری ایک حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ سری نگر اور جموں میں دربار مو ملازمین کی سرکاری رہائش گاہوں کو منسوخ کرنے کو منظوری دی گئی ہے۔

سری نگر کے ملازمین کو جموں میں جبکہ جموں کے ملازمین کو سری نگر میں رہائش گاہیں دی گئی تھیں۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 30, 2021 09:19 PM IST