உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اگر بی جی پی کے ساتھ سیاسی رشتہ جوڑنا گناہ تو اس میں این سی اور پی ڈی پی سرفہرست ہیں : سجاد غنی لون

    اگر بی جی پی کے ساتھ سیاسی رشتہ جوڑنا گناہ تو اس میں این سی اور پی ڈی پی سرفہرست : سجاد غنی لون

    اگر بی جی پی کے ساتھ سیاسی رشتہ جوڑنا گناہ تو اس میں این سی اور پی ڈی پی سرفہرست : سجاد غنی لون

    Jammu and Kashmir News : سجاد غنی لون نے کہا کہ جموں کشمیر میں  عوامی سرکار آتے ہی  ملازمین کے خلاف احکامات کو کالعدم قرار دیا جاے گا ۔ پپلیز کانفرنس سنے والے الیکشن کیلے کسی بھی وقت تیار ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    سری نگر : پپلیز کانفرنس کے چیئرمین سجاد غنی لون نے دو ٹوک الفاظ میں کہا کہ ان کی پارٹی کسی بھی صورتحال میں اسمبلی الیکشن کیلے تیار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی سرکار کو فوری طور پر جموں و کشمیر میں عوامی حکومت تشکیل دینی چاہئے اور مقررہ وقت پر الیکشن ہونا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ عوامی حکومت سے ہی لوگوں کی مشکلات کا ازالہ ہوتا ہے ۔ انہوں نے نیوز 18 کے ساتھ خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر میں ملازمین کے حوالے سے روزانہ بنیادوں  پر جاری احکامات زیادتی ہے اور عوامی حکومت آتے ہی ان تمام احکامات کو کالعدم قرار دیا جاے گا ۔

    سجاد غنی لون نے نیشنل کانفرنس اور پی ڈی پی پر نشانہ سادھتے ہوئے کہا کہ اگر بی جی پی کے ساتھ رشتہ جوڑنا گناہ ہے ، تو اس گناہ میں سب سے پہلے یہی دونوں پارٹیاں برابر کی شریک ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ دفعہ تین سو ستر ہٹنے کے بعد کشمیر میں کوئی تعمیراتی کام نہیں ہوئے ، بلکہ خیالی پکاو پکائے جارہے ہیں ۔ جبکہ جو بھی تعمیراتی کام آج تک  ہوئے وہ جموں و کشمیر کی میں مین اسٹیریم جماعتوں کی وجہ سے ہوئے ہیں ۔

    انہوں نے کہا کہ مرکزی لیڈران کشمیر میں تعمیراتی پروجیکٹوں کے متعلق بیان بازی کرریے ہیں ، انہیں سوچ سمجھ کر بیان بازی کرنی چاہئے ۔ انہوں نے کہا جو بھی کشمیر میں ڈیولپمنٹ ہوا ہے ، وہ جموں و کشمیر کی اپنی عوامی سرکار سے ہوا ہے ۔ بی جی پی کو راتوں رات کونسا الہ دین کا چراخ ہاتھ لگ گیا ہے ۔

    انہوں نے کہا کہ ملازمین کے خلاف سخت حکومتی فیصلے غلط ہیں اور اس طرح کے فیصلے ملازمین  کو پریشان کرنا ہے ، لہذا سرکار کو اس طرح کے فیصلوں پر نظر رسانی کرنے چاہئے ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: