ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

دنیا کے بہترین سائنسدانوں کی فہرست میں دو کشمیری ڈاکٹر شامل

یونیورسٹی آف سٹین فورڈ یو ایس اے نے دنیا کے اعلٰی ترین سائنسدانوں کی فہرست تیار کی ہے ۔ کشمیر کے دو میڈیکل ریسرچر ڈاکٹر ایم ایس کھورو اور ڈاکٹر پرویز اے کول اس فہرست میں جگہ ملی ہے ۔

  • Share this:
دنیا کے بہترین سائنسدانوں کی فہرست میں دو کشمیری ڈاکٹر شامل
دنیا کے بہترین سائنسدانوں کی فہرست میں دو کشمیری ڈاکٹر شامل

سرینگر : کشمیر کے دو میڈیکل ریسرچرس نے دُنیا کے اعلٰی ترین سائنسدانوں کی فہرست میں جگہ بنائی ہے ۔ معدے اور آنتوں کے نامور معالج ڈاکٹر محمد سلطان کھورو نے گیسٹرو انٹیرالوجی اینڈ ہیپاٹالوجی شعبہ میں دنیا کے اعلی ترین دو فیصد سائنسدانوں کی فہرست میں جگہ پائی ہے ۔ ان کی رینک 357 اور ٹاپ فیصد 0.467470409 ہے ۔ کشمیر کے ایپل ٹاون نام سے مشہور سوپور میں پیدا ہوئے ڈاکٹر کھورو نے اپنا پہلا ریسرچ پیپر 1974 میں  لکھا تھا ۔ ہیپاٹائٹس ای اور اس بیماری کے وائرس کی کھوج نے انھیں عالمی شہرت بخشی ۔


ڈاکٹر محمد سلطان کھورو نے 176 ریسرچ پیپر لکھے جو میڈیکل سائنس کے مشہور اور مستند جریدوں میں شایع ہوتے رہے ہیں ۔ ڈاکٹر کھورو شیر کشمیر انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کے ڈائریکٹر رہ چکے ہیں ۔ ڈاکٹر محمد سلطان کھورو نے اس خبر پر خوشی کا اظہار تو کیا ، لیکن اس بات پر تشویش ظاہر کی کہ جموں و کشمیر کے صرف دو محقق اس فہرست میں شامل ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ کشمیر میں آدھے درجن سے زائد ریسرچ مراکز ہیں ، لیکن صرف دو محقق اس فہرست میں شامل ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ ہمیں ریسرچ پر زیادہ دھیان دینے کی ضرورت ہے ۔


اسٹین فورڈ یونیورسٹی کی بہترین ریسرچرس کی فہرست میں شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس میں شعبہ پلمونری میڈیسن کے سربراہ ڈاکٹر پرویز  اے کول بھی شامل ہیں ۔ ڈاکٹر پرویز کول کی عالمی رینک 1384 دکھائی گئی ہے۔ ان کا پہلا ریسرچ  پیپر 1992 میں سامنے آیا اور تب سے مسلسل ان کے تحقیق جاری ہے اور ان کے تحقیقی  پیپر دنیا کے مستند میڈیکل جریدوں میں چھپتے رہے ہیں ۔ ڈاکٹر پرویز  اے کول نے اس کامیابی پر کہا کہ وہ خوش ہیں ، لیکن انھیں اصلی خوشی تب ملے گی جب جموں و کشمیر کے نوجوان زیادہ سے زیادہ تحقیق میں دلچسپی لیں ۔ تاکہ دنیا کو بیماریوں سے نجات مل سکے ۔


ان کا کہنا ہے کہ مجھے سکون تب ملے گا جب میرے شاگرد تحقیق میں مجھ سے آگے نکل جائیں گے ۔ جموں و کشمیر میں جہاں کچھ ڈاکٹر نجی کلینکوں میں دن رات ایک کرکے پیسے بٹورنے میں لگے ہیں وہیں ڈاکٹر پرویز اے کول اور ڈاکٹر محمد سلطان کھورو انسانیت کی بھلائی کے لئے تحقیق میں مصروف ہیں۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 03, 2020 09:58 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading