ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : سری نگر اور بارہمولہ میں منڈلا رہا ہے دہشت گردانہ حملے کا خطرہ ، الرٹ پر خفیہ ایجنسی

Jammu Kashmir Latest news : خفیہ ایجنسیوں کے حوالے سے آرہی خبروں کے مطابق دراندازی کے دوران پاکستانی فوج ، دہشت گرد اور ان کے ہینڈلرس کے درمیان بہتر تال میل کیلئے جدید مواصلاتی آلات کا استعمال کیا جارہا ہے ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : سری نگر اور بارہمولہ میں منڈلا رہا ہے دہشت گردانہ حملے کا خطرہ ، الرٹ پر خفیہ ایجنسی
سری نگر اور بارہمولہ میں منڈلا رہا ہے دہشت گردانہ ح کا خطرہ ، الرٹ پر خفیہ ایجنسی

جموں و کشمیر کے سری نگر اور بارہمولہ کے پٹٹن میں ایک مرتبہ پھر دہشت گردانہ حملے کا خطرہ منڈلا رہا ہے ۔ فوج اور پولیس کو بارہمولہ کے پال ہالاں ، پٹٹن اور گنڈ خواجہ قاسم علاقہ میں دہشت گردوں کے چھپے ہونے کی جانکاری ملی ہے ۔ جانکاری ملتے ہی فوج نے پٹٹن علاقہ میں لکشر کے دہشت گرد خورشید احمد میر کے جگہ جگہ پوسٹر لگوائے ہیں ۔ ساتھ ہی اس کیلئے 10 لاکھ روپے کے انعام کا اعلان کیا ہے ۔


لشکر طیبہ کے چار دہشت گردوں کی نقل و حرکت لگاتار دیکھی جارہی ہے ۔ خفیہ ایجنسی کے ذرائع کے مطابق سرحد پار سے دہشت گردوں کو سری نگر پر توجہ مرکوز کرنے کیلئے کہا گیا ہے ۔ کلگام میں بیٹھا لشکر کا سرغنہ عباس شیخ سری نگر میں موجود دہشت گردوں کو ہدایت دے رہا ہے ۔ اتنا ہی نہیں کشمیر وادی میں مسلسل بہتر ہوتے حالات سے بوکھلائے سرحد پار بیٹھے دہشت گردی کے آقا زیادہ سے زیادہ دہشت گردوں کو وادی میں دراندازی کرانے کی کوشش میں ہیں ۔


خفیہ ایجنسیوں کے حوالے سے آرہی خبروں کے مطابق دراندازی کے دوران پاکستانی فوج ، دہشت گرد اور ان کے ہینڈلرس کے درمیان بہتر تال میل کیلئے جدید مواصلاتی آلات کا استعمال کیا جارہا ہے ۔ایجنسی کے مطابق ایل او سی سے ۔۔۔۔ کلو میٹر دور راجوری کے مدمقابل پی او کے میں 13 مارچ سے تھورائے فون ایکٹیو ہے ۔ یہ دنیا کا سب سے ایڈوانس سیٹیلائٹ فون ہے ۔ اس فون کی خاص بات یہ ہے کہ اس کے ذریعہ کسی بھی جگہ سے رابطہ کیا جاسکتا ہے ۔


بتادیں کہ اس سے پہلے 13 مارچ کو فوج نے جموں و کشمیر کے شوپیاں میں ایک انکاونٹر کو انجام دیا تھا ۔ شوپیاں کے راولپورہ میں 20 گھنٹے کے کارڈن اینڈ سرچ آپریشن کے بعد شروع ہوئے انکاونٹر میں کئی دہشت گردوں کو مار گرایا تھا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 18, 2021 10:53 PM IST