ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

ہندوستانی فوج سے خوف میں دہشت گرد ، پی او کے لانچ پیڈ پر بچے اب صرف 43 دہشت گرد : رپورٹ

رپورٹ کے مطابق جنوری اور فروری میں دہشت گردوں کی تعداد میں بھاری گراوٹ آئی ہے ۔ خفیہ جانکاری کے مطابق لائن آف کنٹرول کے اس پار بنے لانچ پیڈ میں اب صرف 43 دہشت گرد ہی بچے ہوئے ہیں ۔

  • Share this:
ہندوستانی فوج سے خوف میں دہشت گرد ، پی او کے لانچ پیڈ پر بچے اب صرف 43 دہشت گرد : رپورٹ
دہشت گرد تنظیموں کے درمیان اب ہندوستانی فوج کا خوف دکھائی دینے لگا ہے اور آئی ایس آئی کے حوصلے بھی پست ہوگئے ہیں ۔ فائل فوٹو ۔

سری نگر : جموں و کشمیر میں ہندوستانی فوج کی جانب سے مسلسل دہشت گردوں کے خلاف کی جارہی کارروائی کا اثر اب لائن آف کنٹرول پر نظر آنے لگا ہے ۔ دہشت گرد تنظیموں کے درمیان اب ہندوستانی فوج کا خوف دکھائی دینے لگا ہے اور آئی ایس آئی کے حوصلے بھی پست ہوگئے ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ پاک مقبوضہ کشمیر کے لانچ پیڈ پر دہشت گرد آنے کیلئے تیار نہیں ہورہے ہیں ۔


انڈیا ٹوڈے کی ایک رپورٹ کے مطابق سیکورٹی فورسیز کی ایک رپورٹ میں اس بات کا انکشاف کیا گیا ہے کہ ایل او سی پر دہشت گرد کام نہیں کرنا چاہتے ہیں اور یہاں بنے لانچ پیڈ میں دہشت گردوں کی تعداد تیزی سے کم ہونے لگی ہے ۔ رپورٹ کے مطابق جنوری اور فروری میں دہشت گردوں کی تعداد میں بھاری گراوٹ آئی ہے ۔ خفیہ جانکاری کے مطابق لائن آف کنٹرول کے اس پار بنے لانچ پیڈ میں اب صرف 43 دہشت گرد ہی بچے ہوئے ہیں ۔ پاکستان میں واقع دہشت گرد تنظیمیں یہاں مزید دہشت گردوں کو بھیجنا چاہتی ہیں ، لیکن کوئی بھی دہشت گرد یہاں پر آنے کیلئے تیار نہیں ہے ۔


ہندوستانی خفیہ ایجنسیاں مسلسل ایل او سی پر نظر بنائے ہوئی ہیں اور آئے دن دہشت گردوں کے ساتھ انکاونٹر میں دہشت گردوں کو مار گرایا جارہا ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ موت کے خوف کے سبب دہشت گرد لانچ پیڈ پر آنے سے بھی کترانے لگے ہیں ۔ خفیہ رپورٹ کے مطابق ایل او سی کے اس پار جن 43 دہشت گردوں کی جانکاری ملی ہے ، ان میں سے 28 جموں سرحد کے سامنے بنے لانچ پر جبکہ 15 دہشت گرد کشمیری وادی کے سامنے لانچ پیڈ پر موجود ہیں ۔


میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان کی فوج اور آئی ایس آئی ، ایل او سی پر جس طرح سے ہندوستانی فوج نے اپنی گرفت مضبوط کی ہے ، اس کے بعد سے ڈری ہوئی ہے ۔ اس کے ساتھ ہی ہندوستانی حکومت کے سفارتی دباو کی وجہ سے بھی پاکستان کے ادارے کسی بڑے واقعہ کو انجام نہیں دے پا رہے ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ اب دہشت گرد لائن آف کنٹرول کے اس پار بنے لانچ پیڈ میں آنے سے کترانے لگے ہیں ۔

ابھی تک کی خفیہ جانکاری کے مطابق کشمیر وادی میں کیرن سیکٹر کے سامنے پاک مقبوضہ کشمیر کے لانچ پیڈا دودھ نیال میں صرف البدر کے 10 دہشت گرد موجود ہیں ۔ بتادیں کہ جموں و کشمیر میں سیکورٹی فورسیز نے سال 2020 میں 203 ملی ٹینٹوں کو مار گرایا تھا ۔ ان 203 ملی ٹینٹوں میں 166 مقامی ملی ٹینٹ بھی شامل تھے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 04, 2021 11:39 AM IST