ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : مشہور سیاحتی مقام گلمرگ سیاحوں کی جگہ اب بن گیا جنگلی جانوروں کی آماجگاہ ، لوگوں میں خوف و ہراس

ٹنگمرگ ، کنزر اور بیروہ کے میدانی علاقوں کے انسانی آبادی میں پچھلے ایک مہینے سے درجن بھر تیندوے ، ریچھ اور دیگر جنگلی جانور نمودار ہوئے ہیں

  • Share this:
جموں و کشمیر : مشہور سیاحتی مقام گلمرگ سیاحوں کی جگہ اب بن گیا جنگلی جانوروں کی آماجگاہ ، لوگوں میں خوف و ہراس
جموں و کشمیر : مشہور سیاحتی مقام گلمرگ سیاحوں کی جگہ اب بن گیا جنگلی جانوروں کی آماجگاہ ، لوگوں میں خوف و ہراس

دنیا بھر میں مشہور سیاحتی مقام گلمرگ اب سیاحوں کی جگہ ہے ، جنگلی جانوروں کی آماجگاہ بن گیا ہے ۔ یہاں ان دنوں لاکھوں کی تعداد میں دنیا بھر سے سیاح سیر وتفریح کی غرض سے آتے تھے ۔ تاہم کورونا وائرس اور لاک ڈاون کی وجہ سے اس مرتبہ یہاں مکمل طور پر سناٹا چھایا ہوا ہے ، جس کی وجہ سے گلمرگ میں اب دن دھاڑے جنگلی جانور گھومتے پھرتے نظر آرہے ہیں ۔ جبکہ میدانی علاقوں کے انسانی آبادی میں بھی مختلف جنگلی جانور نمودار ہورہے ہیں ۔


ٹنگمرگ ، کنزر اور بیروہ کے میدانی علاقوں کے انسانی آبادی میں پچھلے ایک مہینے سے درجن بھر تیندوے ، ریچھ اور دیگر جنگلی جانور نمودار ہوئے ہیں ۔ وادی کے دیگر مقامات سے بھی اس طرح کی خبریں روز موصول ہوتی ہیں ۔ گزشتہ روز  کنزر کے سُونِم علاقہ میں اچانک تیندوا نمودار ہوگیا اور اس وقت علاقہ میں افراتفری اور خوف و دہشت کا ماحول دیکھنے کو ملا ۔ محکمہ وائلڈ لائف کے اہلکاروں نے بر وقت کارروائی کرتے ہوئے اسے اپنے قابو میں کر کے انسانی جانوں کو تلف ہونے سے بچایا ۔ عامر حسین  نامی مقامی شخص نے نیوز 18 اردو کوبتایا کہ ٹنگمرگ اور دیگر آس پاس کے میدانی علاقوں میں لوگ گھروں میں سہمے ہوئے ہیں اور گھروں سے باہر آنے میں خوف محسوس کررہے ہیں ۔ گزشتہ ماہ بنگام کنزر کی آبادی میں بھی ایک ریچھ اپنے کئی بچوں کے ساتھ نمودار ہوا۔


وہیں ٹنگمرگ ، ماہین ، قاضی پورہ اور گلمرگ میں بھی کئی تیندوے اور ریچھ نمودار ہورہے ہیں ، جن میں کئی کو محکمہ وائلڈ لائف کی ٹیم نے پکڑ لیا ۔ محکمہ وائلڈ کے ایک ملازم اعجاز احمد نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ انسانی آبادی میں جنگلی جانوروں کے رخ کرنے کی سب سے بڑی وجہ جنگلات کا بے دریغ کٹاؤ ہے ۔ ساتھ ہی جنگلات میں خوراک کی کمی کی وجہ سے یہ جانور خوراک کی تلاش میں میدانی علاقوں کا رخ کررہے ہیں ۔


گلمرگ اور بیروہ رینج میں پچھلے کئی مہینوں میں درجن بھر لوگوں  پر ریچھ اور تیندووں نے حملہ کرکے انہیں  جسمانی طور ناکارہ بنادیا ۔ جموں و کشمیر کی گورنر انتظامیہ کو چاہئے کہ جنگلات میں سر سبز سونے کے کٹاؤ کی روک تھام کے لئے سخت اقدامات اٹھائیں ۔ محکمہ وائلڈ لائف کے ملازمین کو بھی چاہئے کہ انسا نی آبادی میں جنگلی جانوروں کے گھس جانے کے دوران بروقت کارروائی کرتے ہوئے انسانی جانوں کو بچانے کے لئے اپنا اہم رول ادا کریں ۔
First published: Apr 27, 2020 07:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading