ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

شمالی کشمیر میں دہشت گردوں کا نیٹ ورک بے نقاب، دو ملیٹینٹوں سمیت تین او جی ڈبلیوز کو گرفتار

ایس پی ہندوارہ سندیپ گفتاہ نے ایک پریس کانفرنس کے دوران اس کو ایک بڑی کارروائی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ یہ دہشت گرد شمالی کشمیر میں ایک بڑے حادثہ کو انجام دینے کی تاک میں تھے اور انہیں اپنے آقاوں سے بڑا حادثہ انجام دینے کی ذمہ داری دی گئی تھی ۔

  • Share this:
شمالی کشمیر میں دہشت گردوں کا نیٹ ورک بے نقاب، دو ملیٹینٹوں سمیت تین او جی ڈبلیوز کو گرفتار
شمالی کشمیر میں دہشت گردوں کا نیٹ ورک بے نقاب،دو ملیٹینٹوں سمیت تین او جی ڈبلیوز کو گرفتار

جموں و کشمیر : ہندوارہ پولس نے فوج کے 21 آر آر سے مشترکہ  کارروائی میں البدر تنظیم  سے وابستہ دو ملیٹنٹوں سمیت تین او جی ڈبلیوز کو گرفتار کیا ہے ۔ تفصلات کے مطابق پولس کو مصدقہ اطلاح ملی تھی کہ علاقہ میں ملیٹنٹوں کا ایک گروپ سرگرم ہوا ہے اور وہ ایک بڑی تخریبی کارروائی انجام دینے کی تاک میں ہے ۔ پولس نے فوج سے مل کر تلاشی کارروائی کے دوران ایک ناکہ کے دوران کے ان دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا اور ان کے قبضہ سے بھاری مقدار میں اسحلہ بارود ضبط کیا گیا ۔


ایس پی ہندوارہ سندیپ گفتاہ نے ایک پریس کانفرنس کے دوران اس کو ایک بڑی کارروائی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ یہ دہشت گرد شمالی کشمیر میں ایک بڑے حادثہ کو انجام دینے کی تاک میں تھے اور انہیں اپنے آقاوں سے بڑا حادثہ انجام دینے کی ذمہ داری دی گئی تھی اور یہ شمالی کشمیر میں نوجوانوں کو ملیٹنٹ سرگرمیوں میں سرگرم  کرنا چاہتے تھے ۔ تاکہ شمالی کشمیر میں دوبارہ دہشت گردی شروع کی جاسکے ۔ لیکن ہندوارہ پولس اور فوج کی مشترکہ کارروائی نے دہشت گردی کے اس بڑے نیٹ ورک کا پردہ فاش کردیا ۔


ایس پی ہندوارہ نے نیوز 18 کے ساتھ خصوصی بات چیت میں کہا کہ اس سلسلہ میں جانچ شروع کی گئی ہے اور آنے والے وقت میں اس نیٹ ورک سے وابستہ مزید لوگوں کی گرفتاری متوقع ہے ۔


پولس کا کہنا تھا کہ شمالی کشمیر پرامن مانا جاتا ہے اور اس علاقہ میں دہشت گردی کا گراف کم ہوا ہے ، اس لئے دہشت گرد اس علاقہ کو دورباہ سرگرم کرنے کی تاک میں ہیں ۔ ایس پی نے کہا کہ دہشت گردوں سے پوچھ تاچھ کے بعد انہوں نے کئی انکشاف کئے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 17, 2021 10:34 PM IST