உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں و کشمیر : دو گھنٹے میں ملی ٹینٹوں نے تین شہریوں کا کیا قتل ، لوگوں میں خوف و ہراس ، سرچ آپریشن جاری

    جموں و کشمیر : دو گھنٹے میں ملی ٹینٹوں نے تین شہریوں کا کیا قتل ، لوگوں میں خوف و ہراس ، سرچ آپریشن جاری

    جموں و کشمیر : دو گھنٹے میں ملی ٹینٹوں نے تین شہریوں کا کیا قتل ، لوگوں میں خوف و ہراس ، سرچ آپریشن جاری

    Jammu and Kashmir News : کشمیر میں آج تین عام شہریوں کا گولی مار کر قتل کر دیا گیا ۔ مارے گئے افراد میں ایک معروف ادویات کا تاجر مکھن لال بِندرو اور ایک بہار سے تعلق رکھنے والا شخص شامل ہے ۔

    • Share this:
    سری نگر : کشمیر میں آج تین عام شہریوں کا گولی مار کر قتل کر دیا گیا ۔ مارے گئے افراد میں ایک معروف ادویات کا تاجر مکھن لال بِندرو اور ایک بہار سے تعلق رکھنے والا شخص شامل ہے ، جس کو لال بازار علاقے میں گولی مار دی گئی ۔ تیسرے شخص کو بانڈی پورہ ضلع کے شاہ گُنڈ علاقے میں گولیوں کا نشانہ بنایا گیا۔

    پولیس کے مطابق پہلا واقعہ شام کے ساڑھے سات بجے اقبال پارک سرینگر میں بندرو میڈیکیٹ پر پیش آیا ، جہاں پر ادویات کے معروف تاجر مکھن لال بِندر کو نزدیک سے گولی ماری گئی۔ حالانکہ اُنھیں جلدی اسپتال پہنچایا گیا لیکن اسپتال تک پہنچنے سے پہلے اُن کی موت ہوچکی تھی ۔ پولیس نے علاقہ میں تلاشی کارروائی شروع کی لیکن آخری خبریں آنے تک اُن کے ہاتھ کچھ نہیں لگا تھا۔

    دوسرا واقعہ رات 8:15 بجے پیش آیا ۔ مدینہ چوک لال بازار میں ایک غیر مقامی تاجر کا گولی مار کر قتل کردیا گیا۔ اس کی شناخت بہار کے بھا گل پور کے ویریندر پاسوان کے طور ہوئی ہے ، جو یہاں ریڈی پر گول گھپے بیچتا تھا۔ تیسرا واقعہ بانڈی پورہ ضلع کے شاہ گُنڈ علاقے میں پیش آیا ، جہاں پر محمد شفیع لون نامی ایک شخص کو گولی مار دی گئی اور اسپتال میں اُس کی موت واقع ہوئی۔

    سرینگر میں آج کی دو اموات سمیت اس ہفتے چار عام شہری ابھی تک مارے گئے ہیں ۔ عام شہریوں کے قتل کے ان اموات کے بارے میں پولیس ابھی تک صرف اتنا کہا ہے کہ یہ دہشت گردی کے معاملات ہیں۔ ایک ہی دن میں تین عام شہریوں کے قتل سے عوام میں خوف و ہراس ہے ۔

    حالانکہ کشمیر میں دہشت گردی کے واقعات کوئی نئی بات نہیں ، لیکن اس طرح متواتر عام شہریوں کا قتل ایک نئی سازش سے تعبیر کیا جارہا ہے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: