ہوم » نیوز » No Category

ریاض نائیکو کے بعد اب یہ ڈاکٹر سنبھالے گا حزب المجاہدین کی کمان! خطرناک دہشت گرد کی فہرست میں ہے اس کا نام

ذرائع کے مطابق حزب المجاہدین کے نئے کمانڈر کے نام میں دو نام سب سے آگے ہیں۔ یہ ہیں دہشت گرد ڈاکٹر سیف اللہ عرف اورنگزیب اور جنید صحرائی ۔ کہا جارہا ہے کہ ڈاکٹر سیف اللہ اس دوڑ میں تھوڑا آگے چل رہے ہیں اور انہیں حزب المجاہدین کی کمان بھی دی جاسکتی ہے۔

  • Share this:
ریاض نائیکو کے بعد اب یہ ڈاکٹر سنبھالے گا حزب المجاہدین کی کمان! خطرناک دہشت گرد کی فہرست میں ہے اس کا نام
حزب المجاہدین کے کمانڈر ریاض نائیکو اور اس کے دو ساتھیوں کو سیکورٹی اہلکاروں نے بدھ کو ہوئی مڈبھیڑ میں ہلاک کردیا تھا۔

سکیورٹی فورسز(Jammu Kashmir) نے بدھ کو جموں۔کشمیر کے اونتی پورہ میں حزب المجاہدین کے دہشت گرد ریاض نائیکو (Riyaz Naikoo) کو مار گرایا، ایسے میںح اب یہ دہشت گرد تنظیم وادی میں نئے کمانڈر کی تلاش میں مصروف ہو گیا ہے۔ کہا جارہا ہے کہ ریاض نائیکو کے ہی کسی قریبی کو حزب المجاہدین کی کمان دی جائے گی۔ سکیورٹی ایجنسی کی پورے واقعے ےپر سخت نظر ہے۔ بتادیں کہ وادی میں گزشتہ کچھ دنوں میں 27 آپریش کئے گئے ہیں جس میں 64 دہشت گرد کو ما گرایاگیاہے۔

دو دہشت گرد کمانڈر بننے کی دوڑ میں

ذرائع کے مطابق حزب المجاہدین (Hizbul Mujahideen)کے نئے کمانڈر کے نام میں دو نام سب سے آگے ہیں۔ یہ ہیں دہشت گرد ڈاکٹر سیف اللہ عرف اورنگزیب اور جنید صحرائی ۔ کہا جارہا ہے کہ ڈاکٹر سیف اللہ اس دوڑ میں تھوڑا آگے چل رہے ہیں اور انہیں حزب المجاہدین کی کمان بھی دی جاسکتی ہے۔ سیف اللہ کا تعلق پلوامہ ضلع کے ملنگ پورہ سے ہے۔ وہ برہان وانی گینگ کا دہشت گرد رہا ہے۔ ساتھ ہی وہ ریاض نائیکو کے بھی کافی قریب مانا جاتا ہے۔


ڈاکٹر سیف اللہ ان دنوں جنوبی کشمیر کے علاقوں میں بیحد سرگرم ہیں۔ وہ فی الحال A ++ کیٹیگری کا ایک دہشت گرد ہے۔ یعنی اسے خطرناک دہشت گرد کی کیٹیگری میں شامل کیا گیا ہے۔ نائیکو کو مارنے کے بعد  سکیورٹی ایجنسی اب سیف اللہ کی تلاش کر رہی ہے۔ نائیکو کے مشورے پر سیف اللہ نے نوجوانوں کو دہشت گرد تنظیم میں بھرتی کرنے کی سازش کی۔ وہ پہلی بار انکاؤنٹر میں زخمی دہشت گردوں کا علاج کرنے کی وجہ سے بحث میں آیا تھا۔ سیف اللہ 2014 میں دہشت گرد تنظیم میں شامل ہوا تھا۔ اس کے علاوہ وہ جنوبی کشمیر میں حزب المجاہدین  کا ایک آپریشن کمانڈر بھی رہ چکا ہے۔

بتادیں کہ حزب المجاہدین کے پوسٹر بواۓ و اعلیٰ ترین کمانڈر ریاض نائیکو کو بالآخر سیکورٹی فورسز نےجنوبی کشمیرکے پلوامہ ضلع میں بیگ پورہ اونتی پور میں اپنے ایک ساتھی سمیت ہلاک کیا۔ تفصیلات کے مطابق ایک مصدقہ اطلاع کی بنا پر فوج کی 55 راشٹریہ رائفلز اورجموں وکشمیر پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ نےبیگ فورسزنےحزب المجاہدین کےکمانڈرکی ہلاکت کو ایک بڑی کامیابی قراردیا ہے۔ تفصیلات کےمطابق فوج اور پولیس نےبیگ پورہ علاقے کا محاصرہ کیا، جس دوران ایک رہائشی گھرمیں سب موجود ملیٹینٹوں نےفورسز پر فائرنگ کی اور فورسز کی جوابی کارروائی میں جنوبی کشمیر میں حزب المجاہدین کا سب سے بڑا چہرہ ریاض نائیکو اپنے ساتھی سمیت ہلاک ہوا۔ یہ آپریشن 18 گھنٹے طویل تھا اور اسے قبل اسی طرح کے ایک اور آپریشن میں فورسز نےکھریو پانمپور علاقے میں دو اعلیٰ ملیٹینٹوں کو مار گرایا جبکہ ترال علاقے سے ایک ملیٹینٹ کو اسلحہ و گولی بارود سمیت زندہ دبوچا گیا۔

ریاض نائیکو 2016 میں مارے گئےحزب المجاہدین کے کمانڈر برہان وانی کےبعد دوسرا ایسا کمانڈر ہے جس کو حزب المجاہدین کے پوسٹر بوائے کے بطور دیکھا جاتا تھا اور گزشتہ 8 برسوں سے سرگرم رہنےکی وجہ سے جنوبی کشمیر میں ملیٹینسی میں نئی روح پھونکنے میں ریاض نائیکو کا کلیدی رول رہا ہے۔ ریاض نایکو کا شمار +++A کیٹیگری ملیٹینٹ کمانڈروں میں ہوتا تھا۔ پولیس کے مطابق ریاض نائیکو کئی تخریب کارکارروائیوں میں ملوث تھا۔ پولیس کے مطابق نائیکو کئی پولیس اہلکاروں، پنچوں سرپنچوں اور عام شہریوں کے قتل، سیکورٹی فورسز پرحملوں اور پولیس اہلکاروں و عام شہریوں کے اغوا کےکئی معاملات میں مطلوب تھا۔ جبکہ نائیکو فیس بک اورسوشل میڈیا سائٹوں پر بھی کافی سرگرم تھا، جس کی وجہ سے جنوبی کشمیر میں سینکڑوں نوجوان ملیٹینسی کے صفحوں میں شامل ہوگئے۔
First published: May 08, 2020 03:21 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading