உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News : پلوامہ میں ملی ٹینٹوں کا پولیس پوسٹ پر گرینیڈ حملہ ، دو پولیس اہلکار زخمی

    J&K News : پلوامہ میں ملی ٹینٹوں کا پولیس پوسٹ پر گرینیڈ حملہ ، دو پولیس اہلکار زخمی

    J&K News : پلوامہ میں ملی ٹینٹوں کا پولیس پوسٹ پر گرینیڈ حملہ ، دو پولیس اہلکار زخمی

    Pulwama News : پلوامہ کے جنرل پوسٹ آفس کے نزدیک پولیس اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ناکہ پارٹی پر ملی ٹینٹوں نے آج دوپہر کے بعد گرینیڈ پھنکا، جو زوردار دھماکے سے پھٹ گیا ۔ اس حملے میں ناکے پر تعینات دو پولیس اہلکار زخمی ہوگئے ۔

    • Share this:
    پلوامہ : جموں و کشمیر  (Jammu Kashmir) کے پلوامہ (Pulwama) میں ملی ٹینٹوں نے پولیس اور سی آر پی ایف کے مشترکہ ناکے پر گرینیڈ سے حملہ کیا ۔ قصبہ پلوامہ کے جنرل پوسٹ آفس کے نزدیک پولیس اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ناکہ پارٹی پر ملی ٹینٹوں نے آج دوپہر کے بعد گرینیڈ  (Grenade Attack in Pulwama) پھنکا، جو زوردار دھماکے سے پھٹ گیا ۔ اس حملے میں ناکے پر تعینات دو پولیس اہلکار زخمی ہوگئے ۔ پولیس اور مقامی لوگوں کی مدد سے دونوں زخمی اہلکاروں کو پلوامہ ڈسٹرکٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے ۔

    زخمی پولیس اہلکاروں کی شناخت آئی آر پی بٹالین کے ہیڈ کانسٹیبل علی محمد اور سلیکشن گریڈ کانسٹیبل عبدالمجید کے بطور ہوئی ہے ۔ دونوں زخمی پولیس اہلکاروں کی حالت مستحکم بتایی جارہی ہے ۔ اس ملی ٹینٹ حملے کے بعد سیکورٹی فورسیز نے پورے علاقہ کا محاصرہ کرکے حملہ آور کی تلاش شروع کردی ہے ۔

    قصبہ پلوامہ میں پولیس اور سی آر پی ایف کی جانب سے مختلف حساس مقامات پر مشترکہ ناکے قائم کئے جاتے ہیں ۔ پوسٹ آفس کے نزدیک وشہ بگ کراسنگ پر بھی معمول کے مطابق ہر روز  پولیس اور سی آر پی ایف کا خصوصی ناکہ کا قائم کیا جاتا ہے ۔ تاکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کو روکا جاسکے۔

    قابل ذکر ہے کہ ملی ٹینٹوں نے یہ کارروائی ایسے وقت میں انجام دی ہے ، جب سیکورٹی فورسیز نے گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں جنوبی کشمیر کے تین مقامات پر ملی ٹینٹوں کے خلاف بڑی کامیابی حاصل کی ہے ۔ اگرچہ اس حملے میں ناکے پر ڈیوٹی دے رہے اہلکاروں کو کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ہے ۔ تاہم ملی ٹینٹوں نے اس حملے سے اپنی موجودگی ظاہر کرنے کی کوشش کی ہے ۔

    قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔

    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: