ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کورونا وائرس : جموں کشمیر میں کئی مقامات پر سماجی فاصلہ کی اڑائی جا رہی دھجیاں ، اب انتظامیہ نے کی یہ بڑی اپیل

انتظامیہ اور پولیس اہلکار مسلسل لوگوں کو کورونا وائرس کے قہر کے حوالے سے جانکاری فراہم کر رہے ہیں ۔ تاہم لوگ ایڈوایزری کو نظر انداز کر رہے ہیں ۔

  • Share this:
کورونا وائرس : جموں کشمیر میں کئی مقامات پر سماجی فاصلہ کی اڑائی جا رہی دھجیاں ، اب انتظامیہ نے کی یہ بڑی اپیل
کورونا وائرس : جموں کشمیر میں کئی مقامات پر سماجی فاصلہ کی اڑائی جا رہی دھجیاں ، اب انتظامیہ نے کی یہ بڑی اپیل

ظہور رضوی


کولگام :  ملک کے دیگر حصوں کی طرح ریاست جموں و کشمیر میں بھی کورونا وائرس کا قہر جاری ہے اور ایسے میں لاک ڈاون سے متاثرہ باشندوں کی معالی معاونت کے لیے مرکزی سرکار نے کئی اسکیموں کا اعلان کیا ۔ جبکہ راشن اور دیگر اشیائے ضروریہ کی مفت تقسیم کاری بھی عمل میں لائی جارہی ہے ۔ اس درمیان جموں و کشمیر کے مختلف مقامات سے حاصل شدہ ویڈیو اور تصاویر سے پتہ چلتا ہے کہ اسکیموں سے استفادہ حاصل کرنے والے شہری سماجی فاصلہ اور دیگر لوازمات کی ایڈوایزری کو بالائے طاق رکھتے ہوئے ان احکامات کی دھجیاں اڑا رہے ہیں جبکہ بینکوں پر مرکزی سرکار کی معالی معاونت اور دیگر اسکیموں کی رقومات حاصل کرنے کے لیے شہریوں کی بھیڑ امنڈ پڑی ہے ۔


انتظامیہ اور پولیس اہلکار مسلسل لوگوں کو کورونا وائرس کے قہر کے حوالے سے جانکاری فراہم کر رہے ہیں ۔ تاہم لوگ ایڈوایزری کو نظر انداز کر رہے ہیں ۔ اسی طرح مفت راشن کے حصول کے لیے بھی صارفین کی لمبی لمبی قطاریں دیکھنے کو مل رہی ہیں ، جو کہ خطرے سے خالی نہیں ہیں ۔ ضلع انتظامیہ کولگام نے پولیس اور مقامی انتظامیہ کے اشتراک سے سماجی فاصلہ برقرار رکھنے پر زور دیا اور اس کی وجہ سے کئی مقمات پر عمل بھی ہو رہا ہے ۔ تاہم کئی مقامات پر معاملہ جوں کا توں ہے ۔


ایسے میں ضلع انتظامیہ ، پولیس اور لوگوں پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ وبائی بیماری کا تدارک کرنے لے لیے خود بھی رول ادا کریں ۔ ڈی سی کولگام شوکت اعجاز بٹ نے کہا کہ لوگوں کو زیادہ سے زیادہ احتیاط برتنے کی ضرورت ہے اور بلا وجہ بینکوں اور راشن کی دکانوں پر بھیڑ جمع کرنے سے پرہیز کرنا چاہئے ۔
First published: Apr 23, 2020 05:40 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading